تمام جنسی درندوں کو ایک کمرے میں بند کر دیں؟

جسٹس فار زینب، جسٹس فار فرشتہ۔ جسٹس فار عظمٰی، جسٹس فار فوزیہ۔ جسٹس فار اقراء، جسٹس فار اسماء۔ کل ملا کر یہی کچھ بچا ہے اور یہی ہو سکتا ہے کہ مزید کچھ کی توقع رکھنا نری بے وقوفی اور سراسر حماقت کے سوا کچھ نہیں۔ ہم ایک ایسی دنیا میں رہ رہے ہیں جہاں…

Read more

جن کے دل ان کے پیروں تلے آئے ہیں۔۔۔

ڈاکٹر شیر شاہ سید کے پاس اتنی کہانیاں کہاں سے آتی ہیں؟ اس سوال کا جواب ایک سال پہلے تک میرے پاس بھی نہیں تھا۔ آج میرے پاس بھی ان گنت کہانیاں ہیں لیکن ان جیسا لکھنے کا فن نہیں۔ یہ کہانیاں میں روز سنتی ہوں، روز سوچتی ہوں شاید اچانک جانے والوں سے جڑی…

Read more

عورت پر انگلی اٹھانے والے…. وقت کا فیصلہ سن !

تصویر کائنات کے رنگ وجودِ زن سے ہیں اور رنگ میں بھنگ وہ ڈالتے ہیں جنہیں رنگولی سے نفرت ہے، جن کا لباس سفید اور کرتوت سیاہ ہیں۔ جو کہتے ہیں کہ عورت فاحشہ ہے، جنت سے نکلوا دیا، دامنِ یوسف ہو یا ہابیل قابیل، ہر جگہ فتنہ اسی عورت نے پھیلایا۔ قلوپطرہ کی مثال…

Read more

بہن کو انسان ہی نہیں سمجھتے، تو کیا لکھیں؟

اخلاقیات کا تقاضا ہے کہ بہن کے بارے میں سوال نہ پوچھے جائیں، کیا رشتہ مانگنا تھا جو ایسی باتیں پوچھ رہے ہیں؟ مقدس رشتے کو پامال کیا جا رہا ہے۔ ثنا خوانِ تقدیسِ مشرق بہن کے ذکر پر جلال میں آ گئے ہیں کہ ہماری بہن کا نام ہی کیوں لیا۔ بظاہر بے ضرر…

Read more

عاصمہ یعقوب مسیح: ایک آوازہ انکار گناہ ٹھہرا ہے

خبر ہے کہ تبدیلئ مذہب اور رشتے سے انکار پر عاصمہ یعقوب پہ تیزاب پھینکا گیا، شان تاثیر کے مطابق عاصمہ یعقوب اس وقت وینٹی لیٹر پہ ہیں جبکہ میری رائے میں عاصمہ یعقوب نہیں یہ معاشرہ وینٹی لیٹر پہ ہے، کبھی ثمینہ سندھو کو مار دیتے ہیں، کبھی عاصمہ رانی کو جینے کا حق…

Read more