عورت مارچ پر قدغنیں

یہ خبر سنی کہ ایک پٹیشن کو سنتے ہوئے، لاہور ہائی کورٹ نے 8 مارچ کو روایتی طور پر منعقد کیے جانے والے عورت مارچ کوروک دیا گیا ہے، تو مجھے بالکل بھی تعجب نہیں ہوا۔ پچھلی عورت مارچ کے بارے میں پاکستان میں رائے عامہ نے ہمارے درمیان نظریاتی خلیج کو واضح کردیا تھا۔…

Read more

جی ہاں! میں خواب دیکھتا تھا

میں نے آج تک اپنے بارے میں ایک چیز چھپائی ہے۔ میں نے پانچویں جماعت کے بعد کسی قسم کی رسمی تعلیم حاصل نہیں کی۔ آخری بار جب میں کسی جماعت میں رسمی تعلیم حاصل کرنے کی غرض سے بیٹھا تھا تو وہ راولپنڈی میں ایک اسکول تھا۔ پھر حالات، واقعات نے ایسی کروٹ بدلی…

Read more

ہم ایک اداس نسل ہیں

میرے ہم عمرافراد اور یہ نسل شاید انسانی تاریخ کی سب سے زیادہ اداس نسل ہے، جہاں اکثریت ایسے گھمبیر سماجی، سیاسی، معاشی اور معاشرتی مسائل کی جکڑ میں ہے کہ نہ تو ان مسائل کا کوئی علاج ہے اور نہ بچاؤ، ہماری نسل اس وقت انسانی تاریخ میں سب سے زیادہ کام کررہی ہے،…

Read more

چوتھا صنعتی انقلاب اور ہمارا تعلیمی معیار

چلئے آج حال کے جھروکوں سے ذرا مسقبل میں جھانکتے ہیں۔ ہم 2030 میں کھڑے ہیں، آپ اپنے ارد گرد کیا دیکھتے ہیں؟ کیا موجودہ صورتحال کی نسبت نقشہ بدل چکا ہے؟ ضرور بدل چکا ہوگا، کیونکہ ٹیکنالوجی جس رفتارسے تبدیل ہورہی ہے، جس رفتار سے معلومات تک رسائی ممکن ہوتی جارہی ہے، یقیناً اس دور کا معاشرہ آج کے دور کے معاشرے سے بالکل ہی مختلف ہوگا۔اگر ہم تاریخ پر نظر دوڑائیں تو ہم دیکھ سکتے ہیں کہ جب تک چھاپے خانے نہیں آئے تھے اور میکانکی پرنٹنگ پریس عام نہیں ہوئے تھے، چھاپا نویسوں کی بھرمار تھی جن کا کام تھا کتب یا پمفلٹس کی چھپائی۔ اس کی وجہ سے مختلف علاقہ جات میں ہزاروں لوگ اپنا روزگار حاصل کرتے تھے، لیکن پرنٹنگ پریس کے آنے کی دیر تھی اور ہزاروں کاتب اور چھاپا نویس اپنے روزگار سے ہاتھ دھو بیٹھے۔ اس کی وجہ یہ نہیں تھی کہ چھاپا خانوں کے مالکین اندرونی طور پر ان کو فارغ کرنا چاہتے تھے بلکہ ان کا مقصد صرف منافع کا حصول تھا۔

Read more

تعلیمی ادارے اور جنسی ہراسانی

تعلیمی ادارے اور جنسی ہراسانی۔ یہ دو الفاظ ایک ساتھ پڑھ کر دل میں ایک چبھن سی محسوس ہوتی ہے۔ دنیا بھر میں جامعات مقدس مقامات تصور کی جاتی ہیں اور کیوں کر نہ ہوں؟ صرف جامعات ہی ایک ایسا محفوظ، کھلا ماحول مہیا کرسکتی ہیں جہاں بات کرنے کی اور علمی مباحث کی گنجائش…

Read more

اعلیٰ تعلیمی اداروں میں فکری آزادی کے خلاف منظم مہم پر اساتذہ کی تشویش

مختلف شعبہ ہائے تعلیم کے ممبران اور اساتذہ کی حیثیت سے ہم پاکستان بھر کی یونیورسٹیوں میں پچھلے کچھ دنوں میں ہونے والے واقعات کے حوالے سے شدید فکر مند ہیں۔ ان واقعات سے پاکستان میں فکری اور تدریسی آزادی کو ٹھیس پہنچائی جارہی ہے۔ بارہ سے تیرہ اپریل کے درمیان ہونے والے ایک ہی…

Read more