علما اور دانشور حضرات سے اپیل

سندھ کے ہندو صدیوں سے یہاں آباد ہیں، خصوصاً شیڈول کاسٹ کے ہندوؤں کو تو سندھ کے مالک کہا جاتا ہے، باقی ذاتیں سید، قریشی، ہاشمی، بلوچ ہجرت کرکے سندھ منتقل ہوئی ہیں یا ان میں سے کنورٹ ہوئی ہیں۔ میرے کافی احباب ہندو ہیں جو روزے بھی رکھتے ہیں اور کچھ کو تو اسماء الحسنی…

Read more

میرا گاؤں، سیاست اور ٹیکنالوجی

یہ ان دنوں کی بات ہے۔ جی ہاں یہ ان دنوں کی بات ہے، جب گاؤں کی نوے فیصد آبادی ان پڑھ تھی اور باقی کے دس فیصد کوئی گریجویٹ نہیں تھے، بس نماز کا طریقہ، اور تھوڑا بہت جمع تفریق کا حساب جانتے تھے۔ جب گھر کچے تھے، اور رشتے مضبوط تھے۔ نہ ریڈیو…

Read more

استاد کا کردار نہ ہو تو مراعات کا مطالبہ کیسا

استاد، معلم معاشرے کا وہ مہذب انسان ہے جس کے کردار اور گفتار سے تہذیب کے پھول جھڑتے ہیں۔معلم کی شان بڑھانے کے لئے آپ صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم نے فرمایامجھے معلم بنا کر بھیجا گیا ہے۔پیارے، استاد وہ تھے جو بے غرضی سے قوم کی خدمت کرتے تھے۔ ان کی نظر قصر شاہی پر نہ تھی وہ کبھی صفہ میں تو کبھی درخت کی چھاؤں کے نیچے بیٹھ کر شاہین بچوں کو پرواز سکھاتے تھے۔

Read more

شکوہ بے جا بھی کرے کوئی تو لازم ہے شعور

پی ٹی ایم والوں کے احتجاج اور کچھ لبرلز کے ایک ہی اعتراض کہ اس ملک میں وردی والے کوئی بھی جرم کریں انہیں جائز ہے، ان کا کوئی بال بیکا نہیں کر سکتا وہ ہر قسم کے احتساب سے مستثنیٰ ہیں وہ کسی کے سامنے جوابدہ نہیں۔ کو باربار سننے کے بعد میں نے…

Read more

تعلیم کی تباہی اور اس کا حل

مرحوم محمد خان جونیجو (سابق وزیر اعظم) وہ انسان تھے جس نے سندھ کی تعلیم کی بربادی کی بنیاد رکھی۔ مرحوم کے دور میں ہر ایرے غیرے کو ماسٹر بنایا گیا، سلیکشن کا کرائٹیریا میٹرک پاس، (وہ بھی جعلی ڈگری) نہ این ٹی ایس کے ذریعے ٹیسٹ اور نا ہی انٹرویو کا جھنجھٹ، امیدوار شام…

Read more

فاطمہ علی کینسر کے ساتھ جنگ میں جان کی بازی ہار گئی

‏سابق اٹارنی جنرل اشتر آوصاف کی بیٹی فاطمہ علی کینسر کے ساتھ جنگ میں جان کی بازی ہار گئی ہیں یہ بین الاقوامی طور پر مشہور شیف تھیں۔ خبر۔ پتا ہے میں نے یہ خبر کیوں شیئر کی؟ سوشل میڈیا پر متحرک رہنے کے لئے؟ نہیں، اس خبر کے نیچے 500 کے قریب کمینٹس پڑھ…

Read more

والیء ریاست مدینہ ثانی سے سندھ کی فریاد

قبلہ والیء ریاست مدینہ سندھ میں اس وقت کینسر کا مرض عام ہو چکا ہے۔ ہر گھر میں آئے روز اس مرض سے قیامت برپا ہوتی ہے۔ چالیس پینتالیس کے بعد تو یہ مرض عام ہے۔ اب اندرون سندھ کے لوگوں کی نارمل لائیف 45 سال تک محدود ہوکر رہ گئی ہے۔ گندا پانی، زہریلا…

Read more

صدر نہ ہی سہی گورنر تو بنا دیں

لیم فقیر درس ہمارے علاقے کے بہلول میاں تھے۔ قبر پرستی کے خلاف تھا کافی بار مار بھی کھائی لیکن اپنے مشن سے پیچھے نہ ہٹا، جہاں بھی جاتا رات کو قبرستان میں جا کر قبروں کی چادریں جلا دیتا تھا۔ ایک بار انہی حرکتوں کی وجہ سے کیس میں پھنسایا گیا، جج کے سامنے پیش کیا گیا جج نے پوچھا اپنے دفاع میں کوئی گواہ پیش کریں گے؟

کہا میرے دو گواہ ہیں ان کو سمن جاری کریں وہ گواہی دیں گے۔
پوچھا نام بتائیں۔
کہا کہ ایک سید عبداللطیف شاہ ولد حبیب شاہ ساکن بھٹ شاہ۔
دوسرا عثمان مروندی ساکن سیہون۔

تو جج کو ریڈر نے بتایا سر یہ بندہ عدلیہ کا مذاق اڑا رہا ہے یہ تو کب کے وفات پاچکے ہیں۔
جج نے کہا فقیر یہ دونوں گواہ وفات پا چکے ہیں کیا گواہی دیں گے۔
علیم نے کہا کہ حضور لوگوں کو بیٹا دے سکتے ہیں لیکن مجھ غریب کے حق میں گواہی نہیں دیں گے؟
جج بھی سیانا بندہ تھا اس نے ہنس کر کہا کہ فقیر کو آزاد کیا جائے۔

Read more

شریف خاندان کا جرم

 پہلے اعلیٰ عدلیہ کے پانچ ججز تمام کیسز کو بالائے طاق رکھ کر صرف پانامہ کیس کو کھنگالتے رہے، کچھ نہ ملا تو پھر جے آئی ٹی کے پانچ ہیرے قوم کے کروڑوں روپے لٹا کر آئے لیکن یہ ثابت نہ کر پائے کہ میاں صاحب نے کک بیک یا کمیشن لی یا من پسند…

Read more

آج کے پاکستانی پوپ

بابا آج ہم نے ہسٹری میں پوپ کے بارے میں پڑھا۔
اچھا بیٹا کچھ مجھے بھی بتائیں پوپ کے بارے میں۔ میں نے سرمد مسعود کی حوصلہ افزائی کرتے پوچھا۔

بابا! پوپ دنیا کا طاقتور ترین شخص تھا، اس سے بادشاہ وزیر سب ڈرتے تھے،
اچھا بیٹا، اور کیا کرتا تھا پوپ۔

بابا پوپ لوگوں سے پیسے لے کر ان کے گناہ معاف کرتا تھا۔ جسے چاہتا اسے پھانسی چڑھا دیتا جسے چاہتا اسے پریسٹ بنا دیتا، اور ایک بار تو اس نے ایک بادشاہ کو تین دن ننگے پاؤں برفیلے پہاڑوں پر چلنے کی بھی سزا سنائی۔ لیکن پھر اس کا زوال آیا اور آج اس کے پاس پاورز نہیں ہیں۔

Read more