ہم بھی حسین کو مانتے ہیں، مگر کیا۔۔۔

”ہم بھی حسین کو مانتے ہیں، مگر کیا۔۔۔“جب بارہا اس جملے کو سننتا ہوں تو لگتا کہ ہر دوسرا شخص اپنا تعلق حسین علیہ السلام سے بنانا چاہتا ہے یا بنا رہا ہے۔ میرا ہمیشہ اپنے ایسے مخاطب سے یہی سوال ہوتا ہے کہ ”آپ حسین ابن علی کو کیا مانتے ہو؟“ جواب مختلف ہوتے…

Read more

اشفاق احمد سے عرفان صدیقی تک

اشفاق احمد اپنی ایک کتاب میں لکھتے ہیں کہ اٹلی کے شہر روم میں مقیم تھا تو ایک بار اپنا جرمانہ بروقت ادا نہ کرنے پر مجھے مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش ہونا پڑا۔ جب جج نے مجھ سے پوچھا کہ جرمانے کی ادائیگی میں تاخیر کیوں ہوئی تو میں نے کہا کہ میں ایک…

Read more

میرے کپتان اب ہم گھبرانا شروع ہو گئے ہیں

تبدیلی کی فضا ایسی چلی ہے کہ پناہ بخُدا! سونامی نے اس ملک کے ہر شہری کو اس قدر متاثر کیا کہ عوام کی خاموش چیخیں اور اَن سنی آہیں کانوں میں ارتعاش اس قدر پیدا کر رہی ہیں کہ اب اگر کچھ نہ بن پایا تو ایک طوفان شہر کے اندر سے اٹھے گا۔ جو وزیروں، مشیروں اور بڑے بڑوں کے محلات کی در و دیوار کو ڈھا دیگا۔ چنگاری کو ہوا ملنے لگی ہے، امیدیں دم توڑتی نظرآ رہی ہیں، جون صاحب کا ایک شعر بھی یاد آ رہا ہے
کیوں ہمیں کر دیا گیا مجبور
خود ہی بے اختیار تھے ہم تو

Read more

سگریٹ فروخت کرنے والی عالمی کمپنیاں اور پاکستان

دنیا بھر میں دن بدن سگریٹ پینے والوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے، تمام تر قوانین اور جتن کرنے کے باوجود اسموکنگ پر قابو نہیں پایا جاسکا۔ ایک کش پھر ایک سگریٹ اور پھر بھرا ہوا سگریٹ اور پھر منشیات کی ایک ایسی دنیا کہ گھر اجڑ جاتے ہیں، لوگ مر جاتے ہیں لیکن…

Read more

سات سالہ عمر کا جنسی زیادتی کے بعد قتل

دنیا جب سے معرض وجود میں آئی تب سے ہی کمزور پر طاقتور حملہ آور رہا اور اپنی خواہشات کی تکمیل کے لئے کمزور کو بلی چڑھاتا رہا۔ طاقت کا نشہ انسان سے وہ کچھ کروا دیتا ہے کہ انسان حیوانوں کی صف میں بھی کھڑا ہونے کے قابل نہیں رہتا، اُس پستی تک پہنچ جاتا ہے کہ عام انسان سوچ کر بھی کانپ اٹھتے ہیں، خواہشوں کے اس منہ زور گھوڑے پر سوار ہوکر ناجانے کتنے ہی انسانوں کو حقیر سمجھنے والے کب کس پر حملہ انداز ہوں کوئی نہیں جانتا۔

Read more

مردوں کا منہ چڑھاتا عورت مارچ

آخر کار شدید پڑھی لکھی خواتین پلے کارڈز اٹھا کر چوک چوراہے پر آ ہی گئیں، اور مردوں کے معاشرے نے ان خواتین کی اس حرکت پر اس حد تک تنقید کی کہ 8 مارچ کو ہونے والی مارچ نے سارے پاکستان کو اپنے حصار میں لے لیا، تنقید خواتین پر کم کی گئی اور پلے کارڈز پر زیادہ کی گئی، پلے کارڈز پر درج جملے اس قسم کے تھے کہ ان میں خواتین کے حقوق کی بات تو نہیں تھیں نہ ہی خواتین کی آزادی کی بلکہ صرف بات تک آزاد خواتین کی۔

Read more

میں لفظوں کا دھندا کرتا ہوں تم کس کا دھندا کرتے ہو؟

تم نے میرے کمرے کے بارے میں پوچھا ہے، تم کبھی میرے کمرے میں آکر دیکھو! تمہیں جابجا بکھرے الفاظ ملیں گے، ٹوٹے پھوٹے، شکستہ، بے حال، بے جان، بے بال و پر الفاظ میری شکستگی کی ایسی منظر کشی کر رہے ہوں گے کہ تم دیکھتے ہی دلِ ویران کی شکستگی کی تصویر کا…

Read more

رسول کی بیٹی نمونہ عمل کیوں نہیں؟

ساڑھے 14 سو سال پہلے کی خواتین کیا آج کی خواتین کے لئے نمونہ عمل ہیں؟ سوال تو بنتا ہے اس دور میں جب یہ سب کچھ نا تھا، نہ تو زندگی میں کوئی ایسی چہل پہل تھی نہ ہی دنیا اتنی تیزی سے رواں دواں تھی۔ نہ ایسی چاشنی تھی نہ ایسی روشنی تھی۔ عورتوں کو زندہ درگور کیا جاتا ہے یہ تو خیر سب ہی جانتے ہیں لیکن یہ شاید کم لوگوں کے ذہن میں آتا ہے کہ جب بیٹیوں کو زندہ درگور کیا جاتا تھا تب ایک پیامبر خدا نے بیٹی کے استقبال کے لئے کھڑے ہو ہو کر عوام کو یہ بتایا کہ بیٹی رحمت ہے، اور بیٹی بھی تو ملیکۃ العرب کی تھی، عرب کی سب سے بڑی بزنس وومن۔ امیر ترین ماں اور رحمۃ العالمین کی بیٹی کی زندگی بھی یقینا قابل رشک اور نمونہ عمل ہونی چاہیے، آخر اتنے بڑے خاندان میں پیدا ہونے والی اس خاتون کا ابھی اپنا ہی مقام ٹھہرا۔

Read more

صحافت کا جنازہ ہے ذرا دھوم سے نکلے

صحافت کیا ہے؟ بس یہ عوام تک خبر پہنچانا، خبر کوئی بھی ہو، کسی کی بھی، کہیں کی بھی، کیونکہ خبر تو خبر ہے، اور جب کچھ نا بھی ہو رہا ہو تو یہ بھی ایک خبر ہی ہوتی ہے، آپ نے تو سن رکھا ہے کہ ہر خاموشی کسی طوفان کا پیش خیمہ ہوتی…

Read more

کیا آپ بھی جہیز لیتے ہیں؟ پھر تحریر نا ہی پڑھیں

ہم اور تقریبا ہم سب بلکہ چھوڑئیے، ہم سب کے گھروں کی بات کرتے ہیں۔ ہماری تہذیب و تمدن کے قصے تو خیر پہلے سے ہی سر بازار آ چکے ہیں۔ کبھی غیرت کے نام پر قتل، کہیں بچیوں کو نوچتے خون خوار بھیڑیوں کی شکل میں اسی معاشرے کے نوجوان اور تو اور بچوں…

Read more