ہوئے تُم دوست جِس کے، دُشمن اُس کا آسماں کیوں ہو!

مُشرف صاحب کے خلاف سُنائے گئے سنگین غداری کیس کے فیصلے کو ایک ہفتہ ہونے ہونے کو آیا لیکن اپیل یا صدارتی معافی کا سیدھا اور قانونی راستہ اپنانے کے بجائے اب جو اسلام آباد میں نامعلوم افراد کے ذریعے عدلیہ کے خلاف ایک پوسٹر مہم شروع کی گئی ہے کیا اُس سے فیصلہ ختم…

Read more

سرفروشی کی تمنا کیوں ہمارے دِل میں ہے!

میں نے بچپن نہیں، مارشل لاء دیکھا۔ لیکن ہماری ساری تنقید جنرل ضیاء کے لئے تھی۔ ہم نے کبھی بھی فوج کو بُرا بھلا نہیں کہا۔ مُجھے اب بھی اپنے بچپن کے دن یاد ہیں جب مارشل لاء ہونے کے باوجود سیاچن کانفلکٹ کے دنوں میں ہم پاکستان کے جھنڈے لے ”پاکستان زندہ باد“ کے…

Read more

انتخابی ہنگامے میں ایک گدھے کی آہ

یہ پچھلے سال آج ہی کے دن کی بات ہے۔ خبریں میں میرا کمپالا یوگنڈا سے لکھا گیا ایک کالم ”اب کیا ہوگا“، 23 جولائی 2017 کو شائع ہوا اور 24 جولائی کو مجھے اپنی یونیورسٹی کی ایتھکس کمیٹی سے ایک ایمیل آگئی کہ کیونکہ آپ اپنی ریسرچ اور صحافت کو اوورلیپ کر کے اپنی…

Read more