شفیق استاذ اور قابل تقلید مدرس

حضرت الاستاذ مولانا جمیل احمد سکروڈوی صاحبؒ اللہ تعالی کو پیارے ہوگئے۔ انا للہ وانا الیہ راجعون۔ کئی مہینوں سے آپ مہلک وموذی بیماری سے دو چار تھے۔ آپ بیمار ہوئے اور پھر صحت یاب نہ ہوسکے۔ آپ مہینوں زیر علاج رہے۔ اخیر میں آپ کو دار السلطنت دہلی کے جی ٹی بی اسپتال میں اڈمٹ کرایا گیا۔ آپ کا وقت موعود آپہنچا تھا؛ چناں چہ 31 /مارچ 2019 کی شام کو اسپتال میں ہی اپنی آخری منزل اور دائمی آرام گاہ کو رحلت کرگئے۔

Read more

مولانا محمد اسرار الحق قاسمی: صحافت وخطابت سے پارلیمنٹ تک

مولانا محمد اسرار الحق صاحب قاسمیؒ ( 1942۔ 2018 ) ایک دینی واسلامی فکر کے حامل قلم کار اور کالم نگار تھے۔ آپؒ کے مضامین اسلامی افکار پر مشتمل ہوتے تھے۔ آپؒ کے مضامین کی زبان بہت سہل اور صاف ستھری ہوتی تھی۔ آپؒ کے مضامین قارئین کے لیے مشعل راہ ہیں۔ آپؒ نے اپنے…

Read more

بچھڑا کچھ اس ادا سے کہ رت ہی بدل گئی جناب حاجی محمد عبد الوہّاب صاحبؒ

موت ایک ایسی حقیقت کہ کسی فرد نے اس حقیقت کا انکار نہیں کیا ہے چاہے وہ کتنا ہی بڑا بہادر وپہلوان یا ملحد و دہریہ ہی کیوں نہ ہو۔ موت نے سب کو دبوچا ہے اور جو بھی جاندار دنیا میں سانس لے رہا ہے، اسے ایک نہ ایک دن دبوچ کر رہے گی، چاہے کوئی مشہور عابد وزاہد ہو یا معروف متقی وپرہیز گار، چاہے وہ قرآن کریم کی تلاوت میں منہمک ہو یا کسی فرض ونفل میں مشغول، جب موت کا وقت آئے گا؛ تو اسے اس دنیا سے جانا ہوگا۔ چاہے کوئی شخص اللہ کا بہت ہی مقبول ومحبوب بندہ ہو یا پھر بندگانِ خدا کی نظروں میں مقبول ومنظور؛ لیکن اُسے بھی ایک دن موت کا مضبوط آہنی پنجہ اپنی گرفت میں لے لے گا۔ چاہے کوئی دو پہاڑیوں کی وادی میں ہو یا ہمالیہ کی بلند چوٹی پر، شیشے کے مکان میں بند ہو یا پتھر کے قلعے میں محجوب، جب موت کا وقت آئے گا؛ تو موت کے فرشتے اس تک آسانی سے رسائی حاصل کرلیں گے اور بالآخر اسے موت کا مزہ چکھنا ہوگا۔ اللہ سبحانہ وتعالی کا یہ ارشاد اسی حقیقت کو بیان کرتا ہے : (سورہ نساء/ 78 ) ترجمہ: تم جہاں بھی ہوگے (ایک نہ ایک دن) موت تمھیں جا پکڑے گی؛ چاہے تم مضبوط قلعوں میں کیوں نہ رہ رہے ہو۔
موت سے کس کو رستگاری ہے
آج وہ کل ہماری باری ہے

Read more

حضرت مولانا محمد اسرار الحق صاحب قاسمیؒ (1942-2018): ملی وسماجی خدمات

معروف اسلامک اسکالر، بے لوث ملی ومذہبی رہنما، مشہور اردو کالم نگار اور مقبول خطیب حضرت مولانا محمد اسرار الحق قاسمیؒ 7 دسمبر 2018 کوتقربیا ساڑھے تین بجے رات اس دار فانی سے کوچ کرگئے۔ اس رات آپ "ٹپو" میں تھے، جہاں انھوں نے اپنے قائم کردہ "دار العلوم صفہ" کے اساتذہ وطلبہ سے دیر…

Read more

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے محّبت

افضل البشرؐ سے محبّت: قرآن کریم کی مختلف آیات کریمہ اور متعدد احادیث شریفہ سے یہ بات واضح طور پر معلوم ہوتی ہے کہ ایک مسلمان کو اللہ تعالی، سیدنا محمد رسول اللہؐ اور دین اسلام سے بے انتہا محبت کرنی چاہیے۔ در حقیت یہ سب ایک دوسرے سے جڑے ہوئے ہیں۔ ایسا نہیں ہے…

Read more

اُٹھ اُٹھ کے دیکھتی رہی گردِ سفر تجھےؐ

شجاعت وبہادری ایسی قابل ستائش اور لائق تعریف صفت ہے کہ ہر شخص چاہتا ہے کہ وہ اس صفت سے متصف ہو۔ یہ صفت ایک آدمی کے جسمانی طور پر قوی وطاقتور ہونے پر منحصر نہیں ہے ؛ بل کہ یہ صفت قلب وجگر کی مضبوطی پر موقوف ہے۔ نبی اکرم۔ صلی اللہ علیہ وسلم۔ کی شجاعت وبہادری اور دلیری کے متعدد ایسے واقعات ہیں جن سے پتہ چلتا ہے کہ آپؐ نہایت ہی بہادر، شجاع اوردلیر انسان تھے۔ مشرکین سر پر کھڑے ہیں اور آپؐ غار میں آرام وسکون سے ہیں۔

رات میں کوئی ڈراؤنی آواز آتی ہے ؛ تو آپؐ تنہا اس کا پیچھا کرنے چل دیتے ہیں۔ جب جنگ کے شعلے بھڑکتے ہیں ؛ تو آپؐ پہلی صف میں دشمنوں سے مقابلہ کے لیے حاضر ہیں۔ آپؐ ”أنا النّبی لا کذب، أنا ابن عبد المطلب“ کا نعرہ بلند کرکے، دشمنوں کو متنبّہ کرتے ہیں کہ آپؐ میدان جنگ سے فرار ہونے والے نہیں ہیں ؛ بل کہ ڈٹ کر دشمنوں سے لڑنے والے ہیں۔ آپؐ کی شجاعت وبہادری کے چند نمونے یہاں پیش کیے جاتے ہیں۔

Read more

اُمِّ معبد کا بیاں تو پُر کشش تصویر ہے

اس تحریر میں آفتاب رسالت صلی اللہ علیہ وسلم کے اخلاق و کردار، حسن و جمال، عادت و خصلت، اوصاف و کمالات اور شمائل و خصائل کا وہ نقشہ پیش کرنا مقصود ہے جوآپ کے اصحاب رضی اللہ عنہم کے الفاظ میں نقل ہوتے آیا ہے۔ ہم اس کا آغاز اُمّ معبد رضی اللہ عنہا کے الفاظ سے کرتے ہیں۔ مگر اس سے پہلے پس منظر پیش خدمت ہے۔

جب کفار و مشرکین پیغمبر انقلاب کے قتل کے درپے ہوگئے ؛ توانھوں نے بحکم خداوندی مکہ مکرمہ سے یثرب، جو بعد میں مدینہ منورہ بنا اور ہمیشہ کے لیے بن گیا، کی طرف اپنے رفیق غار و مزار ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ کی معیت میں روانہ ہوئے۔ قافلۂ اہل حق کٹھن راستے کو طے کرتے ہوئے مدینہ کی سمت بڑھتا جارہا تھا۔ چلتے چلتے راستہ میں ایک علاقہ سے گزر ہوا جسے ”قدید“ کا علاقہ کہا جاتا ہے۔ اس علاقہ میں ایک چھوٹی سی بستی تھی، جس میں ”قبیلہ خزاعہ“ کے لوگ بود و باش اختیار کیے ہوئے تھے، وہاں ایک خیمہ تھا۔

اُمّ معبد خزاعیہ کون ہیں؟ آپ کا نام عاتکہ بنت خالد بن منقذ الخزاعی اور کنیت اُمّ معبد ہے۔ یہ قبیلہ خزاعہ کی ایک باوقار اور با عفت، نمایاں اور توانا خاتون تھیں ؛ قبیلہ خزاعہ کی طرف منسوب کرکے آپ کوخزاعیہ کہاجاتا ہے۔ گاؤں دیہات کے خیمہ میں رہنے والی غیر مشہور، غیر خواندہ، مگر عقل مند و دانا خاتون تھیں۔ ان کی زبان بڑی ہی فصیح و بلیغ تھی۔ بکری چرانے والے ابو معبد کی رفیقۂ حیات تھیں۔ گوشۂ اسلام میں داخل ہونے سے پہلے بھی راستے سے گزرنے والے لوگوں کا استقبال کرتی تھیں اور جو کچھ میسر ہوتا کھلاتی پلاتی تھیں اور ایسا کرنے سے کیا مانع ہوتا؛ جب کہ وہ ایک عرب خاتون تھیں۔

Read more

ہماری صف میں منافق اگر نہیں ہوتے!

26/اکتوبر 2018 کو غاصب صہیونی ریاست اسرائیل کا وزیر اعظم، بنجامن نیتن یاہو نے سلطنت عمان کے سلطان قابوس بن سعید کی دعوت پر عمان کا دورہ کرکے، اپنی سیاسی طاقت مضبوط کرنے کے ساتھ ساتھ اپنی قوم کا ہیرو اور مسیحا بن گیا۔ نیتن یاہو کے اس دورے میں، اس کی اہلیہ، اسرائیل کی…

Read more

ہزاروں ظلم ہوں مظلوم پر تو چپ رہے دنیا

مسٹر ڈونالڈ ٹرمپ کے ریاستہائے متحدہ امریکہ کا اقتدار سنبھالنے کے بعد سے، فلسطین کے حوالے سے امریکہ کا جو ڈھکا چھپا موقف تھا وہ اب کھل کر سامنے آرہا ہے۔ ٹرمپ حکومت کی اب تک کی حرکت سے یہ واضح ہوتا نظر آرہا ہے کہ اب فلسطین نامی ریاست صرف تاریخ کے حصہ کے…

Read more

فلسطینیوں کی آہ وفریاد کوئی سننے والا نہیں!

اس سال "قَومی یومُ الارض" کے موقع سے 30 مارچ سے فلسطینیوں نے "تحریک حق واپسی" کے عنوان سے، غاصب صہیونی ریاست اسرائیل کے خلاف جو احتجاجی مظاہرے شروع کیے ہیں وہ اب تک جاری ہیں۔ اس مظاہرے میں، اسرائیلی فوج کی دہشت گردانہ کاروائی سے ہر جمعہ کچھ نہ کچھ فلسطینی جام شہادت نوش…

Read more