ہم نے ظہیر کاشمیری کو کیوں بھلا دیا؟

موسم بدلا، رت گدرائی، اہلِ جنوں بے باک ہوئے فصلِ بہار کے آتے آتے کتنے گریباں چاک ہوئے یہ غزل ظہیر کاشمیری نے لکھی، استاد امانت علی خاں نے گائی اور اہلِ جنوں کی آواز بن گئی۔ وہ اسے گلیوں گلیوں گاتے پھرتے ہیں اور اپنے دل کو ٹھنڈک پہنچاتے رہتے ہیں۔ شاعری کی مدد…

Read more

ہم نفسوں کی بزم میں

شمیم حنفی سے کون واقف نہیں ہے۔ ہمسایہ ملک کی تہذیبی زندگی کا تصور جن شخصیات کے ذکر کے بغیر مکمل نہیں ہوتا، شمیم حنفی ان میں سے ایک ہیں۔ نقاد، خاکہ نگار، ڈراما نویس، کالم نگار، مترجم، مرتب، ان کی شخصیت کے خاص گوشے ہیں۔ بیسویں صدی کی ادبی حیثیت کی تفہیم اور تاریخ،…

Read more

اک ٹکڑا دھوپ کا اور دوسری کہانیاں

”اک ٹکڑا دھوپ کا اور دوسری کہانیاں“ اسد محمد خاں صاحب کی کہانیوں کا نیا مجموعہ ہے جسے ریڈنگز لاہور کے اشاعتی ادارے ”القا“ پبلی کیشنز نے چھاپا ہے۔ اس سے پہلے اسد صاحب کی پانچ کہانیوں کی کتابوں پر مشتمل مجموعہ ”جو کہانیاں لکھیں“ کے نام سے اکادمی بازیافت، کراچی کی طرف سے 2006ءمیں…

Read more

گمشدہ چیزوں کے درمیان

’’گمشدہ چیزوں کے درمیان‘‘ محمد سلیم الرحمٰن کے عالمی ادب سے انتخاب کردہ افسانوں کا مجموعہ ہے جو تراجم کی صورت میں ’’آج کی کتابیں‘‘ کے زیرِ اہتمام کراچی سے چھپا ہے۔ ترجمہ کسی بھی زبان و ادب کی ثروت مندی میں فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے۔ اس کا اندازہ آپ اُس زبان میں…

Read more

کہاں سے لاؤں انھیں

اردو ادب میں، عام طور پر یادنگاری کے دو طریقے رائج ہیں۔ ایک انداز سوانح عمری لکھنے کا ہے جب کہ دوسری طرز خاکہ نگاری کی ہے۔ دونوں عوامل میں تحدید اور اختیار کے اپنے اپنے ضابطے ہیں۔ ان آسائشات اور مشکلات کے اعتبار سے سوانح نویسی اور خاکہ نگاری کا مطالعہ کیا جائے تو…

Read more

شیکسپیئر کے بعد ہنرک ابسن

ادبیاتِ عالم میں کسی بھی تخلیق کار کی فکری استقامت اور فنی چابک دستی کو جاننے کے لیے جہاں اور بہت سے معیارات ہیں وہاں ایک پیمانہ وقت بھی ہے۔ ایک عہد میں سارے لکھنے والے اپنی اپنی ہنرمندیاں دکھا رہے ہوتے ہیں مگر زمانہ جب اپنی سان پر چڑھتا ہے تو موسمی لکھاری خود…

Read more

سلیم شاہد کی شعری کلیات: زرِ رہگزر

’’زرِ رہگزر‘‘ سلیم شاہد کے شعری کلیات کا نام ہے۔ زر سے شروع، زر پر ختم اور درمیان میں رہ۔ سیاق اور سباق کی یہ عجوبگی سلیم شاہد کی ساری شاعری میں موجود ہے۔ شاعر نے زندگی کرنے کے لیے شاعری کو چنا اور پھر جیون بھر اپنے شوق کے ساتھ رہا۔ اس کلام نے…

Read more

شیکسپیئر کا حریف …. بین جانسن

شیکسپیئر کے حالاتِ زندگی بہت کم معلوم ہیں۔ تاہم اس بات پر عام طور پر اتفاق پایا جاتا ہے کہ وہ زیادہ پڑھا لکھا آدمی نہ تھا۔ اس کے دور میں لاطینی کو علمی زبان کی حیثیت حاصل تھی۔ لیکن اسے لاطینی کی یونہی سی شدبد ہو گی۔ البتہ اس کے ڈراموں کے منابع کو…

Read more

ایک قدیم ہسپانوی ناول – چلتا پرزہ

اُردو ترجمے کی روایت میں محمد سلیم الرحمن کا نام کسی تعارف کا محتاج نہیں۔ اُن کا شمار اُردو کے ان معدودے چند مترجمین میں ہوتا ہے جن کے کیے ہوئے تراجم عزت کی نظر سے دیکھے جاتے ہیں۔ فورٹ ولیم کالج، دہلی کالج، انجمن ترقی اُردو سے لے کر آج تک صاحبان فن مترجمین کی فہرست حیرت انگیز حد تک مختصر ہے، مولوی عنایت اللہ دہلوی، ظ انصاری، مولانا ظفرعلی خاں، ابن انشا، محمد حسن عسکری، شاہد حمید، محمد سلیم الرحمن، محمد عمر میمن۔ ایسا نہیں کہ اردو میں یہی مترجم موجود ہیں۔ مترجمین کی فہرست لا متناہی ہے مگر جن ترجموں پر صاد کیا جاسکتا ہے، وہ ترجمے انہی مترجمین سے مخصوص ہیں۔

Read more

ایک دن کی زندگی

”ایک دن کی زندگی“ آزاد مہدی کا چوتھا ناول ہے۔  اس سے پہلے وہ ”میرے لوگ“،  ”دلال“ اور ”اس مسافر خانے میں“ کے ساتھ اردو ناول کی دنیا میں اپنی آمد کا اعلان کر چکا ہے۔  آزاد مہدی ناول لکھنے والوں کے قبیلے کا وہ خوش نصیب فرد ہے جس کے دو یا دو سے…

Read more
––>