ترکی میں تقریر لائیو دکھائی گئی ۔ کپتان نے ترکوں سے داد پائی

پاکستانی وزیر اعظم عمران خان جب اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کر رہے تھے، تو میں اسوقت ترکی کے دارلحکومت انقرہ کی ایک سڑک سے گزر رہا تھا ۔میں نے دیکھا کہ چائے خانوں میں بڑی تعداد میں لوگ بغور ان کی تقریر سننے میں محو تھے۔ نہ جانے کیسے یہ بات زد…

Read more

کشمیری زبان پر حملہ ، ایک اور یلغار کی تیاری

ریاست جموں و کشمیر کو تحلیل کرنے کے بعد اب کشمیری عوام کی غالب اکثریت کے تشخص ،تہذیب و کلچر پر کاری ضرب لگانے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔ جہاں ابھی حال ہی میں بھارتی وزیر داخلہ امیت شاہ نے ہندی کو قومی زبان قرار دینے کا عندیہ دیا، وہیں دوسری طرف حکمران بھارتیہ جنتا…

Read more

اسیران مالٹا اور کالا پانی کے وارث کشمیر کے ذخموں کو ناسور بنا رہے ہیں

ابھی حال ہی میں دہلی کے جنتر منتر چوراہے پر بائیں بازو کی طلبہ تنظیموں نے کشمیر پر ہوئی یلغار پر مظاہرہ کا اہتمام کیا تھا۔ مگر کسی مسلم تنظیم کو وہاں آنا گوارا بھی نہیں ہوا۔ کشمیر نے بھی گجرات سے کچھ کم نہیں دیکھا۔ پچھلے 26برسوں کے دوران کشمیر میں سیکورٹی ایجنسیوں اور…

Read more

بھارتی مسلم لیڈران، علماء و کشمیر

ریاست جموں و کشمیر کو تحلیل و تقسیم کرنے جیسے غیر آئینی یکطرفہ اقدامات کے بعد مواصلاتی ناکہ بندی اور ملٹری آپریشنز کے ذریعے مقامی آبادی کو ہراساں کرنے پر جہاں دنیا بھر میں وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت والی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) حکومت پر لعن و طعن ہو رہی تھی،…

Read more

آسام شہریت کا معاملہ : مودی کو اگلتے بنے نہ نگلتے

بھارت کے موجودہ وزیر اعظم نریندر مودی، جب بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ترجمان اور جنرل سیکرٹری کے عہدے پر براجماں تھے، تو ایک دن اشوکا روڑ پر پارٹی صدر دفتر میں یومیہ پریس بریفنگ کے دوران وہ بھارت کی روایتی مہمان نوازی، ہندو کلچر کے بے پناہ برداشت اور تحمل پر گفتگو کر رہے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ صدیوں سے بھارت نے غیر ملکیوں کو پناہ دی اور ان کو سر آنکھوں پر بٹھا کر بلندیوں تک پہنچایا۔ دی ہندو کی پولیٹیکل ایڈیٹر نینا ویاس، جو بی جے پی کور کرتی تھیں، نے ان کو آڑے ہاتھوں لے کر سوال کیا کہ ان کی پارٹی پھر ہندو کلچر کے برخلاف، بنگلہ دیشی پناہ گزینوں کو ملک بدر کرنے کے مطالبہ کو انتخابی موضوع کیوں بناتی ہے؟

Read more

کچھ یادیں: ارون جیٹلی اور سشما سوراج

اگست کا مہینہ جہاں کشمیری قوم کیلئے آزمائشیں لیکر آیا، وہیں بھارت کی حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کیلئے بھی خاصا بھاری رہا۔ اسکے تین مقتدر لیڈران سابق وزیر خارجہ سشما سوراج، سابق وزیر خزانہ ارون جیٹلی اور مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ بابو لال گور انتقال کر گئے۔ دیگر بی…

Read more

موجودہ صورت حال اور کشمیری پنڈتوں کا کردار

کشمیر ی قوم پر اسوقت جو آفت آن پڑی ہے اور جس طرح بھارت کی ہندو انتہا پسند حکومت نے انکے تشخص و انفرادیت پر کاری وار کیا ہے، ہونا تو چاہئے تھا کہ مذہبی عناد سے اوپر اٹھ کر اس کا مقابلہ کیا جاتا۔ مگر افسوس کا مقام ہے کہ کشمیری پنڈتوں (ہندوٰں) کے…

Read more

کشمیر، مسلمان اور یوگی آدتیہ ناتھ کا چشم کشا فلسفہ

90کی دہائی کے اوائل میں تعلیم اور روزگار کی تلاش میں جب میں وارد دہلی ہوا، تو ایک روز معلوم ہوا، کہ کانسٹی ٹیوشن کلب میں ہندو قوم پرستوں کی مربی تنظیم راشٹریہ سیویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کی طلبہ ونگ اکھل بھارتیہ ودھیارتی پریشد کی طرف سے کشمیر پر مذاکرہ ہو رہا ہے۔…

Read more

بین الاقوامی عدالت اور کل بھوشن جادیو

عالمی عدالت نے مبینہ بھارتی جاسوس کل بھوشن جادیو کو کونسلر رسائی نہ دینے کے معاملے میں پاکستان کی تنبیہ تو کی، مگر اسکی رہائی کی بھارتی درخواست مسترد کردی۔ بھارت میں ویسے تو حکومتی اور عوامی حلقوں میں یہ اعتراف ہے کہ جادیو پاکستان کے خلاف جاسوسی کرنے کا مرتکب ہوسکتا ہے ۔ علاو…

Read more

شہیدوں کی قبروں پر لگیں گے ہر برس میلے مگر؟

بھارت میں کچھ عرصہ سے جس طرح تاریخ کو از سر نو ترتیب دینے اور اسکو مسخ کرنے کا کام ہو رہا ہے، اس کی لپیٹ میں کشمیر کی تحریک آزادی کے یادگار لمحے بھی آر ہے ہیں۔ کم و بیش پچھلی آدھی صدی سے کشمیر کی سبھی سیاسی جماعتیں چاہے بھار ت نواز ہوں…

Read more