وزیر اعظم کا دورہ امریکہ: پس منظر اور پیش بندی

پاکستان کے وزیر اعظم جناب عمران خان ماہ رواں کے تیسرے ہفتے امریکہ کا سرکاری دورہ کرنے والے ہیں یہ دورہ امریکہ کی دعوت پر کیا جارہا ہے۔ یہ دورہ کئی ایک حوالوں سے اہمیت کا حامل ہے۔ موجودہ امریکی صدر ڈوملڈ ٹرمپ جو ہر حال میں رواں سال دسمبر تک ہر حال میں افغانستان…

Read more

میرے چارہ گر کو نوید ہو!

گذشتہ دنوں فضا میں خان صاحب کی تیسری عقد ریزی پر خطرات منڈلا نے کی خبریں بڑی شدُو مد سے پردہ سیمیں پر نمودار ہوئیں اور ساتھ ہی ان کو حکومت کی روانگی کی بھی صدائیں سرسراہٹ کرتی محسوس کی گئیں۔ چونکہ ان واقعات کی بابت احباب کی نظرین ہر دو کو ابتدا کو ہی…

Read more

مولانا تقی عثمانی پر قاتلانہ حملہ کیوں؟

چند برس قبل پاکستان گیا تو ہمارے ایک دیرینہ دوست نے فون کیا اور خوشخبری دی کہ آج ان کے یہاں حضرت مولانا تقی عثمانی تشریف لا رہے ہیں ملنا چاہو تو آ جاؤ۔ میرے لئے اس سے بڑھ کر اور کیا تھا کہ حضرت کی صحبت میسر ہوتی واضح رہے کہ جب ہم پاکستان…

Read more

انسانیت انسانوں سے پناہ مانگتی ہے

آج صبح نہیں بلکہ رات کے آخری پہر آنکھ کھلی اور غیر سردی طور پر میرا ہاتھ ٹی وی کے ریموٹ پر جا پڑا سی این این پہ نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں ہونے والے اندہناک واقع کی خبر تھی بس اب کیا سونا تھا دل مضطرب ہو گیا اور میرے ذہن میں آج تک ہونے والے دہشت گردی کے واقعات فلم کی طرح چلنے لگے۔ پاکستان میں اگر بم دھماکوں کی آوازیں معصوم انسانوں کی چیخوں میں ڈھل کر انسانیت کا منہ چڑھاتی رہیں وہیں ویسٹ میں ماس مرڈر اور فائیرنگ سپری جیسے واقعات تواتر سے رونما ہوتے رہے اور ہر دو نے مل کر انسانی زندگیوں کا چیونٹیوں اور کیڑوں مکوڑوں سے بھی کم تر سمجھنا اور نظام قدرت و فطرت میں اپنی حد بندیوں کی پرواہ تک نہ کرنا انسانیت کی سب سے بڑی شکست ہے۔

Read more

پاک بھارت امن وقت کی ضرورت

پلوامہ حملے سے پیداُ ہونے والی صورت حال کے بعد پاک بھارت تعلقات جو پہلے ہی سرد مہری کا شکار تھے ان میں جیسے آگ بھڑک اٹھی ہے۔ بھارت نے اس حملے کا تمام تر الزام حسب معمول اور حسب روایت پاکستان پر عائد کیا اور ایسا کرنے میں بھارتی حکومت نے اتنی جلد بازی دکھائی کہ ابھی جائے وقوعہ پر امدادی عملہ بھی نہیں پہنچا تھا۔ یہ بھارت کا ایک پرانہ وتیرہ ہے کہ کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کو پاکستان پر تھوپ دیا جاتا ہے۔پاکستانی حکومت فوری طور پہ اپنا تعاون بڑھانے کا فیصلہ کر لیتی ہے۔پلوامہ واقعہ کے بعد اس مرتبہ بھارت کا رویہ بہت جارحانہ ہے اور مودی سرکار نے خطہ کو جنگ کی دلدل میں پھینکنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ موجودہ مگر بہت ہی کشیدہ سرحدی صورت حال کو ہمیں تین مختلف زاویوں دیکھنا ہو گا۔اوّل جنگ اگر ہوتی ہے تو اس کا دائرہ کس حد تک وسیع ہو سکتا ہے

Read more