مقدمہ گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر ہائی کورٹ کا فیصلہ

گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت اور بنیادی حقوق کی بابت آزاد جموں وکشمیر ہائی کورٹ میں دائر رٹ پٹیشن نمبر 1990 / 61 بعنوان ملک محمد مسکین وغیرہ بنام گورنمنٹ آف پاکستان بذریعہ سیکرٹری کشمیر افیرز اینڈ ناردرن افیرز ڈویژن اسلام آباد وغیرہ تاریخی اہمیت کی حامل ہے چونکہ اس مقدمے نے گلگت بلتستان کی متنازع…

Read more

جموں اینڈ کشمیر Reorganisation Bill 2019 کیا ہے؟

پانچ اگست 2019 کو انڈین سرکار نے اپنے ذیر قبضہ متنازعہ ریاست جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کا اعلان کیا اور گزشتہ دنوں جموں و کشمیر میں ایک نیا قانون نافذ کیا جسے مودی سرکار نے جموں اینڈ کشمیر Reorganisation بل 2019 کا نام دیا۔ یہ نیا قانون کل 103 دفعات پر…

Read more

گلگت بلتستان پر کشمیریوں کا بنیادی دعویٰ کیا ہے؟

یہ ایک تلخ حقیقت ہے کہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق گلگت بلتستان متنازعہ ریاست جموں وکشمیر کا حصہ ہے مگر اس خطے کے عوام کی اکثریت گلگت بلتستان کو ریاست جموں وکشمیر کا حصہ نہیں سمجھتے بلکہ ان کا ماننا ہے کہ گلگت بلتستان ریاست جموں وکشمیر کا حصہ نہیں بلکہ تنازعہ کشمیر…

Read more

گلگت بلتستان: نوآبادیات کا گمنام گوشہ۔ قسط 3۔

یکم نومبر 1947 کو جنگ آزادی گلگت بلتستان کے نتیجے میں یہاں کے باسیوں نے اپنی مدد آپ کے تحت 28 ہزار مربع میل پر مشتمل اپنے اس خوبصورت علاقے کو ڈوگرہ حکومت کی تسلط سے آزاد کرا لیا۔ جنگ آزادی کے نتیجے میں گلگت بلتستان پر 1842 سے مسلط ڈوگرہ حکومت کے تسلط سے…

Read more

گلگت بلتستان : نوآبادیات کا گمنام گوشہ۔ (قسط 2 )۔

تاریخ شاہد ہے کہ گلگت بلتستان کبھی بھی برصغیر کا حصہ نہیں رہا بلکہ قبل از مسیح سے ہی کوہ ہمالیہ، کوہ ہندوکش اور کوہ قراقرم کے دامن میں واقع اس علاقے میں قدیم یونانی شہری ریاستوں کی طرح تاریخ کے مختلف ادوار میں مختلف خودمختار شاہی ریاستیں قائم تھیں۔ مشہور جرمن ماہر علوم بشریات…

Read more

گلگت بلتستان : نوآبادیات کا گمنام گوشہ

کہا جاتا ہے کہ نوآبادیاتی دنیا مخصوص مقاصد کے حصول کو سامنے رکھتے ہوئے پیدا کی گئی دنیا ہوتی ہے، یہ فطری ماحول کی پیداوار نہیں ہے نہ ہی کسی مہذب نظریے کی ارتقاء کا معراجِ ہے بلکہ نوآبادیاتی دنیا ایک ایسی سفاک اور استبدادی دنیا ہوتی ہے جس میں طاقتور قومیں چھوٹی اور کمزور…

Read more

مسئلہ کشمیر اور عالمی عدالت انصاف

گذشتہ دنوں ایک امریکی جریدے نیویارک ٹائمز کو انٹرویو دیتے ہوئے وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر انڈیا کے ساتھ مذاکرات کے دروازے بند ہو چکے ہیں۔ اس بنا پر پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر فیصل نے میڈیا کو بتایا کہ حکومت پاکستان مسئلہ کشمیر کو انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس لے جانے…

Read more

ریاست جموں و کشمیر پر ایک نظر

22 اکتوبر 1947 کی خونی جنگ کے نتیجے میں کشمیر کو تین حصوں میں تقسیم کیا گیا تھا، جن میں انڈین زیر کنٹرول جموں کشمیر اور پاکستان کے زیرِ انتظام آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان شامل ہیں۔ مگر تقسیم کشمیر کے 72 سال بعد پانچ اگست 2019 کو انڈیا نے اپنے زیر کنٹرول جموں کشمیر…

Read more

آرٹیکل 370 کا خاتمے کے بعد کشمیریوں کا مستقبل

انڈیا میں برسراقتدار جماعت بھارتی جنتا پارٹی نے بلاآخر ایک صدارتی حکم نامے کے ذریعے انڈین آئین کے آرٹیکل 370 اور 35۔ اے کو ختم کیا جس سے اس خطے کی جیوسٹرٹجک پوزیشن یکسر تبدیل ہوچکی ہے اور جنوبی ایشیاء میں جنگ کا ماحول پیدا ہوا چکا ہے۔ انڈیا نے جموں وکشمیر کے اہم سرکردہ…

Read more

آرٹیکل 370 کا خاتمے کے بعد کشمیریوں کا مستقبل

انڈیا میں برسراقتدار جماعت بھارتی جنتا پارٹی نے بالآخر ایک صدارتی حکم نامے کے ذریعے انڈین آئین کے آرٹیکل 370 اور 35۔ اے کو ختم کیا جس سے اس خطے کی جیوسٹرٹجک پوزیشن یکسر تبدیل ہوچکی ہے اورجنوبی ایشیاء میں جنگ کا ماحول پیدا ہو چکا ہے۔ انڈیا نے جموں وکشمیر کے اہم سرکردہ سیاسی…

Read more