سرد رت کی بارش اور مضافات کا دُکھ

’ سردیوں کی نہایت مدہم رفتار سے رِم جھم بارش ۔ انسان اندر ہی اندر سکڑتا چلا جاتا ہے ۔ گرم لحاف میں لپٹے لپٹے پرانے زخموں کے ٹانکے کھلنے لگتے ہیں ۔ یادوں کے عطر دان سے خوشبو کے مرغولے اٹھتے ہیں اور چار سُو پھیلتے چلے جاتے ہیں ۔ باہر برستی بارش کھڑکی…

Read more

دوسبق آموزکہانیاں

سینہ بہ سینہ منتقل ہونے والی ایک پرانی کہانی کچھ یوں ہے کہ گیدڑوں کے ایک ناہنجار گروہ نے جاٹ کے کھیت کو نشانے پر رکھ لیا۔ وہ سرِ شام جنگل سے لانگ مارچ کرتے ہوئے کھیت میں وارد ہوتے اور خربوزوں کی ''ضیافت بالجبر‘‘ اڑانے کے بعد رات گئے واپس جنگل کی راہ لیتے۔…

Read more

ملائیشیا کے بارڈرپر رکا ہوا سفر

شوقِ سیاحت کا ایک ناخوشگوارقصہ شاید کبھی عرض کیا تھا۔ مسافروں کو تھائی لینڈ سے بذریعہ سڑک ملائیشیا کا طویل سفر درپیش تھا ۔ لگژری مسافر گاڑی میں درجن سے زائد سیاح سوار ہوئے ۔ ہم دو نیک روحوں کے سوا باقی سب مغربی ممالک کے اخلاق باختہ مردوزن ۔ حیا کے پتلے دونوں درویش…

Read more

شادی کی مزید اقسام

محرم الحرام سے قبل اپنے ہاں رائج شادی کی چند اقسام عرض کی گئیں۔ اسلامی سال کے ابتدائی دو ماہ گزرتے ہی شادیوں کا سلسلہ وہیں سے شروع ہو گیا ہے، جہاں سے ٹوٹا تھا۔ دنیا میں جیون ساتھی منتخب کرنے کا تیزی سے مقبولیت کی منازل طے کرتا ایک در فٹے منہ سا طریقہ…

Read more

مٹی کے گھروندے پر ٹرمپ کی سنگ باری

آپ اہل شہر کو دیہات کی کھلی اور صاف فضا بڑی پسند ہے۔ اس صاف ماحول میں چند دن سانس لینے کا موقع مل جائے تو لگ پتا جائے گا۔ ان کھلی فضائوں میں واپڈا اس جانفشانی سے اپنی گراں قدر خدمات انجام دیتا ہے کہ آپ کا لیپ ٹاپ چلے گا نہ موبائل چارج…

Read more

پہلی جنگ عظیم کے سو سال بعد

کرنل محمد خان نے ''بجنگ آمد‘‘ میں دوسری جنگ عظیم کے بعد اپنی وطن واپسی کا احوال بیان کرتے ہوئے ایک دل چھو لینے والی بات لکھی ہے۔ کرنل صاحب کہتے ہیں کہ وہ گائوں میں اپنے گھر پہنچے تو ان کی ماں جی نے انہیں جی بھر کر دیکھنے کے بعد وہ کچھ کہا،…

Read more

روشن خیالوں کی اقسام

انسان کو با وقار جنس بنانے والے ہر مہذب رویے اور معتبر نظام کی بھد اڑانا ہمارے ''فرائض منصبی‘‘ میں شامل ہے۔ جیسے وسیع القلبی، وسیع النظری، معقولیت، رواداری، برداشت، احترام انسانیت، جمہوریت، لبرل ازم اور سیکولرازم وغیرہ۔ روشن خیالی بھی ایسا ہی ایک مہذب مگر مظلوم رویہ ہے، جسے ہم لوگوں کی بے کراں…

Read more

حکیم حلویؔ کا محبت نامہ

گزشتہ کالم میں ہم نے علامہ حکیم حلویؔنامرادآبادی کولاحق لاتعدادعوارض میں سے فقط ان کے دانشورانہ چال چلن کاتذکرہ کیاتھا۔ان کی عینک سے فکرِاقبالؔ کاجائزہ بھی لیاگیا۔اس پرقبلہ حلویؔ نے ازراہِ کرم ہمیں محبت نامہ بھیجاہے۔ عمیق مشاہدے اور وسیع مطالعہ کی چغلی کھا تا‘فہم و دانش میں گندھاان کا فکر انگیز مکتوب ملاحظہ فرمائیے…

Read more

حکیم الیونین کونسل حلوی نے اقبال کو ایڈٹ کر دیا

ہشت پہلو شخصیت علامہ حکیم حلویؔ نامراد آبادی اپنا ثانی نہیں رکھتے۔ چھوٹے بڑے چار دیہات پر مشتمل ہماری پوری یونین کونسل میں ان جیسا ماہر طب، باکمال شاعر، زود فہم دانشور اور نامور محقق پیدا نہیں ہوا۔ آپ نے میدانِ علم و ادب میں اپنا جو مقام مقرر کر رکھا ہے، اسے اندیشۂ نقصِ…

Read more

تعلیمِ بالغاں کا کلاس روم

ماسٹر صاحب: (کلاس روم میں آکر غصے سے) یہ سب کیا ہے؟ ارے کم بختو یہ کیا حالت بنا رکھی ہے، کمرے کی تم نے، ابے کیوں ہر چیز توڑ کے رکھ دی؟ خانو خاکسار: پریشان نہ ہوں ماسٹر جی! یہ ہم نے ذراسا احتجاج کیا ہے (کلاس میں قہقہہ گونجتا ہے) ماسٹر صاحب: ارے…

Read more