رعونت دکھاتے مودی کو اب نظرانداز کر دیں

اپنی صحافتی عمر کی کم از کم دو دہائیاں خارجہ امور کے بارے میں رپورٹنگ میں صرف کرنے کی بدولت بہت اعتماد سے میں یہ دعویٰ کرتا رہا کہ بھارتی انتخابات کے نتائج آجانے کے بعد مودی سرکار بتدریج پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے راستے پر لوٹنا شروع ہوجائے گی۔ جمعرات سے کرغزستان میں شروع ہونے والا شنگھائی کوآپریشن آرگنائزیشن ( ایس سی او ) کا سربراہی اجلاس اس ضمن میں انگریزی محاورے والی کھڑکی کھولنے میں کلیدی کردار ادا کر سکتا ہے۔

Read more

وزیراعظم کے قوم سے خطاب کے دوران ”فریز“ ہوئی ٹی وی سکرینیں

اس کالم کے باقاعدہ قارئین کو بخوبی علم ہے کہ عمران خان صاحب اکثر میری بے رحم تنقید کا نشانہ بنے رہے ہیں۔ میری ان سے مگر کوئی ذاتی عداوت نہیں اور ٹھوس حقیقت یہ بھی ہے کہ وہ اس وقت میرے ملک کے وزیر اعظم ہیں۔ وزیر اعظم کے منصب کا ایک وقار ہوتا ہے۔ اگرچہ اپوزیشن میں رہتے ہوئے عمران خان صاحب بذاتِ خود اس وقار کا تیا پانچہ کرتے رہے۔

وزیر اعظم کا ”قوم سے خطاب“ ایک بہت ہی سنجیدہ واقعہ ہوتا ہے۔ 22 کروڑ آبادی والے پاکستان کا وزیر اعظم اپنی قوم سے خطاب کررہا ہو تو اسلام آباد میں موجود غیر ملکی سفارت کار اس کے ایک ایک لفظ کو بھرپور توجہ سے سننے اور اس کا تجزیہ کرنے کو مجبور ہوتے ہیں۔ ایٹمی قوت کے حامل ملک کے وزیر اعظم اور ان کے رفقاء کے لئے ہمہ وقت یہ حقیقت ذہن میں رکھنا ضروری ہے۔ منگل کی رات عمران حکومت کا پہلا بجٹ قومی اسمبلی میں پیش ہوجانے کے تقریباً 3 گھنٹے بعد ٹی وی سکرینوں پر اچانک ٹکر چلنا شروع ہوگئے کہ وزیر اعظم ”تھوڑی دیر میں“ قوم سے خطاب فرمائیں گے۔

Read more

وزیراعظم کی پیغام نما تقریر

اتوار کی رات بہت دیر سے آنکھ لگی۔ اطمینان سے مگر سو نہیں پایا۔ سرکاری اعلان ہوچکا تھا کہ وزیراعظم پیر کی صبح قوم کو ”اہم پیغام“ دیں گے۔ جی کو دھڑکالگارہا کہ ان کی تقریر براہِ راست سن نہیں پاؤں گا۔ پریشانی نے گہری نیند سے محروم رکھا۔ صبح اٹھتے ہی ٹی وی لگالیا۔

مجھے قوی امید تھی کہ قومی اسمبلی میں بجٹ پیش ہونے سے ایک دن قبل وزیر اعظم بہت تفصیل سے اپنی حکومت کی معاشی ترجیحات کا اعلان کریں گے۔ دیہاڑی دار مزدوروں اور تنخواہ دار طبقے پر مہنگائی کے عذاب میں جو اضافہ ہونا ہے اسے ذہن میں رکھتے ہوئے خلقِ خدا کا حوصلہ بڑھانے کے لئے چند ٹھوس اقدامات کا اعلان بھی کریں گے۔ ایسا ہرگز نہیں ہوا۔ وزیر اعظم کا ”خطاب“ درحقیقت قوم کے نام ایک مختصر پیغام تھا۔ ایسے پیغامات عموماً اشتہاری ادارے لوگوں کو چند اشیائے صرف سے رغبت اجاگرکرنے کے لئے دیا کرتے ہیں۔ سیلز پچ پر مبنی مختصر ترین پیغامات۔

Read more

معروضی حقیقت‘ افواہیں اور شہبازشریف کی واپسی

انسانوں کے ساتھ شاید روزِ ازل سے ایسا ہی ہورہا ہے۔ ڈونلڈ ٹرمپ کے امریکی صدر منتخب ہوجانے کے بعد مگر Post Truth Era کی اصطلاح زبان زدعام ہوئی۔ آسان ترین لفظوں میں اسے سمجھنا ہوتو کہہ سکتے ہیں کہ ایک شے ہوا کرتی ہے -’’معروضی حقیقت‘‘- مثال کے طورپر سورج کو میں دیکھوں یا…

Read more

عید کے موقع پر آپ کو اداس نہیں کرنا چاہتا

یقین مانیں میرے دلِ خوش فہم کو قوی امید تھی کہ تحریک انصاف کی حکومت کے دوران آئی پہلی عید واقعتا ’’دو نہیں ایک پاکستان‘‘ کا پیغام دے گی۔ دریں اثناء ہر وقت کچھ نیا کرنے کو ہمہ وقت بے چین فواد چودھری صاحب نے قمری کیلنڈر بھی ’’ایجاد‘‘ کردیا۔ اس کے مطابق اس بارماہِ…

Read more

شبنم گل، نیکٹا اور ایف اے ٹی ایف

زرتاج گل صاحبہ سے میں کبھی نہیں ملا۔ ان کی ذات، خاندان اورسیاسی تاریخ سے بھی ہرگز آگاہ نہیں۔ ڈیرہ غازی خان کے لغاری خاندان کو مگر خوب جانتا ہوں۔ مرحوم سردار فاروق خان لغاری سے پہلی ملاقات 1982 میں ہوئی تھی۔ اپنے خاندانی اور بیوروکریٹک پس منظر کی وجہ سے وہ روایتی سیاست دانوں…

Read more

’’ذلتوں کے مارے لوگ‘‘

دیدۂ بینا تو نصیب والوں کو ملتا ہے۔ ہر رپورٹر کے لئے مگر ضروری ہے کہ اس کی آنکھ بتدریج جبلی طورپر روزمرہّ زندگی کے معمولات کے ہجوم میں ’’ذراہٹ‘‘ کے ہوئی باتوں کو فوراََ نوٹس میں لائے۔ عمر کا بیشتر حصہ رپورٹنگ کی نذر کیا ہے۔بہت عرصہ یہ مان رہا کہ میری آنکھ مذکورہ…

Read more

فریقین کے لئے تخت یا تختہ کا مقام

ایک سنسنی خیز وڈیو کی رونمائی کی وجہ سے اُٹھا طوفان ابھی پوری طرح تھما ہی نہیں تھا کہ وزیرستان والا واقعہ ہوگیا۔ اس کے بعد چند عزت مآب ججوں کے خلاف ریفرنسز دائر ہونے کی خبر آگئی اور بدھ کے روز بلاول بھٹو زرداری نیب کے دفتر پیش ہونے گئے تو اسلام آباد میں ہنگامہ ہوگیا۔

نظر بظاہر ان تینوں معاملات کا ایک دوسرے سے تعلق نہیں۔ ان تینوں کو مگر ایک ساتھ رکھ کر غور کریں تو گماں ہوتا ہے کہ عمران حکومت بیک وقت کئی محاذ کھول بیٹھی ہے اور یہ سب نیا بجٹ متعارف کروانے سے قبل ہورہا ہے۔

Read more

قصہ تمام ہوا

کمر کی تکلیف کے باعث ان دنوں گاڑی چلانا بہت تکلیف دہ محسوس ہو رہا ہے اور ہفتے میں تین دن سفر میں گزارتا ہوں۔ ذاتی اور پیشہ وارانہ مجبوریوں کی وجہ سے لہٰذا اسلام آباد میں موجود ہوتے ہوئے بھی قومی اسمبلی نہیں جاپاتا۔ نفسیاتی اعتبار سے یہ غیر حاضری میرے لئے بہت تکلیف…

Read more

مودی کی حلف برداری اور ’’آر ایس ایس‘‘ کا دبائو

اطلاع مجھے بہت ہی قابل اعتماد ذرائع سے یہ ملی تھی کہ بھاری اکثریت سے انتخاب جیتنے کے بعد نریندر مودی پاکستان کے وزیراعظم کو اپنی حلف برادری کی تقریب میں بلانا چاہ رہا ہے۔ اسی باعث اس کی حلف برادری کی تقریب کے بارے میں پہلی خبر یہ چلوائی گئی کہ سری لنکا کا…

Read more