دونوں کی چھٹی

سازشوں کے شہر اسلام آباد میں ہر طرف بہار کے رنگ بکھرے نظر آتے ہیں لیکن یہ بہار بڑی عجیب ہے۔ اِس بہار میں پھولوں کی خوشبو سے زیادہ رنگ برنگی سازشوں کی بدبو پھیلی ہوئی ہے۔ شہر کے کچھ مضطرب لوگ ناک پر ہاتھ رکھ کر ایک دوسرے کو بتا رہے ہیں کہ وفاقی…

Read more

اندھیری رات کی طرف بڑھتی پی ٹی آئی

چار دن کی چاندنی پھر اندھیری رات۔ شہباز شریف کی رہائی اور پھر نواز شریف کو علاج کے لئے چھ ہفتوں کے لئے گھر جانے کی اجازت ملنے پر مسلم لیگ (ن) والوں کو یہ امید نظر آنے لگی تھی کہ اُن کا مشکل وقت ختم ہونے والا ہے۔ پھر حنیف عباسی پر رات کے…

Read more

شہدا کو قاضی فائز عیسی نے انصاف دینے کی کوشش کی

یہ ایک جج کا تعزیتی خط ہے۔ اس خط میں جج نے ایک خودکش حملے میں مارے جانے والے وکلاء کے ورثا سے تعزیت کی تھی۔ اس تعزیتی خط کے کچھ الفاظ پر غور کریں۔ جج نے لکھا ’’قاتلوں کو اگر جانوروں سے تشبیہ دیں تو جانوروں کی تضحیک ہو گی۔ قاتلوں کے دل سنگ…

Read more

مولانا فضل الرحمٰن کی نئی تحریک

بہت سال پہلے عطاء الحق قاسمی نے مولانا فضل الرحمٰن کو اپنے ایک کالم میں ’’مولانا ڈیزل‘‘ لکھا تو سیاسی مخالفین نے اُچھل اُچھل کر، کبھی لہرا کر اور کبھی بل کھا کر ’’مولانا ڈیزل‘‘ کی اصطلاح کو طعنے کے طور پر استعمال کرنا شروع کر دیا۔ یہ وہ زمانہ تھا جب مولانا فضل الرحمٰن…

Read more

آئی ایم سوری، یہ جواب عمران خان کو دینا ہے

ایک پُر اعتماد طالبہ نے بڑے مہذب انداز میں مجھ سے ایسا سوال پوچھ ڈالا جس کا فوری طور پر میرے پاس کوئی جواب نہ تھا اور میں بہت مشکل میں پڑ گیا۔ طالبہ کے چہرے پر کوئی مسکراہٹ تھی اور نہ ہی شرارت۔ اس کی آنکھوں میں جستجو کے ساتھ ساتھ مجھے کچھ پریشانی بھی نظر آئی لیکن میں چند لمحے خاموش رہا۔ اپنے آپ سے پوچھ رہا تھا کہ یہ سوال میرے ذہن میں کیوں نہ آیا؟ یہ سوال کسی لڑکے نے کیوں نہ پوچھا؟ لڑکی نے یہ سوال کیوں پوچھا؟

سوال کی طرف بعد میں آتے ہیں پہلے یہ مشکل سوال پوچھنے والی لڑکی کے متعلق کچھ جان لیجیے۔ اس لڑکی کا نام زاہدہ تھا جو قائداعظمؒ یونیورسٹی اسلام آباد کی طالبہ ہے۔ کافی دن پہلے زاہدہ نے یونیورسٹی کے ایک استاد کے توسط سے رابطہ کیا اور اپنے کچھ ساتھیوں کے ہمراہ ملاقات کی خواہش ظاہر کی۔ میں نے ملاقات کی وجہ پوچھی تو انہوں نے کہا کہ ہماری یونیورسٹی میں طلباء و طالبات کو لسانی پس منظر کی وجہ سے کئی مشکلات کا سامنا ہے، خاص طور پر ہاسٹلز میں رہنے والوں کو بلوچ، پختون، سندھی یا پھر ”اسلامی“ بن کر کوئی نہ کوئی سمجھوتہ کرنا پڑتا ہے لہٰذا طلباء و طالبات کو قائداعظمؒ کے نام پر قائم یونیورسٹی میں لسانی کشیدگی سے نکالنے کا کوئی راستہ تلاش کیا جائے۔

Read more

بھٹو کیوں زندہ ہے؟

کیا آپ جانتے ہیں کہ ذوالفقار علی بھٹو کے عدالتی قتل کے بعد راولپنڈی جیل میں ان کی لاش ایک فوٹو گرافر کے حوالے کر دی گئی اور یہ فوٹو گرافر لاش کا پاجامہ اتار کر بھٹو صاحب کے پوشیدہ اعضاء کی تصاویر بناتا رہا؟ اس جیل کے سکیورٹی انچارج کرنل رفیع الدین نے اپنی…

Read more

وڈے خان صاحب کی جالب کو محب وطن بنانے کی کوششیں

وطنِ عزیز میں سیاسی مخالفین کو کرپشن کے الزام میں جیل بھیج کر سبق سکھانے کی روایت وڈے خان صاحب نے ڈالی تھی۔ آپ سوچ رہے ہوں گے یہ وڈے خان صاحب کون تھے؟ اگر آپ وڈے خان صاحب کو نہیں جانتے تو پھر آپ کچھ بھی نہیں جانتے۔ یہ وہی وڈے خان صاحب ہیں…

Read more

پرانی کہانی، نئے کردار

یہ ایک مردہ شہر کی کہانی ہے، جس کی سنسان سڑکوں پر بوٹوں کی ٹھک ٹھک سنائی دے رہی تھی۔ اس شہر کے لاش نما زندہ انسان دن رات موت کی دھمکیاں سنتے تھے، احتجاج پر پابندی عائد تھی۔ ریڈیو گلیوں کے آوارہ کتوں کی طرح مسلسل بھونکتا رہتا تھا اور اخبار رات کو جھوٹ…

Read more

بائیس مارچ قتل کی ایک سازش جو ناکام ہوئی

جس کسی نے بھی خونریزی کا یہ منصوبہ بنایا بہت سوچ سمجھ کر بنایا تھا۔ اس منصوبے کا مقصد مسلمانوں اور خاص طور پر پاکستانیوں کو دہشت و مایوسی کا شکار بنانا تھا۔ اسلام اور پاکستان کے دشمنوں نے اس گھنائونے منصوبے پر عملدرآمد کیلئے 22مارچ کے دن کا انتخاب کیا۔ نیوزی لینڈ کے شہر…

Read more

جو نواز شریف ، آصف زرداری کے نہ بنے ، وہ عمران کے بھی نہیں بنیں گے

بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائی کی۔ پروین شاکر نے یہ بات نہ جانے کس ہرجائی کے بارے میں کی تھی لیکن رسوائی اور ہرجائی کا یہ قصہ ختم ہونے میں نہیں آرہا۔ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد آج کل بلاول بھٹو زرداری کے بارے میں جس قسم کے بیانات دے رہے…

Read more