’ہم اچھے ملک میں نہیں رہتے یار، ہم کسی کو نہیں بچا سکتے! ‘

’ہم اچھے ملک میں نہیں رہتے یار، ہم کسی کو نہیں بچا سکتے! ‘ یہ وہ الفاظ تھے جومعصوم نشوا کے والد نے اپنی ننھی پری کے اس دنیا میں نہ رہنے کی تصدیق کرتے ہوئے پریس کانفرنس میں کہے لیکن دکھ، درد، اورغم میں ڈوبے یہ الفاظ صرف نشوا کے بے بس والد کے ہی نہیں بلکہ پاکستان کی ہر اس شہری کے ہیں جس نے کبھی کسی کی غفلت، کسی حادثے یا کسی سانحے میں اپنے پیارے کو گنوادیا۔

Read more

ہمیں یہ بات سمجھنا ہوگی!

ایسا لگتا ہے جیسے دہشتگردی اورانتہا پسندی کی لہر ’سیکیولرازم‘ کا درس دینے والے یورپ پہنچ گئی ہے۔ 15 مارچ کو نیوزی لیں ڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی دومساجد میں نمازِجمعہ کے اجتماع پر ہونے والے دہشتگرد حملے میں پچاس سے زائد افرادکے لقمہ اجل بن جانے کا غم ابھی تازہ ہی تھاکہ اگلے ہی روز لندن میں ایک مسجد کے باہرگاڑی پرہتھوڑی سے حملہ کرکے نماز پڑھنے کے لیے آنے والوں کو زخمی کردیا۔ کرائسٹ چرچ میں جاں بحق افراد کے خون کے دھبوں کیے نشان ابھی باقی تھے کہ یورپ ہی کے ایک اور ملک ہالینڈ میں ٹرام پر فائرنگ کرکے تین افراد کو قتل کر دیا گیا۔ ابھی سانحہ کرائسٹ چرچ میں مرنے والوں کے لواحقین کے آنسو خشک بھی نہ ہوئے تھے کہ یورپین ممالک سے ایک کے بعد ایک دہشتگردی کے واقعات کی خبریں مل رہی ہیں۔

Read more

افضل کوہستانی، قندیل بلوچ اور غیرت

ابھی بھارت کا جنگی جنون اور پاکستانی امن کی آشا کا شورکچھ کم ہی ہوا تھا کہ پاکستان میں پی ایس ایل کا بخارپورے عروج پر پہنچ گیا۔ اس سب کے ساتھ ہی سیاستدانوں کی بیان بازیاں اورشعبدے بازیاں بھی جاری ہیں۔ دوسری جانب دنیا بھراور پاکستان کے میڈیا اوراین جی اوز میں خواتین کاعالمی دن بھی پر جوش طریقے سے منایا گیا۔ اس موقع پرشہروں میں ریلیاں، سیمینارز، ورکشاپس اور پروگرامز بھی منعقد کیے گئے جن میں خواتین کے حقوق سے متعلق شعوراورآگاہی پر بات توکی گئی، سیاست دان اور این جی ایوزبھی خواتین کے حقوق کا عَلم بلند کرنے میں بازی لے جانے کی جدوجہد میں سب سے آگے نظرآئے لیکن عملی طور پرحقوق دلوانے سے متعلق کوئی لائحہ عمل اور عملی اقدامات منظر سے ہمیشہ غائب ہیں اور غائب ہی رہیں گے۔ مارچ کا مہینہ وہ مہینہ ہے جس میں ہم خواتین کے حقوق کا دن تو مناتے ہیں لیکن ان کو جائز حقوق دینے سے بھی ڈرتے ہیں کہ کہیں ہماری خواتین ’باغی‘ نہ ہوجائیں۔ ہمارے فیصلوں اور احکامات پر سوال نہ کرنے لگیں۔

Read more

پاکستان سوچے گا نہیں، جواب دے گا!

چند روز قبل مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں بھارتی سیکیورٹی فورسزپرہونے والے حملے کے بعد سے بھارت عالمی اور قومی فورم پر پاکستان کےخلاف زہر اگلنے میں مصروف ہے۔ چاہے سفارتی شخصیات ہوں یا بھارت کی ادبی اور شوبز سے تعلق رکھنے والی سیلیبریٹیز، ہر جگہ سے جنگ کی آوازیں اور نفرت کی آگ…

Read more

سیلف ڈیفنس میں قتل کرنے کا معاملہ

خبروں اورسوشل میڈیا پر ان دنوں سیلف ڈیفنس کا بڑا چرچا ہے۔ وجہ وہ ویڈیو ہے۔ جس میں کراچی بھینس کالونی کے یوسی چیئرمین کے ہاتھوں ارشاد رانجھانی کو قتل کرتے دیکھاجاسکتا ہے۔ ارشاد رانجھانی۔ قوم پرست جماعت کا رکن۔ جسے ڈاکو قرار دے کر قتل کیا گیا۔ اس کا کرمنل ریکارڈ بھی موجود تھا۔ یو سی چیئر مین نے پہلے سیلف ڈیفنس کے نام پرفائرنگ کرکے اسے زخمی کیا۔ پھر ہجوم میں موجود افراد میں سے کسی کو بھی اس مبینہ ڈاکو کو اسپتال لے جانے کی بھی اجازت نہ دی۔ یہاں تک کہ وہاں موجود پولیس اہلکاروں نے بھی ارشاد رانجھانی کو اسپتال منتقل نہیں کیا۔ اور وہ تڑپ تڑپ کر دم توڑگیا

Read more
––>