واشنگٹن کی تھپکی

دھمکی سے تھپکی اور وارفتگی کا یہ سفر اپنے اندر جھوم اُٹھنے کے بہت سارے پہلو رکھتا ہے۔ اِس غیرمعمولی تبدیلی کے یوں تو ایک سے زائد طاقتور محرکات ہیں مگر انصاف کے پرستاروں کا دعویٰ یہ ہے کہ یہ سب کچھ جناب عمران خان کی طلسماتی شخصیت کا کرشمہ ہے جس نے ٹرمپ جیسے…

Read more

جناب وزیراعظم! واشنگٹن کیا لے کر جائیں گے؟

بلاشبہ یہ ایک بہت بڑے اعزاز کی بات ہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے ہمارے وزیرِاعظم کو ملاقات کی دعوت دی ہے۔ مسلمہ سفارتی آداب کے مطابق مہمان کو خالی ہاتھ نہیں جانا چاہئے۔ تبھی اُس کا احترام کے ساتھ استقبال بھی کیا جائے گا اور اُس کی پسندیدگی کا لحاظ بھی رکھا جائے گا۔…

Read more

اقتدار کی بل کھاتی ہوئی کہانی

ہم آج عرصۂ محشر میں ہیں۔ ایک ایسی افراتفری ہے کہ اہلِ اقتدار کو سامنے کی چیز بھی نظر نہیں آ رہی۔ اِس لئے اہلِ دانش قانون کی طرح اقتدار کو بھی اندھا کہتے ہیں۔ قانون کس قدر اندھا ہوتا ہے، یہ تو نیب کی شبانہ روز سرگرمیوں سے اچھی طرح واضح ہوتا رہتا ہے۔…

Read more

تاریخ کا میزان

وہی قومیں دنیا کی قیادت سنبھالتی آئی ہیں جو تاریخ کی میزان پر پوری اُترتی ہیں۔ ایک زمانہ تھا کہ مسلمان قیادت کے منصب پر فائز رہے۔ پھر اِن کے ہاتھ سے ہندوستان کا اقتدار بھی چلا گیا اور حضرتِ غالبؔ 1857 کے دورِآشوب سے گرزتے ہوئے پکار اُٹھے ؎

کوئی اُمید بر نہیں آتی
کوئی صورت نظر نہیں آتی

Read more

صحافت کی سبک خرام شخصیت۔ رحمت علی رازی

عزیزم رازی سے پہلی ملاقات جناب میاں بشیر احمد کے ہاں غالباً 1983میں ہوئی تھی۔ میاں صاحب ان دنوں محکمہ انہار میں ڈپٹی سیکرٹری تھے جو بعد ازاں ڈائریکٹر جنرل پنجاب ہیلتھ فاؤنڈیشن کی حیثیت سے ریٹائر ہوئے۔ میں اُن سے سگنیلرز ایسوسی ایشن کے مسائل پر بات کرنے گیا تھا۔ اُنہوں نے بڑے غور…

Read more

ادریس بختیار: خاک نشین جو ہمارے رول ماڈل بنے

گزشتہ ایک دو مہینوں میں کیسے کیسے آفتاب و ماہتاب غروب ہو گئے جس سے قحط الرجال کا شدید احساس ہونے لگا ہے۔ وہی معاشرے زندہ رہتے اور ترقی کرتے ہیں جن میں رجال الرشید کی بہتات ہوتی ہے جو زندگی کا توازن قائم رکھتے اور اپنے کردار سے مستقبل کے امکانات روشن کرتے رہتے…

Read more

نمائشی سے حقیقی بجٹ تک

قومی اسمبلی میں گیارہ جون کو وزیرمملکت جناب حماد اظہر نے نئے سال کا بجٹ پیش کیا، تو ماضی سے بہت مختلف منظر دیکھنے میں آیا۔ بجٹ تقریر کا نصف حصہ اپوزیشن نے بڑے سکون سے سنا مگر جونہی وزیر موصوف نے ٹیکسوں کا باب کھولا، اپوزیشن کی جماعتیں آتشِ زیرپا نظر آئیں۔ پھر دھینگا مشتی شروع ہو گئی اور اِس قدر شوروغل اُٹھا کہ کان پڑی آواز سنائی نہ دے رہی تھی۔ وہ گلے پھاڑ پھاڑ کر نعرے لگا رہے تھے کہ آئی ایم ایف کا بجٹ نامنظور اور ’گو عمران نیازی گو‘ ۔

Read more

ہمارے وزیراعظم کی اُمید بر آئی

جناب عمران خان اُس کرکٹ ٹیم کے کپتان تھے جس نے پاکستان کے لئے 1992 میں ورلڈکپ جیتا تھا۔ تب سے وہ خود کو کپتان کہلوانے میں بہت خوشی اور بڑا اِعزاز محسوس کرتے ہیں۔ اب اللہ تعالیٰ نے اُنہیں روحانیت کا بھی ایک بلند مقام عطا کر دیا ہے اور اُن کی ہر خواہش پوری ہو جاتی ہے۔ پچھلے دنوں جب نریندر مودی اپنی انتخابی مہم کے دوران ہندو آبادی کے زیادہ سے زیادہ ووٹ حاصل کرنے کے لئے پاکستان کے خلاف زہریلی تقریریں کر رہے تھے، تو ہمارے وزیرِاعظم نے غیرمعمولی سیاسی فراست سے کام لیتے ہوئے اُن کے کامیاب ہونے کی خواہش ظاہر کی تھی کہ وہ پاکستان کے ساتھ مذاکرات بھی کر سکتے ہیں اور کشمیر سمیت دیرینہ تنازعات کا حل بھی نکال سکتے ہیں۔

Read more

اپوزیشن دوراہے پر

حکومت اور اپوزیشن کے بلی چوہے کے کھیل پر تبصرہ کرنے سے پہلے میں پاکستان کے عظیم اصول پسند اور معاملہ فہم سیاستدان جناب قمر زمان کائرہ سے اُن کے جواں سال بیٹے اُسامہ کی ٹریفک حادثے میں شہادت پر اظہارِ تعزیت کروں گا۔ وہ ابھی کالج میں پڑھتا تھا کہ اُسے اجل نے آ…

Read more

کڑی آزمائش کی گھڑی

تکمیل کی ایک ادھوری کہانی کا میرے وطن میں مدتوں سے بسیرا ہے۔ اِس میں سرشاری کے لمحات بھی ہیں اور دکھوں میں ڈوبی ہوئی ساعتیں بھی۔ کبھی کبھی اُمید بندھتی ہے کہ زندگی سہانے خوابوں میں تبدیل ہونے لگی ہے، مگر جلد ہی یہ بھید کھل جاتا ہے کہ جو دیکھا تھا، وہ اک…

Read more