خودکش بمبار اور کوٹ لکھپت کا قیدی

دنیا میں سب سے خطرناک شخص اسے سمجھا جاتا ہے۔ جو ٹھان لے کہ اُس نے مرنا ہے۔ چاہے اس کے اس ذاتی فعل کی وجہ جنت کی 70 حوریں حاصل کرنا ہو یا پھر بچھڑ جانے والی دنیاوی حور کا صدمہ۔عمومی طور پر خود کش حملوں میں ایسے نوجوان استعمال ہوتے ہیں۔ جنھیں یقین دلایا جاتا ہے کہ یہ دنیا تو فانی ہے اور اصل زندگی تو بعد از موت شروع ہوگی۔ جس کی خاطر کُن ذہن نوجوان لقمہ انتہا پسندی بنتے ہیں اور دھماکے کا نشانہ بننے والے سینکڑوں لوگ لقمہ اجل۔ذہنی طور پر مفلوج ہو جانے والے ان بمباروں سے بھی زیادہ خطرناک وہ شخص ہوسکتا ہے۔ جو اپنے محبوب کو بستر مرگ پر چھوڑ کر مقدمات کا سامنا کرنے اپنی دختر کے ہمراہ پاکستان پہنچ جائے۔ جو ادھیڑ عمر میں اپنے ”باؤ جی“ (کلثوم نواز) کا سہارا چھن جانے کے بعد دوران قید بضد ہے کہ وہ اس کو لاحق مہلک بیماریوں کا علاج نہیں کروائیگا۔ تین بار وزیراعظم رہنے والا یہ قیدی جو نا تو اب صادق ہے اور نا امین۔ اب ہے تو بس لاہور کی کوٹ لکھپت جیل کا قیدی نمبر 4 ہزار 4 سو 70۔

Read more

جس کی لاٹھی، اُس کا میڈیا

جہاں ایک طرف نئے پاکستان میں تبدیلی کے گُن گائے جائے رہے ہیں۔ وہیں دوسری طرف سینکڑوں صحافیوں کو نئے پاکستان میں چینلز اور اخبارات سے فارغ کردیا گیا ہے۔ جس کی وجہ سرکاری اشتہارات کی بندش یا کمی بتائی جاتی ہے۔

نئے پاکستان میں میڈیا کے ساتھ کیا جانے والا سلوک ایک ایسی تبدیلی کے اثرات دکھا رہا ہے۔ جس کے لئے کوشیشیں تو سالوں سے جاری تھیں۔ لیکن ان میں کامیابی نئے پاکستان میں ہوئی۔ جس میں وزیراعظم عمران خان کی حکومت پہلے 90 دنوں میں کوئی قابل قدر کامیابی حاصل کرنے میں تو ناکام رہی۔ لیکن اس عرصے میں حکومت نے میڈیا کو ایسی ”نتھ“ ڈالی کہ آزاد میڈیا پالتو کولہو کے بیل کی طرح ایک ہی سمت میں چکر پر چکر لگانا اپنا اوّلین فرض سمجھتا ہے۔

Read more

شادیوں کی لوٹ سیل اور 15 ہزار بچوں کی پیدائش

2019 کے پہلے دن جب فیس بک پر لاگ ان کیا تو سالگرہ کے الرٹس اتنے زیادہ تھے کہ سکرول کرکے نیچے جانا پڑا اور نیچے پہنچتے پہنچتے یہ بھول گیا کہ اوپر کس کس کو جنم دن کی مبارک باد دینی ہے۔

فیس بُک پر سالگرہ کی مبارک بادیں لینے والوں کی تعداد دیکھ کر پہلے تو یکم جنوری کو ڈان میں چھپنے والی خبر آنکھوں کے سامنے گھومی، جس کے مطابق 2019 کے پہلے دن ”15 ہزار سے زائد بچے پاکستان میں پیدا ہوں گے“۔

پھر خیال آیا کہ جن فیس بُک فرینڈز نے اپنا یومِ پیدائش یکم جنوری درج کر رکھا ہے۔ ان میں اکثریت یقینی طور پر اُن دوستوں کی ہوگی۔ جن کے والدین نے نئی گاڑیوں کی طرح اپنے بچوں کی رجسٹریشن نئے سال میں کروانے کی خاطر لیٹ کروائے ہوگی۔ ویسے بھی پرانے پاکستان میں پیدا ہونے والے نوبیاہتا دلہا دلہن جو نئے پاکستان میں سال کے پہلے دن بچے پیدا کرنے کے ریکارڈ بنا رہے ہیں۔ ان کی اپنے تاریخ پیدائش کے اندراج کے لئے نا تو جنم پرچی درکار ہوتی تھی اور نا ہی ”نادرا“ کا ایسا ڈیٹا بیس ایجاد ہوا تھا۔

Read more

صحافت کا سرکس اور صحافی

آج کے نئے پاکستان میں ہر صحافی میڈیا پر لگائی جانے والی پابندیوں کا ذکر کرتا ہے۔ نجی محافل اور سوشل میڈیا پر ان "نا دکھائی دینے والی سینسر شپ" کا سیاپا کرتے ہیں۔ اُن قوتوں کے بارے میں استعارے کا استعمال کرتے ہیں۔ جنھیں سابق وزیراعظم نواز شریف نے "خلائی مخلوق" کے لقب سے…

Read more

گرم حمام کا حجام اور مسجد کا امام

اپنے لنگوٹی یاروں سے ملنے اس بار جب آبائی محلے گیا تو ایک دوست کے گھر کی گھنٹی بجانے پر آواز آئی۔ وہ نہانے کے لئے گرم حمام گیا ہے۔

ایک عرصے بعد گرم حمام کا سُن کر خوش گوار حیرت ہوئی کہ آج بھی لوگ گھر پر نہانے کی بجائے گرم حمام کا رُخ کرتے ہیں۔ پھر خیال آیا کہ یقنی طور پر میرا یار اُن خوش نصیبوں میں سے نہیں ہوگا۔ جنھیں سردیوں میں گیس دستیاب ہو۔

محلے کے ہر کونے کھدرے سے واقف ہونے کی وجہ سے میں اپنے اس لنگوٹیے یار پر گرم حمام پر چھاپا مارنے جا پہنچا۔ جہاں x 3 3 کے حمام (غسل خانہ) میں میرا یار بذریعہ گولڈن ٹوٹی آنے والے گرم پانی کے نیچے راگ ایمن میں گنگنا رہا تھا اور اس گرم پانی کی بھاپ حجام کی دکان میں نتھیا گلی کے بادلوں کا منظر پیش کررہی تھی۔

Read more

کیا پاکستانی قوم تبدیلی کے لائق ہے

عمران خان کو وزیراعظم بنے 45 دن سے زیادہ ہوگئے۔ لیکن عوام جس تبدیلی کی آس لگائے بیٹھے تھے۔ وہ تبدیلی نہیں آئی۔ وہ تبدیلی جس کی امید میں 1 کروڑ 68 لاکھ سے زائد پاکستانیوں نے پاکستان تحریک انصاف کو ووٹ دیے۔ وہ تبدیلی جس کی خاطر پاکستانیوں نے پاکستان مسلم لیگ نواز اور…

Read more

حکومتی ٹوپی ڈرامے اور عوامی مسائل

عام انتخابات کے بعد پاکستان تحریک انصاف کو وفاق، پنجاب اور خیبر پختونخوا میں حکومتیں سنبھالے 40 دن سے زیادہ گزر چکے ہیں۔ لیکن ابھی تک عوام اچھی خبر سننے کے لئے ترس رہے ہیں۔ نئے پاکستان میں عوام کو آنکھ کھولتے ہی پہلے تں خواہ دار طبقے پر لگائے جانے والے ٹیکس کی شرح…

Read more

معیارِ تعلیم کی ضمانت کون دے گا؟

گزشتہ دنوں سندھ ہائیکورٹ نے پرائیویٹ اسکولوں کی فیسوں میں اضافے سے متعلق درخواست پر فیصلہ دیتے ہوئے پرائیویٹ اسکولوں کو زیادہ سے زیادہ سالانہ 5 فیصد اضافہ کرنے کا پابند کیا۔ چند والدین کی طرف سے دائر کردہ اس درخواست پر فیصلے کا فائدہ یقینی طور پر ہزاروں والدین کو ہوگا۔ جن کے بچے…

Read more

عمران خان۔ ناکرپٹ نا بے شرم

کہنے والے کہتے تھے۔ ”عمران خان کرپٹ نہیں“۔ ”عمران خان بے شرم نہیں۔ جو کہ اقتدار کی خاطر کسی سے بھی اتحاد کرلے“۔ کہنے والے اب بھی کہتے ہیں کہ عمران خان کرپٹ نہیں۔ مگر عمران خان بے شرم نہیں، یہ کہتے ہوئے انھیں خود شرم آجاتی ہے۔ جب وہ ہر گھنٹے بعد آنے والی…

Read more

رضیہ کے کالے کرتوت، اگلے انتخابات اور اتفاقات

ایک زمانہ تھا۔ جب ہر کوئی محکمہ موسمیات کی پیشین گوئیوں کو الٹا سمجھا کرتا تھا۔ مثلاً اگر پی ٹی وی پر رات 9 بجے آنے والے خبرنامے کے آخر میں موسم کا احوال بتانے والی سُگھڑ نیوز کاسٹر آنے والے دنوں میں بارش کی نوید سناتی۔ تو باسیاں لیتے سامعین یقین کرلیتے کہ اب…

Read more