ہمارا لاک ڈاون اور غربت کا ٹِک ٹِک کرتا کورونا

"ہاں بھئی کیا چل رہا ہے آج کل"؟ اس جملے نے مجھے متوجہ کیا۔ میاں صاحب کال پہ دوستوں سے خوش گپیوں میں مصروف تھے، میں کچن میں کھانا بنا رہی تھی۔ فون پہ ان کی دل چسپ گفتگو سن کر میں کھانا پکاتے ہوئے مسکراتی بھی رہی اور بیگمات کے گلے شکوے سن کر…

Read more

کرونا: فطرت کے دربار میں پہنچے تو سب ایک ہوئے

اندھیرا اور اُجالا دو مختلف حالتوں ہی کا نہیں بلکہ دو مختلف کیفیات کا نام بھی ہے۔ اُجالے کا سفر کسی بھی جان دار کی زندگی میں تب شروع ہوتا ہے، جب وہ ماں کے شکم سے اندھیرے کا ایک طویل سفر طے کر کے دنیا میں آتا ہے، اور پھر یہی سفر اُجالے سے اندھیرے کی جانب سفر کرتے تکیمل پاتا ہے۔ وہ اس دنیا سے رخصت ہو جاتا ہے۔ یوں سمجھیے جیسے اُجالا زندگی اور اندھیرا موت کی علامت ہو، بالکل اسی طرح اچھائی، نیکی یا خیر بھی اُجالے کے مانند ہے۔ جب کہ برائی یا شر کو اندھیرے سے تشبیہہ دینا غلط نہ ہو گا۔ ایسے ہی اُمید اُجالا اور نا اُمیدی گہرا اندھیرا۔ جنت روشنی ہے اور جہنم تاریک گڑھا۔

Read more