ادبی اشرافیہ اور بے توقیر رائٹر

دروغ بر گردن راوی کہ 1993 میں اصغر ندیم سید نے ایک نجی ٹی وی پروڈکشن کی سیریل دشت 18 لاکھ میں لکھی تھی۔ (برادر عزیز، سیریل "دشت" اصغر ندیم سید صاحب نے نہیں بلکہ منو بھائی نے لکھا تھا۔ متعلقہ نجی پروڈکشن ہاؤس سے ان کے معاملات معروف اداکار عابد علی کی معرفت طے…

Read more

بارش میں بھیگتی آبدیدہ کہانی کی کتھا

بزم ارباب نشاط کا ہفتہ وار ادبی اجلاس جاری تھا۔ ٹی ہاؤس سینئر جونیئر شعراء اُدباء سے بھرا تھا۔ ’جی بہت شکریہ آپ نے مجھے آج موقعہ دیا۔ ‘ ایک نئے آموز کہانی کار تابش دوتانی نے گلہ صاف کیا۔ پھر سب پر ایک نگاہ ڈالی۔ پھر ایک لمبا سانس لیا اور گویا ہوا۔ ’شگفتہ دیہات کی الہڑ مُٹیار لڑکی جو پڑھی لکھی تو نہ تھی۔ ‘’ میاں یہ افسانہ ہے یا کہانی۔ ؟ ‘ حماد راہی ایک بزرگ کہانی نگار نے اک عجیب سا برا منہ بناتے ہوئے سوال داغا۔

Read more