جنسی ہراسانی: سوال ہے وقار کا

خواتین کو عزت دو صرف زبان سے نہیں دل سے۔ ورک پلیس ہراسمنٹ ایک مسئلہ جو خواتین کی ترقی و کامیابی کا سب سے بڑا دشمن بنتا دکھائی دیتا ہے۔

ہراسمنٹ جسے عرف عام میں ہراساں کیا جانا کہتے ہیں ایک عالمی مسئلہ بنتا جارہاہے یا یوں کہ لیں کہ یہ مسئلہ تو شاید ازل سے ہی تھا تاہم وقت اور زمانے کی تیز رفتار ترقی میں بڑھتے ہوئے خواتین کے کردار نے اس مسئلے کو بھی پر لگا دیے ہیں۔ پہلے زمانے میں اگر پانچ فیصد خواتین ملک و قوم کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرتی نظر آتی تھیں تو آج کے زمانے میں یہ تعداد کہیں زیادہ بڑھ چکی ہے اور کسی نہ کسی طرح ملک و قوم کی ترقی میں زیادہ یا کم اپنا کردار ادا کررہی ہیں۔

Read more

پاکستان میں بڑھتے ہوئے ذہنی امراض

ملک میں بڑھتے ہوئے ذہنی امراض اور ان کا حل۔ کیا نفسیاتی ماہرین کی مدد لینا ہی مسئلے کا حل ہے؟ کیا آپ کسی نفسیاتی بیماری کا شکار ہیں۔ کیا آپ کو کسی نفسیاتی معالج کی ضرورت ہے؟ کیا ڈپریشن یا کسی اور صدمے یا پریشانی سے باہر آنے کے لیے بھی کسی معالج کے…

Read more

نور جہاں: چاند نکلا ہے تجھے ڈھونڈنے پاگل کی طرح

دلوں کی ملکہ نورجہاں دنیا سے تو گئیں مگر دل سے نہ جاسکیں۔ سروں کی شہزادی ملکہ ترنم نور جہاں کو مداحوں سے بچھڑے 18 برس بیت گئے مگر ان کی سریلی اؤاز آج بھی کانوں میں رس گھولتی محسوس ہوتی ہے۔ نورجہا ں کی زندگی کا سفر گو بہت آسان نہیں تھا تہم انھوں…

Read more

بے جرم مسیحائی کی سزا ہم کو ملی ہے۔۔۔۔

ڈاکٹرز اور طب کے شعبے میں کام کرنیوالے افراد کے ساتھ ناروا سلوک کیوں۔

میڈیکل کی فیلڈ کو دنیا بھر میں عزت و احترام کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے اور شعبہ طب میں کام کرنے والے افراد کو بھی بے حد عزت و احترام دیا جاتا ہے لیکن گذشتہ کچھ برسوں میں یاسا لگتا ہے کہ یہ عزت و احترام گئے زمانے کی بات ہوگئی ہے اور جہاں لوگوں کے انداز و اطوار میں تبدیلی آئی ہے اسی طرح ان کے رویوں میں بھی خاصی تبدیلی دیکھنے میں آئی ہے اور لوگوں کی سوچ اور ان کے عمل میں انتشار دکھائی دینے لگا ہے۔ معاشرے کے افراد اپنے ہر در عمل کا اظہار شور شرابے اور چیخ و پکار سے کرنے لگے اس صورتحال کا فائدہ چند سیاستدانوں نے بھی خوب اٹھایا اور لوگوں کو اپنے مذموم مقاصد کے لیے استعمال کرنا شروع کردیا۔

Read more

ملک میں بڑھتے ہوئے ذہنی امراض اور ان کا علاج

کیا آپ کسی نفسیاتی بیماری کا شکار ہیں۔ کیا آپ کو کسی نفسیاتی معالج کی ضرورت ہے؟ کیا ڈپریشن یا کسی اور صدمے یا پریشانی سے باہر آنے کے لیے بھی کسی معالج کے پاس جانا فائدہ مند ہوسکتا ہے؟ یہ وہ سوالات ہیں جن کا جواب ہمارے معاشرے میں اکثر لوگ نہ ہی جانتے ہیں اور نہ ہی جاننا چاہتے ہیں۔ جسمانی بیماری کا علاج کروانا تو انسان کی ضرورت سمجھی جاتی ہے تاہم ذہنی مسائل اور ان کا حل آج بھی معاشرے میں قابل اعتنا نہیں گردانے جاتے۔ بیسویں صدی کے اس عشرے میں بھی جہاں دنیا کہاں سے کہاں پہنچ چکی ہے ہمارے ملک میں لوگوں کی بڑی تعداد ایسی ہے جو سائیکلوجسٹ یا سائیکیٹرسٹ کے پاس جانے کو وقت اور پیسے کا زیاں سمجھتی ہے۔

Read more

خواتین کو ہراساں کیے جانے کے واقعات: کیا فسانہ؟ کیا حقیقت؟

گذشتہ دنوں پڑوسی ملک کی معروف اداکارہ تنوشری دتہ کے حوالے سے ساتھی اداکار پر لگائے جانے والے جنسی ہراسانی کے الزام نے ایک بار پھر ماضی میں رونما ہونے والے اس نوعیت کے واقعات کی جانب توجہ مبذول کرادی ہے۔ تنوشری دتہ کا شمار بالی وڈ کی ان اداکاراؤں میں ہوتا ہے جنھوں نے…

Read more