ثابت کرو کہ تم وجود رکھتے ہو

فلسفے کا استاد کمرے میں داخل ہوا اور اپنے شاگردوں سے بولا ”آج میرا آخری لیکچر ہے، آج میں تم سے ایک سوال پوچھوں گا، اِس سوال کے جواب سے مجھے اندازہ ہوگا کہ میں نے جو فلسفہ پڑھایا وہ کس حد تک تم لوگوں کوسمجھ آیا۔ “ یہ کہہ کر استاد نے اپنی کرسی اٹھائی اور شاگردوں کے سامنے اسے اُلٹ کر رکھتے ہوئے کہا ”ثابت کرو کہ یہ کرسی وجود نہیں رکھتی! “ شاگردوں نے حیرت سے سوال سنا اور پھر جواب لکھنے میں جُت گئے، البتہ ایک شاگرد نے چند لمحوں میں ہی جواب لکھ کر استاد کے حوالے کر دیا، نتیجہ آیا تو اُس کے نمبر سب سے زیادہ تھے، اُس شاگرد نے جواب میں فقط اتنا لکھا تھا کہ ”کون سی کُرسی! “

Read more

محبوب کو عزت دیں

ویلنٹائن ڈے کے موقع پرایک نوجوان اپنی محبوبہ کے لیے سونے کا کڑا خریدنے جیولر کے پاس گیا، سنار نے پوچھا کیا اِس پر آپ اپنی گرل فرینڈ کا نام کھدونا پسند کریں گے، نوجوان نے ایک لمحے کے لیے سوچا پھر بولا کہ نہیں آ پ اِس پر لکھ دیں ’فقط تمہارے لیے جسے میں سچا پیار کرتا ہوں‘ ۔ سنار یہ سن کر بے حد متاثر ہوا ”صاحب، یہ تو واقعی بہت رومانوی بات ہوئی۔ “ نوجوان نے مسکرا تے ہوئے جواب دیا ”اصل میں یہ رومانس کم اور حقیقت پسندی زیادہ ہے، کل کو اگر میرا بریک اپ ہو گیا تو میں یہ کڑا کسی دوسر ی لڑکی کو دے سکوں گا! “

Read more

کتا ب میلے تو ہیں، پڑھنے والے کہاں ہیں؟ – مکمل کالم

نفسیات کی ایک اصطلاح ہے جسے انگریزی میں  confirmation bias کہتے ہیں، یہ ایک طرح کا مغالطہ ہے جس کے زیر اثر انسان اپنی خواہشات اور اعتقادات کے تحت رائے قائم کرکے اُس پر جم جاتا ہے، ایسا آدمی پہلے سے ہی اپنے دماغ میں کسی نظریے یا تصور کو سچ مان لیتا ہے اور…

Read more

الف کو میں کیا سمجھاؤں!

الف کچھ عرصے سے بے روزگار تھا، ملازمت سے فارغ ہونے کے بعد اسے جو پیسے ملے تھے وہ بھی ختم ہونے والے تھے، اِس مہنگائی میں بغیر تنخواہ کے دو دن نکالنے مشکل ہیں اب تو کئی ماہ ہو چلے تھے، اسی پریشانی کے عالم میں ایک روز وہ میرے پاس آیا اور کہنے لگا کہ میں اس کے لیے کسی نوکری کا بندو بست کروں، میں نے مشورہ دیا کہ تم مشاورت شغلی کا کام کیوں نہیں شروع کر دیتے، اِس پر الف نے غصے سے کہا ”صاحب میں غریب ضرور ہوں مگر بے غیرت نہیں“۔

Read more

ہماری دعائیں قبول کیوں نہیں ہوتیں؟ – مکمل کالم

دنیا کا نقشہ نکالیں اور مشرق وسطی ٰ کا علاقہ دیکھیں، ایک سے بڑھ کر ایک طرم خان مسلمان ملکوں کے نام نظر آئیں گے، مصر، اردن، عمان، لبنان اور نہ جانے کیا کیا، اِن تمام ملکوں کے درمیان ایک دو مرلے کا ملک گھرا ہے، نام ہے اسرائیل، مشکل سے 22 ہزار مربع کلومیٹر…

Read more

ڈاک بنگلے میں گزری ایک شام

فروری کی دھوپ ہو، نیلا آسمان ہو، پنجاب کے کھلیان ہوں، بیچوں بیچ پگڈنڈی ہو، پراٹھوں سے اٹھتا دھواں ہو، کوئی مدھر سا گیت ہواورساتھ میں یار بیلی ہوں تو ایسے میں لگتا ہے جیسے پوری کائنات گنگنا رہی ہو۔ سردیوں میں کم از کم ایک مرتبہ دوستوں کے ساتھ ایسا پروگرام ضرور بنتا ہے،…

Read more

اُمرا کے تعزیتی اِشتہارات

یہ غالباً 60 کی دہائی کا واقعہ ہے، کسی کتاب میں پڑھا تھا، واقعہ کچھ یوں ہے کہ 90 برس کی ایک فرانسیسی بڑھیا کو پیسوں کی ضرورت پڑ گئی۔ اُس کی واحد ملکیت ایک فلیٹ تھا، بڑھیا نے اپنا وہ فلیٹ قسطوں پرایک وکیل کو اِس شرط کے ساتھ بیچ دیا کہ جب تک…

Read more

غرق شدہ سرمائے کا مغالطہ – مکمل کالم

پہلی جنگ عظیم اپنے عروج پر تھی۔ کچھ سمجھ نہیں آ رہی تھی کہ کون سا ملک کس کے خلاف جنگ کر رہا ہے اور کیوں؟ 1915 میں اٹلی بھی اِس جنگ میں کود پڑا، مقصد اپنے کچھ علاقوں کو آسٹریا کے قبضے سے چھڑوانا تھا۔ اطالوی حکومت کا خیال تھا کہ آسٹریا اس کے…

Read more

میرا دماغ، میری مرضی

ہمارے دماغ کے دو حصے ہیں، ایک خود کار اور دوسرا سوچنے سمجھنے والا، یہ حصے دو مختلف طریقوں سے کام کرتے ہیں، دماغ کا خودکار نظام الہامی انداز میں چلتا ہے، یعنی جونہی آپ کو کوئی معاملہ پیش آتا ہے یہ نظام از خود نوٹس لے کر اُس معاملے کی پڑتال کرتاہے اور پھرآناً…

Read more

ہمیں ایسی ”جنت“ نہیں چاہیے

آج سے تقریباً تین سو سال پہلے نظام الملک آصف جاہ نے حیدر آباد ریاست کی بنیاد رکھی اور دکن کے حکمرا ن بنے، ہر بادشاہ کی طرح انہوں نے بھی اپنا قانون بنایا اور ریاست کی فوج کھڑی کی، دکن کے حکمران کی حیثیت سے تمام انتظامی اور عدالتی اختیارات آپ کی ذات میں…

Read more