گُم شدہ منظر

زیب سندھی کا یہ افسانہ کوئی ربع صدی پہلے سندھی زبان میں لکھا گیا۔ محمد ابراہیم جمالی نے اسے اردو کا پیراہن دیا۔ جیسا دل کو چھو لینے والا افسانہ ہے، ویسا ہی کانٹے کی تول ترجمہ ہے۔ ایسی تحریر قلم سے نہیں، انگلیوں سے لکھی جاتی ہے۔ ***      *** وہ ٹیکسی سے…

Read more

انیلا پرمار کو سوشل میڈیا کے بلیک میلرز نے خودکشی پر مجبور کیا۔۔۔!

سائبر کرائم کی شکار ہندو طالبہ کو خودکشی سے بچایا جا سکتا تھا لیکن افسوس کہ اس کے ورثا سب کچھ معلوم ہوتے ہوئے بھی، بدنامی کے خوف میں مبتلا رہے اور بارہویں جماعت کی طالبہ خودکشی کرنے پر مجبور ہوگئی۔ اس نے تو اپنے بابا کو اپنا دوست سمجھ کر سب کچھ بتادیا تھا…

Read more

بارہ سالہ سنیل کمار، مٹھو پیر اور نسیم کھرل کا “کافر”

چند دن پہلے میڈیا پر ایک خبر گردش کرتی رہی تھی کہ، سندھ کے چھوٹے سے شہر ڈہرکی کا ایک بارہ سالہ بچہ سنیل کمار گھر سے ناراض ہوکر مقامی پیر میاں مٹھو کے ڈیرے پر پہنچا اور میاں مٹھو نے کلمہ پڑھا کر اسے مسلمان کر دیا۔ بچے کے والد کا کہنا تھا کہ…

Read more

مغرب اور مشرق کے بھیڑیے

سرحدی علاقے کی انتہائی سرد اور خوفناک رات تھی اور اندھیرے میں تیز ہوا کے زناٹوں کے ساتھ، بیحد پراسرار آوازیں سنائی دے رہی تھیں۔ ایسا لگتا تھا جیسے ہر طرف چڑیلیں دوڑ رہی ہوں۔ ایسے خوف کی حالت میں مشرق اور مغرب کے دو دشمن ممالک کے وہ دو سپاہی، نفسیاتی طور پر ایک…

Read more

موہن جو دڑو کا موہن کیا کہتا ہے؟

ثقافتی سرکار کے سائیں نے میٹنگ میں موجود ادباء، شعراء اور ماہرین کی طرف دیکھ کر مسکرا کر کہا، "ہم نے موہن جو دوڑ کا رسم الخط پڑھنے کے لیے عالمی ورکشاپ منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔" میٹنگ میں موجود تمام ادباء، شعراء اور ماہرین نے تالیاں بجا کر اور واہ واہ کے نعرے…

Read more

اردو کا جنازہ نہیں نکلے گا

جب رئیس امروہوی نے کہا تھا کہ "اردو کا جنازہ ہے ذرا دھوم سے نکلے" تب لاڑکانہ شہر کے میرے محلے میں لسانی تفریق نام کو بھی نہیں تھی۔ سندھی اکثریت والے شہر کے میرے جاڑل شاہ محلے میں بیس سے زائد گھر اردو بولنے والوں کے تھے، چار پنجابی بولنے والوں کے اور ایک…

Read more

پھول سی بیٹی جو کوئلہ بن گئی…

یہ بھیانک واقعہ چند ہی روز پہلے کا ہے، جس کی فیس بک پر موجود دو منٹ سولہ سیکنڈ کی وہ مختصر وڈیو مکمل طور پر دیکھنا میرے بس کی بات نہیں۔ دل پر پتھر رکھ کر میں بمشکل ایک منٹ ہی دیکھ سکا، کیونکہ میں نے اپنی آنکھوں میں آنسوؤں کے ساتھ جلن بھی…

Read more

موہن جو دڑو کا خزانہ

حکومت کی جانب سے موہن جو دڑو پر عالمی سیمینار منعقد کرنے کا فیصلہ کرنے کے بعد، مجھے ذمہ داری دی گئی تھی کہ میں پڑوسی ملک جا کر نہ صرف وہاں کے ادیبوں اور دانشوروں کو دعوت نامے پہنچائوں، بلکہ اس ملک میں موجود ایک بہت ہی اہم شخصیت کو بھی سیمینار میں شرکت…

Read more