ماما اسلم اور مرشد کامل کی تلاش

کچھ روز پہلے میں نے ہمارے دوست سابق تعلقہ ناظم حاجی خدا بخش درس پر ایک مضمون لکھا تھا۔ جس کے بعد کل ایک دیرینہ دوست نے کال کر کے سرزنش کی کہ "یار ہمیں بھول گئے ہم بھی تو آپ کے دوست ہیں۔ دو لفظ ہم پر لکھ لیتے۔" میں نے اپنے دوست سے…

Read more

مولانا فضل الرحمان اور مدارس اصلاحات

پتا نہیں کیوں مولانا فضل الرحمان پاکستان کے سیاسی ڈرامے میں مجھے جے کانت شکرے لگتے تھے، ڈیزل پرمٹ ہو یا ایل ایف او پر ڈیل، کشمیر کمیٹی کی سربراہی ہو یا اسلامی نظریاتی کونسل کی چیئرمین شپ مولانا ہمیشہ پرکشش جاب پر رہے ہیں، شاید مولانا سے میرے اختلاف کی یہی وجہ تھی۔ میں…

Read more

میڈم شازیہ عطا مری اور ووٹ کی عقیدے سے آزادی

سانگھڑ کی سیاست میں انقلاب لانے والی میڈم شازیہ عطا مری صاحبہ۔ میں 92 سے سانگھڑ کی سیاست دیکھتا آرہا ہوں، ہمارا حلقہ اور عزیز آباد کراچی کا حلقہ ناقابل شکست رہے ہیں۔ مخالف پارٹی کے امیدوار فارم ہارنے کے لیے ہی بھراتے تھے، اور ووٹ آرڈر کے ذریعے لئے جاتے تھے۔ دونوں بڑی پارٹیوں…

Read more

چوٹیاریوں ڈیم اور ہماری زوال پذیر سیاحت و ثقافت

سانگھڑ سے کوئی تیس کلومیٹر دور اچھڑو تھر اور مکھی کے جنگلات کے بیچ بنے چوٹیاریوں ڈیم کی سیر کرنے کا اتفاق ہوا۔ ڈیم نے ہزاروں ایکڑ زرعی زمیں کو سیم زدہ کر دیا ہے، وہاں کے مقامی لوگوں کے لئے 58 کلومیٹرز پر مشتمل یہ ڈیم عذاب بن کر آیا ہے۔ ان کے گاؤں،…

Read more

جب لال لال لہرائے گا

کل ننگرپارکر سے منتخب سندھ اسمبلی کے میمبر، مہا کرپٹ، لوٹا ابن لوٹا، سندھ کا سب سے بڑا کنٹریکٹر، FWO سے کارونجھر کی لیز چھڑوا خود تھر کے بے تاج بادشاہ بننے کے خواب دیکھنے والا، عرب شہزادوں کا خاندانی غلام، جناب قاسم سراج سومرو نے خبر بریک کرنے سے پہلے لکھا ”جب سرخ  ہوگا"۔…

Read more

اردو کا جنازہ ہے، ذرا دھوم سے نکلے

 اردو جیسی مہذب زبان کا جب اپنوں کے ہاتھوں ہوا حشر دیکھتا ہوں تو میں 8 جولائی 1972 والے فسادات بھول جاتا ہوں۔ اردو جس نے بڑے بڑے نام پیدا کیے ہیں۔ مرزا غالب لے کر انشاء تک اردو ادباء کی ایک نا ختم ہونے والی تاریخ ہے۔ لکھنوی ادب تو اپنی مثل آپ تھا۔…

Read more

میاں صاحب سے شکوہ و جوابِ شکوہ

میاں صاحب کی بگڑتی ہوئی صحت کی فکر مجھ سمیت ہر پاکستانی کو تھی لیکن اچانک پارٹی کی طرف سے یو ٹرن لیتے ہوئے غیر اعلانیہ یک طرفہ جنگ بندی کرنا۔ مریم نواز صاحبہ کے ٹویٹر اکاؤنٹ کا خاموش ہوجانا۔ مرد آہن خواجہ آصف کی دھواں دھار تقاریر کا دھیما پڑ جانا۔ اسلام آباد آزادی…

Read more

لڑو اپنے حق کے لئے

اُس وقت میری عمر اتنی زیادہ نہ تھی، لڑکا تھا، اور پہلی بار حالات کے جبر سے ٹکر لے رہا تھا۔ گھر کے لیے بجلی کا کنکشن منظور کروانا تھا، ایس ڈی او واپڈا غلام نبی ملک سے ملا انہوں نے حسب دستور ہیڈ کلرک سندر کمار کھتری کی طرف بھیجا، اس نے کہا کہ…

Read more

کارونجھر کی سیر، سہولیات کا فقدان اور تھر پروپیگنڈہ

ننگرپارکر سندھ کا ایک تاریخی مقام ہے جہاں کارونجھر کی چوٹی، بھوڈیسر کی مسجد، جین دھرم کے مندروں سمیت درجنوں تاریخی اور سیاحتی مقامات ہیں۔ لیکن سندھ حکومت نے حسب روایت اس کی ترقی اور سیاحوں کی آسائش کے لیے کوئی خاطر خواہ قدم نہیں اٹھایا ہے۔ صرف ایک ہی ریسٹورنٹ ہے ”روپلو کولہی“ ریسٹورنٹ، جس…

Read more

علما اور دانشور حضرات سے اپیل

سندھ کے ہندو صدیوں سے یہاں آباد ہیں، خصوصاً شیڈول کاسٹ کے ہندوؤں کو تو سندھ کے مالک کہا جاتا ہے، باقی ذاتیں سید، قریشی، ہاشمی، بلوچ ہجرت کرکے سندھ منتقل ہوئی ہیں یا ان میں سے کنورٹ ہوئی ہیں۔ میرے کافی احباب ہندو ہیں جو روزے بھی رکھتے ہیں اور کچھ کو تو اسماء الحسنی…

Read more