قلم کو ہتھکڑی ( 4 )

یہ نوجوان جانے کب سے اڈیالہ جیل کے سب سے خوفناک منطقے، ہائی سیکورٹی بلاک (HSB) کی اس کھولی میں بند تھے۔ میرے جرم کی نوعیت جان کر وہ بہت محظوظ ہوئے۔ شاید میری صلاحیتِ جرم کی کم مائیگی پر انہیں ترس آیا۔ لیڈر نما نوجوان بولا ”سر آپ کے لئے چائے بنائیں؟ “ میں…

Read more

قلم کو ہتھکڑی

شکستِ نشہ سے چور، مدقوق چہرے والا قیدی، راستے بھر بلکتا، پولیس والوں کی منتیں کرتا، گالیاں کھاتا، اپنے ہم سفروں کو ضیافت طبع کا سامان فراہم کرتا رہا، پیرانہ سالی سے نڈھال، اعضا کی شکستگی سے چور، خستہ حال پریزن وین خود کو سمیٹتی گھسیٹتی آگے بڑھتی رہی۔ خدا خدا کرکے کوئی گھنٹہ بھر…

Read more

قلم کو ہتھکڑی (2)

صرف تھانے کی حراست گاہ میں وقت چیونٹی کی رفتار سے چل رہا تھا۔ دن کے گیارہ بج چکے تھے۔ کمرے کے کھلے دروازے کے باہر پولیس اہلکاروں کی نقل و حرکت بڑھ رہی تھی۔ میں اس سوچ میں غلطاں تھا کہ عدالت کے سامنے پیش کیوں نہیں کیا جا رہا؟ اب تک ایف آئی…

Read more

قلم کو ہتھکڑی

یہ جمعہ 26 جولائی کی رات کے آسودگی بخش لمحوں کا ذکر ہے۔  سب کچھ معمول کے مطابق تھا۔ میں اپنے بیڈ روم میں، پلنگ پر نیم دراز، کئی برس پرانی کرِم خوردہ سی ڈائری کی ورق گردانی کرتے ہوئے، ایک کورے کاغذ پر نوٹس لے رہا تھا۔ یکایک گھر کے بیرونی دروازے پر لگی…

Read more

جسٹس بھگوان داس: ایک بڑے انسان کے دل میں کتنی وسعت ہوتی ہے؟

میری والدہ کے انتقال کو ابھی ہفتہ بھر ہی ہوا تھا کہ ایک شام میرے فون کی گھنٹی بجی۔ دوسری طرف سے آواز آئی، ’’سپریم کورٹ کے جج رانا بھگوان داس آپ سے بات کرنا چاہتے ہیں۔‘‘ مجھے کچھ کچھ حیرت سی ہوئی۔ بہت سے جج صاحبان سے شرفِ نیاز مندی حاصل ہونے کے باوجود…

Read more

اساتذہ کو لگی ہتھکڑیوں کی جھنکار۔۔۔ !

جناب چیف جسٹس کا نوٹس کافی نہیں۔۔۔ ! کسی کو خبر ہے کہ علم کی روشنی بکھیرنے والے کن تنگ و تاریک کھولیوں میں پڑے ہیں؟ ”کیا اساتذہ کو لگی ہتھکڑیوں کی جھنکار،  ایک گونج بن کر،  سر کش و بے باک نیب“ کے ”حمام باد گرد“ کا جادو توڑ سکتی ہے؟” اگر نہیں تو…

Read more

شہباز شریف کا مقدمہ اور حکومت سے دو کروڑ لے کر ارب پتی بننے والا

شہباز شریف بھی پکڑا گیا۔ پی۔ ٹی۔ آئی نعرہ زن ہے کہ احتساب کا وعدہ بر گ وبار لا رہا ہے۔ دلیل یہ ہے کہ ”قانون ہر شخص کے لئے برابر ہے ‘‘۔ صدیوں سے یہی سنتے چلے آرہے ہیں لیکن صدیوں کا تجربہ یہ بھی ہے کہ قانون بھلے ہر شخص کے لئے برابر…

Read more

میاں صاحب بتاتے ہیں کہ ان کے ساتھ یہ سب کیوں ہو رہا ہے

2014 میں عمران خان اور طاہرالقادری کے دھرنوں میں اور بھی بہت کچھ تھا لیکن” سنگین غداری ‘‘ مقدمہ بھی ایک نمایاں محرک تھا۔ یہ دھرنے شروع ہونے کے کوئی دو ہفتے بعد، 27 اگست 2014 کی شام کا ذکر ہے۔ قومی اسمبلی اجلاس میں شرکت اور مختصر خطاب کے بعد وزیر اعظم واپس جانے لگے تو مجھے گاڑی میں بٹھالیا۔ شاہراہ ِ دستور آتش فشاں بنی ہوئی تھی اور ” گو نواز گو ‘‘ کی گونج تیز تر ہورہی تھی۔ میں نے سرگوشی کے انداز میں پوچھا۔ ”میاں صاحب! یہ سب کیوں ہورہا ہے؟ کوئی خاص وجہ ہے آپ کے ذہن میں؟ ‘‘ وزیراعظم نے اپنا منہ میرے کان کے قریب لاتے ہوئے سرگوشی ہی کے انداز میں صرف ایک لفظ کہا

Read more

سرکار بنام نواز شریف (3)۔

ایک کروڑ پندرہ لاکھ دستاویزات :دو لاکھ چودہ ہزار آف شور کمپنیاں : ”436پاکستانی شخصیات‘‘۔ سوالوں کا جنگل گھنا ہو رہا ہے اور ”سرکار بنام نواز شریف۔ ‘‘کی پکار پیہم پڑ رہی ہے۔ نواز شریف کو تو سب جانتے ہیں لیکن ” سرکار ‘‘ کے چہرے کے حقیقی خدو خال سات پردوں میں چھپے ہیں…

Read more

سرکار بنام نواز شریف وغیرہ ۔ ۔ ۔

ایک صدا مسلسل ڈیڑھ سال سے گُونج رہی ہے۔ کبھی کہیں کبھی کہیں۔ ”سرکار بہ نام محمد نواز شریف۔ ‘‘ اسلا می جمہوریہ پاکستان کے دارالحکومت، اسلام آباد کے سیکٹر جی۔ الیون میں واقع ایک بے آب و رنگ سپاٹ سی عمارت ہے۔ اس عمارت میں کچھ عدالتیں لگتی، کچھ منصف بیٹھتے ہیں۔ چار چھ…

Read more