یہ اندھا قانون ہے

”پلیز میری ماں کو بلا دو۔ میرے بابا کو بلا دو۔ مجھے مت مارو۔ چھوڑ دو مجھے گھر جانے دو۔ مجھے بہت درد ہورہا۔ میری ماں میرا انتظار کررہی ہوگی۔ میرے سر میں بہت درد ہو رہا ہے۔ مجھے اور نہ مارو۔ بس کر دو میں ہاتھ جوڑتا ہوں۔ “

یہ وہ آخری الفاظ تھے 15 سالہ نوعمر بچے ریحان کے جسے گزشتہ دنوں بہادرآباد کے علاقے میں چوری کے الزام میں ”مہذب شہریوں“ نے بہیمانہ تشدد کرتے ہوئے موت کی نیند سلادیا۔ وہ رو رو کر تشدد کرنے والے افراد سے ہاتھ جوڑ کر التجائیں کرتا رہا۔ مگر میرے دیس کے مہذب معاشرے کے باعزت شہری درندوں کا روپ دھار چکے تھے۔ وہ نہتے ریحان کو رسیوں سے باندھ کر اس پر بدترین تشدد کررہے تھے۔ کوئی اس کو مکے اور لاتیں مار رہا تھا۔ تو کوئی اس کے سر اور کمر پر ڈنڈوں کا وار کررہا تھا۔

Read more

کراچی پریس کلب کی کچھ خوشگوار یادیں

کراچی کے مصروف ترین علاقے، صدر کے سرور شہید روڈ پر واقع، کراچی پریس کلب پاکستان کا پہلا پریس کلب ہونے کا اعزاز رکھتا ہے۔ اور پاکستان کا سب سے بڑا پریس کلب ہونے کا ریکارڈ بھی اپنے پاس رکھتا ہے۔ کراچی پریس کلب 1955 ءمیں قائم ہوا۔ ایوب خان، بھٹو، جنرل ضیاءالحق، پرویز مشرف…

Read more

دنیا میں کتنا غم ہے

دفتر پہنچتے ہی میں نے بیل بجائی۔ فوراً ہی میرا چپراسی دوڑتا ہوا آیا۔ ”سام علیکم صاب۔“ ”وعلیکم السلام۔“ ”کیا حال ہے محمد علی۔“ ”الحمدللہ آپ سناؤ صاب۔“ ”میں بھی الحمدللہ ٹھیک ٹھاک۔“ ”اچھا جلدی سے اچھی چائے پلاؤ سر میں بہت درد ہورہا ہے۔“ ”ابھی لایا صاب۔ وہ یہ کہہ کر تیزی سے کمرے…

Read more

غلامانہ ذہنیت اور اس کے ثمرات

ہمارے ایک جذباتی دوست عمران خان اور تحریک انصاف کے خود ساختہ وکیل بھی ہیں، کو پچھلے تین چار سال سے تبدیلی کا بخار چڑھا ہوا ہے۔ الیکشن 2018 سے قبل ہی انھوں نے ہمیں قائل کرنے کی بھرپور کوشش کری اور اور اپنا ایڑی چوٹی کا زور لگادیا کہ ہم کسی طرح ان کے…

Read more

ایک صحافی کا عالم برزخ سے اپنے بیٹے کو لکھا خط

پیارے بیٹے! امید ہے کہ تم سب خیریت سے ہو گے۔ میں بھی اللہ کے فضل و کرم سے خیریت سے ہوں۔ ابھی چند روز پہلے ایک عزیز دوست کی یہاں آمد ہوئی۔ اس کے ذریعے تمھارے بارے میں حالات سے آگاہی ہوئی۔ سن کر دلی مسرت ہوئی کہ اس سڑے گلے نظام کے خلاف…

Read more

کیا عمران خان مریم نواز سے خوفزدہ ہیں؟

گزشتہ روز ‏نور الہدیٰ شاہ صاحبہ کا ٹوئٹ نظروں سے گزرا، جس میں انھوں نے کہا ‏کہ مجھے رانا ثنااللہ پسند نہیں تھے۔ آج دل ان کے ساتھ کھڑا ہے۔ مجھے مریم نواز پسند نہیں تھیں، آج دل ان کے ساتھ کھڑا ہے۔ مجھے مریم اورنگزیب پسند نہیں تھیں، آج دل ان کے ساتھ کھڑا…

Read more

جانے کہاں گئے وہ دن

آج سے تین، چار دہائی پہلے ہم انسان اپنے محدود آمدنی و وسائل میں بھی اپنی طرز زندگی سے نا صرف مطمئن تھے بلکہ ہماری زندگیوں میں اطمینان و سکون تھا۔ یہ وہ وقت تھا جب ہمیں انٹرنیٹ اور کیبیل کی سہولتیں بھی میسر نا تھیں۔ گھر میں صرف ایک کمانے والا ہوتا تھا مگر پھر بھی پرسکون زندگی گزاری جاتی تھی۔

رشتہ دار و محلہ دار عزیز، اقارب ایک دوسرے کے دکھ، درد، اور خوشیوں کے دائمی ساتھی ہوتے تھے۔ محلہ میں کسی کا انتقال ہوجائے تو آس پڑوس کے لوگ ہی پیش پیش ہوتے تھے۔ میت والے گھر کو پتا ہی نہیں چلتا تھا کہ کس نے کب جاکر قبر کا انتظام کروا دیا اور کس نے کفن کا بندوبست کردیا۔ سب پلک جھکتے ہو جایا کرتا تھا۔ رشتے دار اور محلہ دار سوگواران کے لیے اپنے گھر سے کھانا پکاکر لاتے اور ان کو اپنے سامنے بٹھا کر کھلاتے تھے۔

Read more

صحافی اور ادیب نسیم شاد مرحوم کی چند باتیں

‎ آج بارہ جون ہے اور آج سینئر صحافی و ادیب نسیم شاد مرحوم کی برسی ہے۔ جو میرے والد بھی تھے۔ ان کو ہم سے بچھڑے آج انیس برس ہو گئے۔ نسیم شاد مرحوم 20 جنوری 1942 کو بھارت کے شہر انبالہ میں پیدا ہوئے۔ بچپن وہ ایک ذہین اور زیرک شخص تھے۔ ان کی ذہانت کا اندازہ آپ اس طرح لگاسکتے ہیں کہ تقسیم ہند سے قبل ہندوستان میں کچھ تنگ نظر ہندوں کا مسلمانوں کے ساتھ تعصب اس قدر تھا کہ وہ ان کو اچھوت سمجھتے تھے۔ اور ان کے ساتھ کھانا پینا بھی نہیں کرتے تھے۔

Read more

عمران خان کے وعدے اور حقیقت

‏‎بلا شبہ عمران خان کا شمار دنیا کے بہترین کرکٹرز میں ہوتا ہے اور وہ پاکستان کے بہترین کپتان بھی رہ چکے ہیں۔ مگر 25 سال کے طویل سیاسی تجربہ کے باوجود عمران خان ابھی تک سیاسی نا بالغ لگتے ہیں۔ ‏‎ یہ بات کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے کہ کچھ طاقتور قوتوں کی جانب سے عمران خان نیازی کو کرکٹ کے میدانوں سے نکال کر سیاسی اکھاڑے میں دھکیلا گیا۔ ‏‎عمران خان نے اپنے سیاسی سفر کا آغاز تو 1997 میں ہی کردیا تھا مگر مقبولیت ان کو 2011 کے مینار پاکستان کے جلسے میں ملی۔

Read more

رمضان نشریات

رمضان المبارک رحمتوں، برکتوں اور اللہ پاک کی بے شمار نعمتوں والا مہینا ہے۔ یہ مقدس مہینا ہم سب کو صبر کا درس دیتا ہے، کہ کس طرح ہم صبر کر کے اور اپنی نفسانی خواہشات پہ قابو پا کر، اللہ پاک کی خوش نودی حاصل کر سکتے ہیں۔ یعنی ہم یہ بھی کہہ سکتے ہیں، یہ اللہ پاک کا قرب اور خوش نودی حاصل کرنے کا مہینا ہے۔ ویسے تو ہم پورا سال عبادات کرتے ہی ہیں لیکن اس مبارک ماہ میں عبادت کا ثواب کئی گنا بڑھ جاتا ہے۔

Read more