قومی غیرت، جنگ اور غیر جانبدار دیوتا

یونان کی فوجیں نو سال تک ٹرائے کے دروازے پر ڈیرا ڈالے بیٹھی تھی۔ کبھی کبھار ٹرائے کے سپہ سالارہیکٹر ٹروجن فوج کے ایک دستے کے ساتھ دروازے سے نمودار ہوتے، یونانیوں کی صفوں میں ہلچل مچاتے ہوئے واپس ٹرائے میں داخل گھس جاتے اور دروازے بند کر دیے جاتے۔ دس سال تک لڑی جانے…

Read more

فوج پی ٹی ایم کو صفحہ ہستی سے مٹا سکتی ہے، مگر۔ ۔ ۔

پی ٹی ایم کی لفظی گولہ باری اور فوج کے خلاف زبان درازی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے۔ شروع دن سے پی ٹی ایم کے پلیٹ فارم سے فوج کے خلاف نا زیبا نعرے، ناقابل اشاعت گالیاں اور بے بنیاد الزامات کا سلسلہ جاری ہے۔ منظور پشتین بذات خود انتہائی نرم لہجے میں بات کرتے ہیں لیکن علی وزیر اور گلالئی اسماعیل سمیت دیگر رہنماؤں کی ایسی متعدد تقاریر سوشل میڈیا پر موجود ہیں جو نہ صرف انتہائی اشتعال انگیز ہیں بلکہ حقائق کے منافی بھی ہیں۔

Read more

مسعود اظہر کے ہومیو پیتھک علاج پر پاکستان اور بھارت میں جشن

اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل میں تعزیراتی کمیٹی برائے داعش اور القاعدہ نے کالعدم جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کا نام عالمی پابندیوں کے شکار افراد کی فہرست میں ڈال دیا ہے جس کے بعد مسعود اظہر پر سفری پابندیوں کے ساتھ ساتھ دنیا بھر میں موجود ان کی جائیداد بھی منجمد کردی جائے…

Read more

اردو کی نئی کتاب اور انشا جی کے حسابی قاعدے

اردو کی پہلی کتاب کس نے لکھی معلوم نہیں لیکن آخری کتاب ابن انشاء نے لکھی تھی جو اپنے تئیں یہ یقین کر بیٹھے تھے کہ آنے والی نسل انتہائی نا اہل اور اردو سے نابلد ہوگی، ورنہ وہ اپنی کتاب کو آخری کتاب کہنے کے بجائے دوسری، تیسری یا پچاسویں کتاب کہہ سکتے تھے۔…

Read more

ڈاکٹر عافیہ صدیقی دہشت گرد یا قوم کی بیٹی؟

1990 سے پہلے عافیہ صدیقی کراچی کی تمام دوسری لڑکیوں کی طرح ایک عام سی لڑکی تھی جو اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کی خواہش رکھتی تھی۔ نوے کی دہائی کے آغاز میں وہ امریکا منتقل ہوئی جہاں اپنی قابلیت کے بل بوتے پر وہ میساچوسیٹس انسٹیٹیوٹ آف ٹیکنالوجی میں داخلہ لینے میں کامیاب ہوگئیں جو دنیا بھر کے طالب علموں کا خواب ہوتا ہے۔ ان کی زندگی میں نیا موڑ تب آیا جب 1995 میں انہوں نے پاکستانی نژاد امریکی ڈاکٹر امجد خان سے شادی کی۔ شادی کے بعد وہ سماجی زندگی میں متحرک ہوئیں اور دنیا بھر کے مظلوم مسلمانوں کے لیے چلنے والی احتجاجی اور فنڈ ریزنگ مہم کا حصہ بنتی رہیں۔

Read more

دہشت گردی کے خلاف جنگ میں دہشت گرد کون تھا؟

نائن الیون کے صرف 26 دن بعد امریکی صدر جارج بش نے اعلان کیا کہ امریکی فورسز نے افغانستان میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کا آغاز کر دیا ہے جس کو سرکاری طور پر ”آپریشن اینڈیورنگ فریڈم“ کا نام دیا گیا۔ در اصل امریکی جنگ تو 22 ستمبر 2001 کو ہی شروع ہوگئی تھی جب امریکا نے اپنے کمانڈوز شمالی اتحاد کے کمانڈروں، عبد الرشید دوستم اور عطا محمد نور کی مدد کے لیے افغان سرزمین پر اتار دیے تھے۔ اس کے دو دن بعد ہی طالبان نے امریکا کے خلاف جہاد کا اعلان کردیا۔

7 اکتوبر کو امریکی اور برطانوی طیاروں نے باقاعدہ طور پر افغانستان کے شہروں اور طالبان کے ٹھکانوں پر بمباری شروع کردی۔ 19 اکتوبر کو قندھار میں ملا محمد عمر کی رہائش گاہ پر امریکی کمانڈوز نے دھاوا بول دیا جو امریکا کی جانب سے پہلی براہ راست زمینی کارروائی تھی۔ ایک ماہ چھ دن کی لڑائی کے بعد طالبان 13 نومبر کو کابل سے نکل گئے اور امریکی پشت پناہی سے شمالی اتحاد کی فورسز نے کابل کا کنٹرول سنبھال لیا۔

Read more

گل بدین حکمت یار: ”کابل کے قصاب“ سے صدارتی امیدوار تک

افغانستان ایک بار پھر تاریخ کے دوراہے پر کھڑا ہے۔ ایک طرف ملک میں صدارتی انتخابات کی تیاریاں جاری ہیں تو دوسری طرف افغان حکومت کا دست و بازو، امریکا اُن طالبان سے مذاکرات میں مصروف ہے جن کو آج سے اٹھارہ برس قبل خود کابل سے نکال باہر کیا تھا۔ کیا افغانستان میں صدارتی…

Read more

زلمے خلیل زاد کی آنیاں جانیں اور انجماد کے تیس برس

افغان حکومت کے سربراہ نے امریکا اور پاکستان پر زور دیا ہے کہ وہ باغی جنگجوؤں کو مذاکرات کی میز پر لانے کے لیے افغان حکومت کی مدد کریں تاکہ اسلام پسند اور جدت پسندوں کی ایک مشترکہ حکومت تشکیل دی جاسکے۔ کابل میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے 63 سالہ سربراہِ حکومت کا…

Read more