کرنل کی بیوی دیوی اور ہماری بیوی بلڈی سویلین

ابھی کچھ ہی دنوں کی بات ہے۔ نومبر 2019 کو خیابان شہباز، ڈی ایچ اے کی سڑکوں پر ایک خاتون سفید چمچماتی ٹویوٹا کرولا میں محو سفر تھی۔ اپنی موج مستی میں دھت یہ خاتون کار چلا رہی تھی کہ ٹریفک سگنلز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے آگے نکل گئی۔ ٹریفک اہلکار نے روکا تو خاتون ”الٹا چور کوتوال کو ڈانٹے“ کی مصداق ٹھہری۔ خاتون نے ٹریفک اہلکار کو گالیاں دیں ؛ اسے برا بھلا کہا۔ خاتون کو ٹریفک اہلکار نے کہا کہ انہوں نے سگنلز توڑے ہیں تو خاتون نے کہا: ”میں تمہارا چہرہ پھوڑ دوں گی۔“

Read more

ملکی تاریخ کا بڑا سکینڈل؛ کرونا ریلیف فنڈ ؛ کل کتنی رقم جمع ہوئی، کہاں گئی؟

سپریم کورٹ کی کارروائی

سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیف جسٹس، جسٹس گلزار احمد خان نے کرونا سے نمٹنے کے متعلق پہلا از خود نوٹس لیا تھا۔ اب تک اس کیس میں بینچز بھی تبدیل ہوچکے ہیں جبکہ پچھلے دن اس کیس کے متعلق چیف جسٹس نے سخت ریمارکس بھی دیے۔

Read more

ترکی کے گروپ یورم کی ہیلین بولک

ترکی کے شہر استنبول میں ایک مخصوص جگہ تھی جس کا نام idil Culture Center رکھا گیا تھا۔ یہاں کچھ لوگ جمع ہوتے تھے اور اپنا لائحہ عمل تیار کرتے تھے۔ یہ لوگ فکری اعتبار سے مارکس اور اُس کے فلسفے کے حامی تھی۔ ان کی سوچ انقلاب کے ہیجان سے بھڑک رہی ہوتی تھی۔…

Read more

محمد ’شاہ‘ رنگیلا اور حریم ’شاہ‘

تاریخ کے کچھ اوراق اس لحاظ سے بھی برہنہ ہیں کہ اس نے اپنے اندر محمد شاہ رنگیلا جیسی شخصیت کو بھی جگہ دی۔ محمد شاہ رنگیلا کو تاریخ شاید سائیڈ لائن پر کر دیتی لیکن یہ اتنا دلچسپ کردار تھا کہ جیسے آج کل کوئی فلم آئٹم سانگ کے بل بوتے پر کامیاب ہوتی…

Read more

جدید شوشۂ عام اور شہرتِ دوام کا دربار

مولانا محمد حسین آزاد نے مشاہیر، بادشاہوں اور شعراء وغیرہ کا خوبصورت دربار ایک خواب کے تناظر میں، انشائیہ ”شہرت عام اور بقائے دوام کا دربار“ کے عنوان سے تحریر کیا ہے۔ مولانا موصوف کو کروٹ کروٹ جنت نصیب ہو کہ ہر شاہ و شاہ کے مصاحبوں کو اُن کی حیثیت کے مطابق نشست عطا…

Read more

عرب شیوخ کو گالی نہ دیں!

اتحاد بین المسلمین یا اتحاد امہ کی جو ٹوپیاں آج کل ہر مسلمان کو بالعموم اور پاکستانیوں کو بالخصوص پہنائی جا رہی ہیں، شاید کسی خاص مفاد کے پیشِ نظر یہ رویہ اپنایا گیا تھا اور خوب مرچ مصالحہ لگا کر اب بھی عام ہے۔ مفرضوں سے ہٹ کر حقیقی تاریخ کو جب ہم دیکھتے…

Read more

شور اور شعور کے بیچ لٹکتا کشمیر

آزادی کے تقریباً دو ماہ بعد ہی ہندوستان اور پاکستان کشمیر کے مسئلے پر کشتم کشتا ہوئے۔ نتیجہ کیا نکلتا! بس ایک نہ ختم ہونے والا معمہ پنپا۔ کشمیر کے حکمران راجہ نے ہندوستانی فوج سے کمک طلب کی جبکہ پاکستان نے پختون قبائل کو استعمال کیا۔ اکتوبر 1947 کو قبائل نے کشمیر پردھاوا بول…

Read more

آر ایس ایس، بی جے پی، کشمیر اور آرٹیکل 370 !

آر ایس ایس ہندوستان کی ایک ہندو پرست تنظیم ہے۔ جس کا مائنڈ سیٹ تشدد سے بنا ہے اور ان کا منشور کسی بھی طریقے سے ہندوؤں کے حق میں کام نکلوانا ہے۔ اس تنظیم کے تحت 1951 میں ایک سیاسی پارٹی، بھارتیہ جنتا پارٹی وجود میں آئی۔ مزکورہ ہندو پرست تنظیم نے سب سے…

Read more