تباہ کن دلیری میں مبتلا ناکام سرکاری نظام!

جس دن عمران خان کو کنٹینر پر کھڑا کرتے ہوئے حکومت وقت کے خلاف متحرک کیا گیا، اسی وقت سے پاکستان کی اقتصادیات کا ’ڈاؤن فال‘ شروع ہو گیا تھاجس کی اب بدترین صورتحال درپیش ہے۔ کیاملک میں ماورائے آئین حاکمیت کو یقینی بنانے کی جنگ اتنی ہی ناگزیر تھی کہ اس کے لئے ملکی اقتصادیات کو ہی تباہ کردیا جائے؟ کیا ملک میں سیاسی انتشار پیدا کرتے ہوئے اقتصادی حالت کو بہتر بنایا جا سکتا ہے؟ سیاسی انتشار تو ملک کی بنیادوں کو بارود سے تباہ کرنے کے مترادف ہو سکتا ہے۔ مصنوعی سیاسی نظام اور مصنوعی پھول چاہے کتنے ہی دلکش کیوں نہ ہوں، وہ ملک کو اچھا انتظام، اقتصادی ترقی اور خوشبو نہیں دے سکتے۔ کیا ہمارے بازو شمشیر زن اقتصادی طور پر بھی اتنے مضبوط ہیں کہ وہ یہ سمجھتے ہیں کہ ملک کی اقتصادی ایمر جنسی کے باوجود ملکی دفاع کی صلاحیت متاثر نہیں ہو سکتی؟

Read more

میرے چند روحانی تجربات

سب سے پہلے میں یہ بتا دوں کہ میں توہم پرست، شخصیت پرست یا مذہب کے حوالے سے جنونی یاجذباتی شخص نہیں اور نہ ہی میں اس قسم کی باتوں سے مرعوب ہوتا ہوں۔ میری رائے میں روحانیت ایسی طاقت کا نام ہے جس سے انسان کچھ بھی کر سکتا ہے اور یہ یقین، اعتماد…

Read more

کشمیر کہانی: شیام کول اور عبدالصمد وانی کیسے جدا ہوئے؟

کچھ عرصہ قبل ایک دن معمول کے مطابق فیس بک پہ کشمیر کے سینئر صحافی یوسف جمیل کی ایک پوسٹ دیکھی جس میں وادی کشمیر کے ایک بزرگ صحافی شیام کول کی وفات کی اطلاع دی گئی تھی۔ کچھ یاد سا آیا لیکن یادداشت واضح نہ تھی۔ میں نے یوسف جمیل صاحب کی اسی اطلاع…

Read more

منٹو کا ٹیٹوال کا کتا، داستان مسلسل

اٹھمقام آزاد کشمیر کے ضلع نیلم کا ہیڈ کواٹر ہے جو 1990 کے بعد مسلسل بھارتی فوج کی گولہ باری سے تقریبا مکمل طور پر تباہ ہو گیا تھا۔ اس وقت نیلم ویلی ضلع نہیں بنا تھاتاہم اٹھمقام ہی مظفر آباد کی ایک تحصیل نیلم ویلی کا صدر مقام تھا۔ بھارتی گولہ باری سے تباہ ہونے پر تحصیل ہیڈ کواٹر اٹھمقام سے مظفر آباد کی جانب دس کلومیٹر کے فاصلے پہ واقع کنڈل شاہی منتقل کر دیا گیا۔ وادی نیلم کئی حوالوں سے مشہور ہے جو قدرتی خوبصورتی ”دلنشیں موسم، برفانی ندی نالوں، جھیلوں، پہاڑی میدانوں، جنگلوں کی صورت موجود ہے۔ وادی نیلم کی ڈوگرہ اور ہندوستانی فوج سے آزادی میں گلگت کے کرنل مرزا حسن خان، ان کے ساتھیوں اورچترال سکاؤٹس کا نمایاں کردار ہے۔

Read more

حقیقت ٹی وی” کس کے منصوبے بیان کر رہا ہے؟”

سوشل میڈیا پہ شخصیات کی رائے کے علاوہ مختلف عناصر کی طرف سے پروپیگنڈہ مہم بھی نظر آتی ہے۔ ”یو ٹیوب“ پہ نشر ہونے والے ایسے ہی ایک ویب ٹی وی ”حقیقت“ کی ایک نئی وڈیو رپورٹ دیکھی اور سنی تو ضروری محسوس ہوا کہ اس بارے میں شہریوں کو بتایا جائے کہ مخصوص ”مائینڈ…

Read more

راجہ ہی نہیں، خواجہ بھی گدھ

ماہرین ڈارون کے اس نظرئیے کو تو اہمیت دیتے ہیں کہ انسان بندر کی جدید شکل ہے لیکن ابھی تک کوئی سائینسدان یہ بتانے سے قاصر ہے کہ مزید کئی جانور، پرند، چرند بھی ترقی کرتے ہوئے انسانی اشکال کا روپ دھارنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ جانوروں کی فطرت انسانوں میں ڈھلتے ہوئے عالم انسانیت…

Read more

قصہ ایک بھوکے کو کھانا کھلانے کا

شدیدتر سردی تھی، رات دس، ساڑھے دس بجے میں اپنے گھر سے آدھ فرلانگ دور ایک عزیز کے گھر سے نکلاتھا۔ نکلتے ہی دیکھا کہ ایک شخص چادر لپیٹے مجھ سے پیچھے آ رہا تھا۔ سردی کی شدت کی وجہ سے میرے قدم تیز تھے کہ جلد گھر پہنچ کر ہیٹر کی تپش لے سکوں۔…

Read more

وادی کشمیر میں قدرتی جھیلوں کی تباہی

دنیا کے خوبصورت ترین علاقوں میں وادی کشمیر کو نمایاں حیثیت حاصل ہے۔ پہلی مرتبہ آنے والا کوئی بھی شخص کشمیر کی منفرد حسین وادی کو دیکھ کر مبہوت ہو کربے اختیار قدرت کے اس شاہکار کے عشق میں مبتلا ہو جاتا ہے۔ پیر پنجال اور ہمالیہ کے بلند و بالاپہاڑوں کے درمیان میدانی علاقے کی ہیت میں واقع وادی کشمیر کی لمبائی تقریبا 135 کلومیٹر اورچوڑائی تقریبا 32 کلومیٹر ہے۔ وادی کشمیر کا رقبہ 6.131 مربع میل ہے۔ چشموں، جھیلوں، ندی، نالوں، دریاؤں پر مشتمل وادی کشمیر، جہاں کی مسحور کن، قوت بخش آب و ہوا کسی بھی انسان کو جنت کے نظارے دکھاتی ہے۔یوں تو مقبوضہ کشمیر میں چوبیس معروف جھیلیں موجود ہیں تاہم وادی کشمیر کے میدانی علاقے کی تین جھیلیں سیاحتی حوالے سے خصوصی اہمیت کی حامل ہیں جہاں ہر سال بڑی تعداد میں لوگ سیر کرنے اور قدرت کے شاہکار دیکھنے آتے ہیں۔ ان میں جھیل ڈل کو سرینگر کی خوبصورتی کے حوالے سے مرکزی حیثیت حاصل ہے۔

Read more

نفرتوں میں پلنے والی عالم انسانیت

کیا اس دنیا کے لئے سب سے بڑا خطرہ خود حضرت انسان ہے؟ عالم ارض کے لئے انسان سب سے سنگین خطرے کے طور پر نمایاں ہے۔ دنیا کے قدرتی ماحول کو انسان کی کارستانیوں سے شدید خطرات لاحق ہیں۔ انسان نے دنیا کے قدرتی ماحول کو یوں اپنی ناجائز حرکات کا نشانہ بنایا ہے…

Read more

پاکستان عسکری نہیں، سیاسی کارنامہ ہے

ہر سال کی طرح اس مرتبہ بھی 23 مارچ کو افواج پاکستان کی پریڈ کی تقریب ہو رہی ہے اور میڈیا پر بھی پاکستان کی دفاعی عسکری طاقت کے اظہار کو 23 مارچ کے حوالے سے نشر کیا جا رہا ہے۔ معلوم نہیں کہ قیام پاکستان کے سیاسی عزم کے یوم تجدید کے موقع ملک…

Read more