میری زندگی میرا اختیار

یہی اس عورت مارچ کا مقصد و متن ہے۔ نا انصافیوں کی ایک فہرست ہے۔ فرسٹ وومن کانفرنس سے مختصر احوال جو ہر عاقل و بالغ کو جاننا چاہیے کہ اس کا ادراک اور تدارک دونوں ناگزیر ہیں۔ اس وومن کانفرنس میں ایک ہاری بچی کے (جو چودہ پندرہ سال) بچے جننے سے لے کر…

Read more

کبھی یوں سوچا

”بیوی تنگدستی میں گزر بسر کررہی تھی شوہر انتہائی ایماندار، کھرا ادمی تھا لیکن ایک نمبر کا کاہل، نکما نکھٹو۔ کھرے پن پر اس کا نکما پن محلے والوں نے کبھی مدنظر نہیں رکھا الٹا تعریفوں کے پل باندھتے کہ بھلا اس سا ایماندار آدمی اس زمانے میں کہاں ملے گا۔ اسی ایمانداری کی بنیاد…

Read more

کاہل نگر کے نکھٹو میاں کی کہانی

”بیوی تنگدستی میں گزر بسر کررہی تھی شوہر انتہائی ایماندار، کھرا ادمی تھا لیکن ایک نمبر کا کاہل، نکما نکھٹو۔ کھرے پن پر اس کا نکما پن محلے والوں نے کبھی مدنظر نہیں رکھا الٹا تعریفوں کے پل باندھتے کہ بھلا اس سا ایماندار آدمی اس زمانے میں کہاں ملے گا۔ اسی ایمانداری کی بنیاد…

Read more

ڈرامہ نگاری اور اتائی لکھنے والے

ڈرامہ نگاری فنون میں سے ایک فن ہے، جو سیکھا سمجھا جاتا ہے۔ ارسطو نے ہزاروں سال پہلے ڈرامہ لکھنے کے اصول، کتاب کی شکل میں واضح کردیئے تھے۔ شاعری کے علاوہ ڈرامہ موجود تھا۔ جو تھیٹر کی شکل میں تھا۔ اگر یہ کہا جائے کہ شاعری، موسیقی و رقص قدیم ڈرامے کے لوازمات تھے…

Read more

زرا سوچئے!! معاشرے میں بچوں پر بڑھتے جرائم کا سدباب

میں سمجھنے سے قاصر ہوں۔ قرآن شریف کو گھروالے، نانی، دادی، دادا یا نانا یا ماں، باپ گھر پر نہیں پڑھا سکتے؟ وہ بچوں کے اسکول کا ہوم ورک کیسے کراتے ہیں؟ گھر میں تربیت کیا معنی رکھتی ہے؟ تربیت کیا ہے؟ کیا والدین کے لئے بچے محض ان کے میاں بیوی ہونے کا ثبوت…

Read more

”مراعات یافتہ چوہے اور بدعنوان مراعات یافتہ“

شاہ دولہ کے چوہوں سے گجرات، پنجاب کے لوگ تو بخوبی واقف ہوں گے۔ (مزارات کے متعلق میرا نظریہ صرف وہی ہے جو اسلام کا ہے یعنی کچی قبر یا مٹی کے علاوہ کچھ نہیں۔ ) تو کچھ نہیں ہونا چاہیے۔ شاہ دولہ کے چوہے کہلائے جانے والے یہ بچے یا بڑے جو مائیکرو سیفلی…

Read more

”اپنے شہر کو حرکت دیں“

بارہویں عالمی اردو کانفرنس کے تیسرے دن ایک بات سنی۔ لب لباب کچھ یوں تھا کہ ”کراچی آرٹ کونسل نے اس بار سارے صوبوں کی زبانوں کی مجالس اردو کانفرنس میں رکھیں کیونکہ کراچی ایک بڑا شہر ہے اسے اردو کے ساتھ دوسری زبانوں کو بھی اس کانفرس کا حصہ بنانا چاہیے“۔ وغیرہ وغیرہ میں…

Read more

ہاکی کو آپ سب بھول چکے ہیں

دل سے نکال چکے ہیں اب اس طرف کوئی پوچھ گچھ ہوتی ہے نہ خبر آتی ہے۔ شائقین کی دلچسپی تو دور کی بات، شائقین موجود ہی نہیں رہے۔ کوئی تذکرہ تک نہیں ہوتا۔ اسکول، کالج یا گلی کوچوں سے بھی ناپید ہے۔ طالبعلم نوجوانوں میں حد درجہ غیر مقبول ہے کہ نہ کوئی ہاکی…

Read more

”آپ کا نام؟ شادی شدہ“ مردوں کے بنائے ادھورے معاشرے پر طنزیہ تحریر

پہلی عورت : آپ کا نام؟ دوسری عورت : شادی شدہ پہلی عورت : میں نے آپ کا نام پوچھا ہے مس۔ دوسری عورت : ارے مس وس نہیں۔ ہم تو مسز ہیں۔ مسز۔ شادی شدہ پہلی عورت : جی مسز۔ آپ کا نام ہی تو پوچھا تھا تاکہ میں آپ کو۔ دوسری عورت :…

Read more

اکیسویں صدی کا پاکستانی معاشرہ اور کڑوا سچ

حقیقت سچائی پر مبنی ہوتی ہے یہ سچائی کبھی بے حد کڑوی ہوتی ہے اور کبھی میٹھی۔ سچ درحقیقت، آگہی اور اس کی روشناسی ہے ( اگر اس میں ذاتی مفاد شامل نہ ہو) ۔ ایک اچھے معاشرے کی تخلیق بھی اسی صورت رکھی جا سکتی ہے جب کہ بھلے برے کا پتہ ہو۔ آنکھ…

Read more