فرشتہ مومند کا بہیمانہ قتل اور شیاطین

گل نبی مومند کا تعلق خیبرپختونخوا کے علاقے ضلع مومند ہے۔ یہ شریف النفس اور غریب سبزی فروش ایک عرصے سے اپنے اہل وعیال سمیت اسلام آبادمیں کرائے کے گھرمیں رہائش پذیر ہیں۔ دس سالہ فرشتہ مومندجوکہ دوسری جماعت کی طالبہ تھیں، گل نبی مومند کی ایک ننھی گڑیا تھی۔ پندرہ مئی کوجب یہ گڑیا کھیلنے کے لئے گھر سے نکلی تو بدقسمتی سے پھر یہ واپس نہیں آئی۔پوچھ گچھ اوربھاگ دوڑ کے بعد گل نبی جب اپنی گڑیا کوپانے میں ناکام ہوئے توانہوں نے اس واقعے کی ایف آئی آر درج کروانے کے لئے مقامی پولیس تھانے کارخ کیا۔ گل نبی مومندکاشایدیہ خیال تھا کہ اول تو دارالخلافہ اسلام آباد جیسے سیف سٹی میں رہائش اختیار کرنے والوں کے مسائل کم ہوں گے۔ لیکن اس کے باوجود بھی اگرکسی کوکوئی مسئلہ پیش آیا، توپھر ریاست کے چاق چوبند ادارے اور سریع الحرکت حکومت اسے راتوں رات ایڈریس کرنے میں دیر نہیں لگائے گی۔

Read more

حضرت اویس قرنیؓ، مقام و مرتبہ

ویسے تو رسالت مآبۖ کے ساتھ حضرات صحابہ میں سے ہر ایک کی محبت اور عقیدت دیدنی ہوتی تھی۔ لیکن آپۖ کے ساتھ جس تابعی کی فرط محبت پر صحابہ کرام کوبھی رشک آتاتھا، وہ تاریخ میں اویس قرنی کے نام سے مشہور ہیں۔ آپ کاپورانام اویس بن عامراور کنیت ابوعمرو تھا اوریمن کے مشہورعلاقے قرن میں 583 ء کو پیداہوئے۔ رسالت مآب ۖ کامبارک زمانہ پانے کے باوجود اویس قرنی دیدارنبی ۖسے مشرف نہ ہوسکے۔ مورخین اویس قرنی کی اس محرومی کی دو وجوہات بتاتے ہیں۔

Read more

پی ٹی ایم : میرانشاہ اجتماع اورفرحت اللہ بابر کی گواہی

منظورپشتین نے جب بدقسمت پشتونوں کے تحفظ کے تحریک کا آعاز کیا تو مخالفین بھی حرکت میں آئے۔ بہتوں کو اس دبلے پتلے نوجوان اور ان کی ٹیم کے پیچھے ہندوستان کی جاسوس ایجنسی کا ہاتھ نظر آیا اور بے شمار لوگوں کو افغانستان سے اس تحریک کی ڈوریں ہلنے محسوس ہونے لگے۔ یھاں تک…

Read more

ہمارا لیول اور ہماری مسلمانی

” یہ دوسری صدی ہجری کا ابتدائی زمانہ تھا اور عرب معاشرے میں مسلمانوں کے بیچ مسلکی مناظرے ایک عام روایت تھی۔ ایک دن خارجیوں کی ایک جماعت امام ابوحنیفہ کے پاس آئی اور کہا کہ“ مسجد کے دروزے پر دو جنازے ہیں، پہلا جنازہ ایک ایسی عورت کی ہے جو زنا سے حاملہ ہوئی تھی اور بالآخر شرم کے مارے خودکُشی کرکے مرگئی۔جبکہ دوسرا جنازہ ایک مرد کا ہے، جو شراب کا پکا عادی تھا اور شراب پیتے پیتے ان کی موت واقع ہوئی ”۔ امام نے پوچھا کہ ان دونوں کا مذہب کیا تھا؟ کیا یہودی تھے یاعیسائی تھے؟ خارجیوں کا جواب نفی میں تھا۔

Read more

مفتی محمد تقی عثمانی سے بھی دشمنی؟

کراچی کو جس طرح پورے ملک کا معاشی مرکز سمجھا جاتا ہے اسی طرح اس کے دینی اور علمی مرکز ہونے میں بھی دورائے نہیں۔ سہارنپور (ہندوستان) کی سرزمیں کو ایک زمانے میں دارالعلوم دیوبندجیسے دینی ادارے کا شرف حاصل تھا، الحمدﷲ یہی شرف آج کل کراچی کو دارالعلوم کورنگی، جامعہ بنوری ٹاون اور جامعہ…

Read more

نیوزی لینڈ حملہ : شُوٹنگ یا کھلی دہشت گردی

نیوزی لینڈ شہر کرائسٹ چرچ کی مسجدوں میں جمعہ کو ہونے والا فائرنگ حملہ اس ملک کی تاریخ کا سب سے سفاک حملہ تھا۔ اس حملے میں پچاس بے گناہ نمازی پل بھرمیں شہید اور اتنی ہی تعداد میں لوگ زخمی ہوئے۔ خون کی یہ ہولی اس وقت کھیلی گئی جب ڈینزایونیوکی ”النور“ اور لن…

Read more

سیانے پٹھان کہتے ہیں

سیانے پٹھان کہتے ہیں کہ ”ا حمق جب حماقت پر اتر آتا ہے تو مخالف کا اتنا نہیں بگاڑتا جتنا نقصان وہ خود کو پہنچا دیتا ہے“۔ پاکستان دشمنی کے سلسلے میں بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی نے بھی وہی احمقوں والا گیم کھیل کراپنے ملک کی وقعت کا جنازہ نکال دیا۔ پلوامہ حملے کا وجہ…

Read more

پاک بھارت کشیدگی اور مودی

جنگیں دراصل دوصورتوں میں لڑی جاتی ہیں۔ پہلی صورت میں لڑنے والی جنگوں کو ہم ناگزیر صورتحال سے جنم لینے والی جنگیں کہہ سکتے ہیں۔ مثال کے طور پرحالات اضطراری بن جاتے ہیں اوردشمن کے اقدام سے نمٹنے کی خاطر ایک ملک کو چاروناچار جنگ کی آگ میں کھودناپڑتاہے۔ جبکہ دوسری صورت میں لڑنے والی جنگوں کاسبب ناگزیر حالات نہیں ہوتے بلکہ اس کے پیچھے مطلق رعونت اور عیاشی کارفرما ہوتی ہے۔ ایسی جنگوں کی نوبت جب آتی ہے تو پھر طبل جنگ بجانے والے کسی معقول دلیل کوخاطرمیں لاتے ہیں، نہ ہی کسی کی مشاورت کاسہارالیتے ہیں۔پاکستان اور بھارت کے بیچ چھڑنے والی حالیہ جنگ بھی عیاشانہ جنگ کی ایک بین مثال ہے جس کاسہرانریندر مودی حکومت کو جاتا ہے۔ مودی نے ایک عیاشانہ جنگ کی ابتداء تو کردی لیکن وہ یہ بھول گئے تھے کہ آگے چل کر اس کے نتائج تباہی، بربادی اور انسانی جانوں کی ضیاع پر منتج ہو گا۔ نریندرمودی نے ایک غیرمعقول جنگ کا دروازہ تو کھول دیا لیکن ڈیڑھ ارب آبادی کے اس انتہا پسند حکمران کہ یہ معلوم نہیں تھاکہ جوہری ہتھیاروں سے لیس دونوں ملکوں کے درمیان یہ جنگ کسی بھی وقت جوہری ہتھیاروں کی جنگ میں تبدیل ہوسکتی ہے۔

Read more

پاک بھارت کشیدگی: کون جیتا کون ہارا؟

جنگیں دراصل دوصورتوں میں لڑی جاتی ہیں۔ پہلی صورت میں لڑنے والی جنگوں کو ہم ناگزیر صورتحال سے جنم لینے والی جنگیں کہہ سکتے ہیں۔ مثال کے طور پرحالات اضطراری بن جاتے ہیں، دشمن حملہ آور ہو جاتا ہے یوں دشمن کے اقدام سے نمٹنے کی خاطر ایک ملک کو چاروناچار جنگ کی آگ میں…

Read more