ججوں کی تعیناتی اور عدلیہ کی آزادی

”عدلیہ کی آزادی“ سے مراد ہمارے ہاں عموما عدلیہ کی دیگر ریاستی اداروں انتظامیہ اور مقننہ سے آزادی لیا جاتا ہے۔ عدلیہ کی آزادی کا یہ مفہوم غلط تو نہیں لیکن ادھورا ضرور ہے۔ عدلیہ کی آزادی مکمل اسی وقت ہوتی ہے جب نہ صرف اسے مذکورہ اداروں کی طرف سے کسی دباؤ کا سامنا نہ ہو بلکہ عدلیہ میں موجود ہر جج اپنے جوڈیشل مائینڈ کے مطابق فیصلے کرنے میں بھی مکمل طور پر آزاد ہو اور اسے عدلیہ کے اندر سے بھی کسی قسم کے دباؤ کا سامنا نہ ہو۔

اسی چیز کو یقینی بنانے کے لیے آئین کی اٹھارویں ترمیم کے ذریعے اعلی عدلیہ میں عملی طور پر اکیلے چیف جسٹس کی طرف سے کی جانے والی ججوں کی تعیناتی کے طریقہ کار کو یکسر بدل کر زیادہ لوگوں کو مشاورتی عمل میں شامل کر کے ایک collegial process کو متعارف کروایا گیا تھا۔ مقصد یہی تھا کہ کوئی بھی ایک شخص یا ادارہ اس پوزیشن میں نہ ہو کہ وہ اکیلا اعلی عدلیہ میں ججوں کی تعیناتی کر سکے یا ایسی تعیناتیوں کے عمل میں اثر انداز ہو سکے۔ ظاہر ہے کہ اس کا مقصد قابل ترین شخص کو جج کے منصب پر اس طرح سے فائز کرنا تھا کہ وہ بغیر کسی بیرونی یا اندرونی دباؤ کے اپنے جوڈیشل مائینڈ کے مطابق غیر جانبداری سے فیصلے کرنے میں آزاد ہو۔

Read more

نصیر بھائی باربر ایف سی کالج

”یار ادھر دیکھ نظر نہیں آرہا“، میں کھڑکی میں لگی جالی میں سے جھانکتے ہوے چلایا ”ادھر کدھر مجھے تو نظر نہیں آ رہا“، دوست ادھر ادھر دیکھنے کے بعدجوابا چلایا۔ ”ادھر نہیں، نائی کی دوکان میں یار“۔ دوست بالآخر نائی کی دوکان میں داخل ہوا اور ساتھ ہی دوکان کے دوسرے حصے سے نصیر…

Read more

خاص لوگوں کی باتیں

آج ایک صاحب سے ملنا تھا، ان سے فون پر پوچھا کہاں آؤں، بولے آپ کہاں ہیں، بتایا کہ انارکلی کے اشارے پر۔ کہنے لگے پاک ٹی ہاوس ہی مل لیتے ہیں آپ پہنچیے، میں بس آیا۔ میں نے پاک ٹی ہاوس کے سامنے پارکنگ میں گاڑی پارک کی اور ٹی ہاوس کے دروازے پر…

Read more

ساہیوال سانحہ اور چند جواب طلب واقعاتی سوالات

ذیشان کے حوالے سے مبینہ طور پر ملنے والی خفیہ معلومات تھیں کیا؟
ان معلومات کا ماخذ کیا تھا؟
کیا واقعی کسی گرفتار دہشت گرد نے ہی ذیشان کے متعلق معلومات فراہم کی تھیں؟

کیا سی ٹی ڈی کو کارروائی کے لیے رپورٹ ارسال کرنے سے قبل حاصل کردہ معلومات کو کاونٹر چیک کیا گیا؟
ذیشان کے خلاف ملنے والی اطلاعات کو کس بنیاد پر مصدقہ اطلاعات کہا گیا؟

خفیہ معلومات کی بنیاد پر تیار کردہ رپورٹ سی ٹی ڈی کو کب موصول ہوئی؟
رپورٹ کس ادارے کی جانب سے کس سطح پر سی ٹی ڈی میں موصول ہوئی؟
مذکورہ رپورٹ کی بنیاد پر سی ٹی ڈی کی جانب سے کیا کیا کارروائیاں عمل میں لائی گئیں

Read more

بے نظیر سے میری آخری ملاقات

2007 کے نومبر کی بات ہے، مشرف کا دوسرا مارشل لاء چل رہا تھا اور وکلا تحریک زوروں پر تھی، شام چھ یا سات بجے کا وقت ہو گا میں اپنے گلبرگ میں واقع دفتر میں کام سمیٹ کر گھر جانے کی تیاری کر رہا تھا کہ محبوب صاحب کی کال آئی۔ بولے بےنظیر سے ملنا ہے؟ مجھے یقین تو نہ آیا لیکن فورا کہا جی بالکل۔ کہنے لگے شام آٹھ بجے عاصمہ جہانگیر کے گھر آ جاؤ۔ آٹھ بجے سے دس پندرہ منٹ پہلے ہی وہاں پہنچ گیا۔ اور بھی کچھ لوگ جنھیں ان دنوں سول سوسائٹی کے طور پر جانا جاتا تھا وہاں موجود تھے۔ سب کو تو میں نہیں جانتا تھا لیکن حسین نقی، مدیحہ گوہر، رحیم، رابعہ باجوہ اور پروفیسر قزلباش سمیت چند ایک دیگر کے ساتھ میری شناسائی تھی

Read more

پنجاب میں پہلے سے موجود قابل لا افسران کو برقرار رکھنے پر غور

حکومت نے حال ہی میں ایڈیشنل اور ڈپٹی اٹارنی جنرلز کی تعیناتیوں کا مرحلہ کافی لے دے کے بعد پار کیا ہی ہے کہ اب پنجاب میں ایڈیشنل اور اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرلز کی تعیناتیاں کا معاملہ حکومت کو مشکل سے دو چار کیے ہوئے ہے۔ خبریں آتی رہیں کہ وزیر قانون فروغ نسیم، بابر اعوان اور حامد خان ان عہدوں پر زیادہ سے زیادہ اپنے لوگ تعینات کروانا چاہتے تھے اور اسی طرح انصاف لائیرز فورم نے بھی اپنے حامی وکلا کی ایک فہرست ان تعیناتیوں کے لیے دے رکھی تھی۔

دوسری طرف مسلم لیگ ق بھی ان تعیناتیوں میں زیادہ سے زیادہ حصہ چاہتی تھی۔ خبر کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے نعیم الحق کی سربراہی میں ایک کمیٹی قائم کی تھی جس کے ذمے تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لے کر حتمی سفارشات مرتب کرنا تھا۔ خبر کے مطابق حکومت نے ان تعیناتیوں کو سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے انتخابات تک روکے رکھا تھا تاکہ حامد خان گروپ کے صدارتی امیدوار پہلے سے موجود لا افیسرز کے ووٹ بھی حاصل کر سکیں۔

Read more

شیخ رشید کی بدتمیزی کی وجہ سے چھٹی پر جانے والا عمران خان کا حامی افسر

پاکستان کالج آف لا میں قانون کی تعلیم کا آغاز کیا تو اپنے سینئرز میں ایک عجیب شخص کو دیکھا جو صبح سب سے پہلے کالج پہنچتا اور شام کو کالج لائبریری بند ہونے پر ہی واپس جاتا۔ کیا سینیرز، کیا جونیئرز، کیا اساتذہ اور کیا کالج سٹاف سب میں یکساں مقبول۔ ایسی مقبولیت تو…

Read more

نواز شریف کا بیان وطن دوستی کا اظہار ہے

ساری دنیا میں اپنی حکومتوں کے جنگی فیصلوں کے خلاف جنگ مخالف مظاہرے ہمیشہ ان ملکوں میں بسنے والے لوگوں کی نیک نامی کا باعث ہی بنتے ہیں۔ جنگی جنونیت خواہ وہ بھارت کی شدت پسند سیاسی و غیر سیاسی تنظیموں کی جانب سے ہو یا پاکستانی تنظیموں کی ہمیشہ ملک اور ملک میں بسنے…

Read more

پاکستان کو فلاحی ریاست کیسے بنایا جا سکتا ہے؟

ہمارے ہاں ورکنگ کلاس کی حالت زار کا رونا تو بہت رویا جاتا ہے۔ سکینڈے نیویا کے ممالک جیسی فلاحی ریاستوں کی مثالیں ہر دوسرے ٹاک شو اور سیاسی جلسوں میں دی جاتی ہیں۔ معاشی مشکلات سے دوچار لوگوں سے ہمدردی اور ذاتی حیثیت میں ان کی مالی مدد کی تلقین کا بھی شور رہتا…

Read more

فرضی شادی، فرضی کمپنی اور فرضی ملازمت

پیپر میرج سے تو ہم سب واقف ہیں۔ ہمارے لوگ مغربی ممالک میں قانونی سکونت اختیار کرنے کے لیے پیپر میرج کی ”سہولت“ سے استفادہ کرتے آئے ہیں۔ سب جانتےہیں کہ پیپر میرج کوئی حقیقی شادی نہیں ہوتی بلکہ محض کاغذوں کی حد تک امیگریشن فوائد حاصل کرنے یا کسی ملک میں با آسانی آ…

Read more
––>