کورونا کے بعد کیا ہونے والا ہے؟

کورونا وائرس کی چوٹ نے دنیا کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ معاشی مشکلات کا شکار تیسری دنیا کے پسماندہ ممالک کے لیے یہ ایک تباہ کن افتاد ہے۔ غریب ممالک کے ساتھ ساتھ اس بحران نے ترقی یافتہ، خوشحال اور معاشی اعتبار سے مضبوط ترین ممالک کی معیشت کو بھی ایسے بحران سے دوچار کر دیا ہے، جس سے نکلنے میں ان کو کئی برس لگ سکتے ہیں۔ کورونا کے جھٹکے سے دنیا کی معیشت کا جو حال اس وقت ہو گیا ہے، اور آنے والے دنوں میں جو شکل یہ اختیار کرنے والی ہے، وہ بہت ڈراؤنی ہے۔

دانشور اور ماہرین معاشیات تو یہ جانتے ہیں کہ یہ کیا ہو رہا ہے اور اس کا انجام کیا ہو گا؟ اگلے چند مہینوں اور سالوں میں یہ بحران کس شکل میں سامنے آئے گا؟ مگر عام آدمی بھی اجتماعی دانش کی روشنی میں اس کا ادراک رکھتا ہے۔ عام آدمی کا فکر اور اندیشہ خواص سے بہت زیادہ ہے، کیونکہ تاریخی اعتبار سے اس طرح کے حالات کا پہلا شکار عموماً عام آدمی ہی ہوتا رہا ہے۔ اس طرح کے بحرانوں میں اس کا روزگار ختم ہو جاتا ہے۔ اس کے بچوں کی تعلیم و صحت کی سہولیات کم ہو جاتی ہیں۔ اسے شدید جسمانی اور ذہنی صحت کے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ ایک خوفناک صورت حال ہے، جس سے عام آدمی ڈرتا رہتا ہے۔

Read more

کورونا کے دورمیں تادم مرگ بھوک ہڑتال

کورونا وائرس کے شورشرابے میں کئی بڑی خبریں دب کررہ گئی ہیں۔ خوف اوراندیشے کے ماحول میں لوگ ان خبروں پربھی توجہ نہیں دے رہے ہیں، جن کوعام حالات میں نظرانداز کرنا شاید ممکن نہ ہوتا۔

کورونا بحران کے دوران جن بڑی خبروں کو نظراندازکیا گیا، ان میں ایک خبرکشمیری رہنمایاسین ملک کی دلی کی تہاڑ جیل میں بھوک ہڑتال کی خبرہے۔ یاسین ملک کی طرف سے تاحیات بھوک ہڑتال کے اس اعلان کا پس منظرکافی طویل اورپچیدہ ہے۔ لیکن اس کا فوری سبب جموں کی انسداد دہشت گردی کی ایک خصوصی عدالت میں ان کے خلاف دہشت گردی کے تحت قائم مقدمات پرہونے والی سماعت ہے۔ اس سماعت کے از سرنوآغازاوراس کے طریقہ کار پرانہوں نے شدید تحفظات اوراعتراضات کا اظہار کرتے ہوئے تادم مرگ بھوک ہڑتال کا اعلان کیا ہے۔

Read more

کورونا سے ہم کیا سبق سیکھ سکتے ہیں؟

انسان اپنی طویل تاریخ میں کئی طرح کے مصائب و آلام سے دوچار ہوا۔ تاریخ میں بار بار ایسے مسائل و حوادث سامنے آئے، جن کے سامنے انسان بے بس ہوتا رہا۔ اس دنیا میں سمندری طوفانوں، زلزلوں، آتش فشانوں، خشک سالی اور دوسرے شدید موسمی تغیرات کی وجہ سے لاکھوں انسان لقمہ اجل بنے‘…

Read more

عورت مارچ اورانسانی حقوق

عورتوں کے عالمی دن کے موقع پربہت ہنگامہ اورشورو وغا ہوا۔ بہت جوش و خروش دیکھنے میں آیا۔ مگربد قسمتی سے غیراہم اورمتنازع امور نے زیادہ توجہ حاصل کی، اور وہ سنجیدہ مسائل زیربحث ہی نہ آسکے، جو پاکستان میں خواتین کی اکثریت کو درپیش ہیں۔ پاکستان میں خواتین کے سیاسی، معاشی اورسماجی حقوق کے…

Read more

ٹرمپ کے دورہ بھارت سے کیا ہو گا؟

ٹرمپ کے دورے کے دوران بھارت کے جوش و خروش کو دیکھ کر بھارت اور امریکہ کے تعلقات کی تاریخ یاد آتی ہے۔ یہ تعلقات ہمیشہ کوئی بہت خوشگوار نہیں رہے۔ یہ تعلقات بڑے نشیب و فراز سے گزرے۔ نشیب زیادہ رہا، اور فراز کم۔ مگر بدلتے وقت کے ساتھ دونوں ملک اپنی پالیسیوں میں…

Read more

سوشل میڈیا اور یاس و امید کے سائے

ہماری صدی کوسوشل میڈیا کی صدی کہا جا سکتا ہے۔ مگرسوشل میڈیا اس صدی کی ابتدا میں جوخواب لیکرنمودار ہوا تھا وہ مر رہے ہیں۔ انیس سونوے کی دہائی میں سرد جنگ کا خاتمہ لبرل یعنی آزاد خیال جمہوریت کی فتح تھی۔ یہ ایک بڑی تبدیلی تھی، جس کے ساتھ طرزحکمرانی کے بارے میں دنیا کے…

Read more

سعودی عرب پاکستان کی خاطر بھارت سے تعلقات خراب نہیں کرے گا

مسئلہ کشمیراوآئی سی کے حالیہ اجلاس کے ایجنڈے پرنہیں آسکا۔ اس پرکچھ لوگوں کوحیرت ہوئی۔ کچھ نے افسوس کا اظہارکیا۔ مجھے ان لوگوں کے اس حیرت وافسوس پرحیرت ہوئی۔ کون ذی شعورآدمی نہیں جانتا تھا کہ مسئلہ کشمیر او آئی سی کے ایجنڈے پر نہیں آسکے گا؟ اور اگرآبھی گیا تو پاکستان و بھارت کو…

Read more

بے گھری اور بیگانگی کیا ہے؟

گزشتہ برس معیارِ زندگی کی عالمی درجہ بندی میں کینیڈا کو پہلا نمبر دیا گیا تھا اور ایسا مسلسل چوتھی بار ہوا تھا کہ کینیڈا دنیا میں پہلے نمبر پر تھا۔ معیارِ زندگی میں اول نمبر پر ہونے کے علاوہ دیگر کئی حوالوں سے بھی اس ملک کو ایک مثالی اور قابل تقلید ملک قرار…

Read more

وکلا کا خوف، قانون کا نفاذ اور تشدد کا رجحان

یہ جنوری چوبیس کا دن ہے۔ سال انیس سو ستتر ہے۔ مقام سپین کا مشہور شہر میڈرڈ ہے۔ میڈرڈ شہر کے مشہور ریلوے سٹیشن اٹوچا کے نزدیک اٹوچا گلی کی پچپن نمبر عمارت کے ایک دفتر میں میڈرڈ شہر میں لیبر لا کے ماہر قانون، ورکرز کمیشن کے ممبران، ٹریڈ یونین اور کالعدم کمیونسٹ پارٹی…

Read more

ماضی کے مزاروں میں کیا دفن ہے؟

امریکہ نے ایران کے ماضی سے کیا سیکھا؟ اور ایران اپنے ماضی اور امریکیوں سے کیا سبق سیکھ سکتا ہے؟ ان سوالات کے جواب ایران کی تاریخ میں ہیں۔ ایران کی قدیم اور عظیم تاریخ کے کئی سنہرے ادوار ہیں۔ عظمت رفتہ کے ان ادوار میں کئی شہنشاہ، بادشاہ، شاعر، ادیب اور دانشورگزرے ہیں۔ اس…

Read more