ہماری کالام وادی میں پھیلی گندگی

قدرت نے بالخصوص پاکستان اور بالعموم پوری دنیا کو حُسن سے نوازا ہے۔ پاکستان سمیت اکثر ممالک میں بالکل خالص حُسن موجود ہے جس کی سوشل میڈیا اور مختلف کے ذرائع سے ہمیں خبر ہوئی۔ دنیا میں بعض مقامات حد سے زیادہ حسین ہیں مگر درحقیقت وہ Artificially بنے ہوئے ہیں۔ سوات کے علاقے کالام…

Read more

ادھورے لوگ جنہیں انسان نہیں سمجھا جاتا

قرآن مجید کا چونکہ اصل موضوع تکمیل انسانیت ہے سو اس وجہ سے قرآن مجید میں انسانیت کے ساتھ بہترین اخلاق و برتاؤ کرنے کا حکم جابجا موجود ہے۔ مذاہب کے علاوہ عالمی چارٹر آف ورلڈ میں بھی انسانیت کے ساتھ عمدہ طرزعمل رکھنے پر زور ہے اور اس متعلق بنیادی انسانی حقوق پر سینکڑوں قوانین بنائے گئے ہیں۔ انسانی معاشروں میں خواجہ سراء یعنی مرد و عورت کے بیچ تیسری ساخت کی ایک معصوم مخلوق بھی موجود ہے۔ جنہیں ان کی جسمانی ساخت کی وجہ سے مرد اور عورت دونوں طبقوں میں نہ صرف کمزور سمجھا جاتا ہے، بلکہ انہیں انسانیت سے بھی کم درجے میں گنا جاتا ہے، حالانکہ پوری جسمانی ساخت، ڈھانچے کی ترتیب اور حواس کے ساتھ وہ مکمل انسان ہیں۔ خواجہ سراوں کو مختلف تضحیک آمیز القاب اور توہین آمیز ناموں سے منسوب کیا جاتا ہے۔ پاکستان میں بالخصوص تیسری جنس کی اہمیت سے غالباً سب لوگ انکاری ہیں۔ یہاں جس طرح اُن پر ظلم و ستم ہورہا ہے شاید ہی کسی عام شہری پر ہو

Read more

بیٹیوں کے حقوق بھی دیجئے

  ہم اپنے فرسودہ رسوم و رواج اور خیالات کی وجہ سے اپنی بیٹیوں کی زندگیاں تباہ کرتے ہیں۔ حالانکہ ہماری ریاست کو اسلامی جمہوری ریاست کا نام دیا گیا ہے، مگر اسلام یہاں اب صرف اور صرف نمائش کےلئے رہ گیا ہے۔ بات اسلام کی ہو جائے تو سب ٹھیکیدار بنتے ہیں لیکن عمل…

Read more

قبیح رسومات!!

ہمارے بالائی سوات وادی بحرین و کالام اور گرد و نواح میں بھی شدت سے یہ ظالمانہ رسومات نافذ ہیں۔ ان بے معنی رسومات کا سب سے بڑا المیہ یہ ہے کہ ان کے زد میں ہمیشہ غریب اور کمزور طبقے آجاتے ہیں اور زندگی کے اکثر معاملات میں پس کر رہ جاتے ہیں۔ جیسے علاقے کے با اثر افراد اور طاقتور قوموں کی غلامی، ان کا بیگار، اور عورتوں پر ستم و مظالم ان رسومات کی خصوصیات ہیں۔ لیکن اس سب کے برعکس وادی بحرین میں ایک عجیب طرح کی رسم رائج ہے جو ہر لحاظ، ہر پیمانے اور ہر اصول کے رو سے انسانی حقوق کی سراسر منافی اور خلاف ورزی ہے۔ جیسے کہ شادی بیاہ کے لئے جہیز کے نام پر پورے خاندان کو گروی بنا دینا اور گھر کے ایک شخص کی شادی میں ان کی برسوں کی جمع پونجی سے انہیں محروم کردینا سرفہرست ہے

Read more

پرورش سے علامہ بنتے ہیں!

خدارا اپنی اولاد کی نہایت خوش اخلاقی اور مکمل دھیان سے تربیت کریں اگر کوئی چاہتا ہے کہ میرا بیٹا انسانیت کے حامل اور اعلیٰ اخلاق کا مالک ہو تو اولاد کی اس طرح پرورش کریں کہ معاشرے کے لیے ایک مثال بنے۔ اولاد کی اچھی تربیت سے ان کا مستقبل بہتر ہوگا وہ کم عمری میں یہ سیکھ پائیں گے کہ ہمیں کچھ بننا ہے معاشرے میں نام کمانا ہے۔

کہنے کا مقصد ہرگز یہ نہیں کہ اولاد کو سب فیسلیٹیز مہیا کریں، مقصود یہ ہے کہ اولاد کے ساتھ کم از کم دن میں آدھا گھنٹہ بیٹھیں کہ وہ کیا کرتا ہے، کہاں کھیل کود میں مصروف رہتا ہے؟ کن کے ساتھ اٹھنا بیٹھنا ہے؟ وغیرہ وغیرہ۔ صرف بچے پیدا کرنا مسلے کا حل نہیں ان کی پرورش بھی کچھ معنی رکھتی ہے۔ بچے کی پرورش میں 80% والدین کا ہاتھ ہوتا ہے خصوصاً ماں کا، اگر ماں تعلیم یافتہ (دینی و دنیاوی) ہو تو پورا معاشرہ تعلیم یافتہ ہوگا۔

Read more

بچوں کا مستقبل تباہ کرنے والے استاد

میں کوئی انہونی باتیں نہیں کر رہا بلکہ میرے ساتھ جو ہوا وہی قلم بند کر رہا ہوں ”جب میں آٹھویں کلاس میں تھا تب ہمارے کلاس میں ایک لڑکا ہوا کرتا تھا جو ہم سے عمر میں بڑا تھا۔ بیچارے نے داڑھی بھی رکھی ہوئی تھی۔ ایک بار ہمارے ایک نام نہاد استاد نے کسی بات پر طیش میں آکر اسے کہا اپنی اس داڑھی کو دیکھو اور ان بچوں کے درمیان بیٹھ کر سبق پڑھنا دیکھو، اگر کچھ شرم رکھتے ہو تو ایسا کرو سکول چھوڑ دو۔ پھر کیا تھا! دوسرے دن اس نے کسی سٹوڈنٹ کے زبانی جواب بھیج دیا کہ فلاں استاد کو کہو میرا سکول آج سے ختم۔

Read more

پرائمری کا استاد

گورنمنٹ پرائمری سکول کے اساتذہ جو نہایت ایماندار اور پرخلوص شخصیات کے مالک ہونے کے باوجود ایک طرف قوم کے بچے سنبھالتے ہیں تو دوسری جانب ان کو تنقیص کی بجائے تنقید کا نشانہ بھی بنایا جاتا ہے۔ استاد معاشرے میں ایک الگ مقام رکھتا ہے استاد کا صبر، بچوں کی شرارتیں برداشت کرنا اور رحم دلی کا مظاہرہ بہت کم لوگوں کے علم میں ہے۔

Read more