گلگت بلتستان کے آئینی حقوق کی بجھتی امیدیں

صوبائی وزیر تعمیرات ڈاکٹر محمد اقبال نے نعرہ مستانہ بلند کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ آئندہ گلگت بلتستان میں یکجہتی کشمیر منانے والوں کی ٹانگیں توڑدیں گے۔ وزیر تعمیرات ڈاکٹر محمد اقبال نے صاحب نے اخباری بیانات اور اظہار خیال میں کبھی کنجوسی سے کام نہیں لیا ہے اسی وجہ سے معمول کے بریفنگ کے علاوہ ان کی گفتگو اخبارات میں شہہ سرخیوں کا درجہ پاتی ہیں، اس سے قبل جب مسلم لیگ ن کی وفاق میں حکومت موجود تھی تب وزیرتعمیرات صاحب نے کہا تھا کہ سرتاج عزیز کمیٹی کے نام پر ہمارے تین سال ضائع کرا دیے گئے ہیں اب مزید خیر کی توقع نہیں رکھی جاسکتی ہے۔

Read more

زِبان دینے والی زبانیں خود گونگی نہ ہوجائیں

وفاقی حکومت کی جانب سے ملک بھر میں یکساں نصاب تعلیم رائج کرنے کا اعلان ہوچکا ہے، جس کی وجہ سے نئے بحث مباحثے شروع ہوچکے ہیں، تاہم یکساں نصاب تعلیم طویل المدتی منصوبہ ہے جس کے لئے ابتدائی سطح سے لے کر ہائیرایجوکیشن تک تمام کتب سے لے کر طریق تعلیم پر ازسرنوغور و خوض کیا جاسکتا ہے، یکساں نصاب تعلیم کی جانب قدم اٹھانا وفاقی حکومت کی تعلیم رغبتی اور تعلیم دوست ویژن اور فروغ کی جانب ایک قدم ہے، پانچ سالوں پر محیط حکومت اس دورانیہ میں کس حد تک کامیابی حاصل کرسکتی ہے اس حوالے سے کچھ کہنا قبل از وقت ہے لیکن یہ قدم دیر آید درست آید کے مانند ہے۔

Read more

بلاول بھٹو کا دورہ گلگت بلتستان اور مقامی سیاست

پیپلزپارٹی کے نوجوان قائد بلاول بھٹو زرداری کا چھ دنوں پر محیط طویل دورہ گلگت بلتستان اختتام پذیر ہوگیا، چھ روزہ اس تنظیمی دورے میں بلاول بھٹو زرداری نے گلگت ریجن کے تمام اضلاع کا دورہ کرکے جلسہ عام سے خطاب بھی کیا۔ جبکہ ضلع استور اور بلتستان ریجن کے اضلاع کے بارے میں بتایا…

Read more

بھٹو ازم کی تشکیل نو

پاکستان پیپلزپارٹی نے گلگت بلتستان میں اپنی دھاک بٹھادی، گلگت شاہی پولوگراؤنڈ میں تاریخ ساز جلسہ کرکے مخالف سیاسی جماعتوں کے لئے خطرے کی گھنٹیبجادی ہے، بلامبالغہ کہاجاسکتا ہے کہ پیپلزپارٹی کا جلسہ ماضی کے کسی بھی جلسے سے بڑا تھا، اور شرکاءکا جوش و خروش دیدنی تھا، پیپلزپارٹی کے کارکنوں کو اس بات پر…

Read more

اسلام آباد ائیرپورٹ پر تضحیک اور بلاول بھٹو کا دورہ گلگت

قومی ائیرلائن پی آئی اے کی سروس پر ملک بھر میں تبصرے جاری ہیں، پاکستان کے ایوان بالا کے ہر اجلاس میں پی آئی اے پر بحث شروع ہوتی ہے اور اسی بحث پر اجلاس اختتام پذیر ہوتا ہے۔ گلگت بلتستان کے ساتھ پی آئی اے کاسلوک شروع سے قابل اعتراض رہا ہے، موسم کی…

Read more

تعلیم دوست فورس کمانڈر

میجر جنرل احسان محمود خان حال ہی میں گلگت بلتستان میں فورس کمانڈرتعینات ہوئے ہیں۔ مختصر عرصے میں انہوں نے مختلف تقریبات کا انعقاد کرکے اور شرکت کرکے اپنا پیغام عام کردیا ہے۔ گلگت بلتستان کے سیاسی و سماجی حلقوں نے میجر جنرل احسان محمود خان کے اس مختصر دورانیے میں یہ تبدیلی بھی دیکھی کہ پہلی مرتبہ جنگ آزادی کے غازیوں کو مرکزی تقریب میں بذریعہ ہیلی کاپٹر گلگت لایا گیا۔ یہ ان غازیوں کی قربانیوں کا نعم البدل تو نہیں مگر ان کی قربانیوں کا اعتراف کرنے کے مترادف ہے۔

گزشتہ دنوں فورس کمانڈر ناردرن ایریاز میجرجنرل احسان محمود خان نے گلگت کے صحافیوں کے ساتھ ایک تعارفی نشست رکھی۔ قریباً ایک بجے ایف سی این اے کا مہمان خانہ صحافیوں سے بھرا ہوا تھا۔ میجر جنرل احسان محمود خان نے تمام صحافیوں سے بالمشافہ ملاقات کی اور مختصراً تعارف بھی کرایا۔ غیر رسمی ملاقات میں دوطرفہ معاملات میں گفت وشنید ہوئی۔ صحافیوں کی جانب سے جی بی این ایس کے صدر ایمان شاہ صاحب۔ پریس کلب گلگت کے صدر اقبال عاصی صاحب اور یونین آف جرنلسٹ کے صدر خالد حسین صاحب نے نمائندگی کی اور صحافیوں کودرپیش مسائل و مشکلات سے آگاہ کیا۔ جبکہ فورس کمانڈر کے ساتھ بعض معاملات میں سیکٹر کمانڈر ایس سی او نے معاونت کی۔

Read more

بحران، مراعات، الزامات اور تحقیقات

گلگت بلتستان میں مسلم لیگ ن کی صوبائی حکومت کو تین سال سے زیادہ عرصہ ہوچکا ہے۔ مسلم لیگ ن گزشتہ تین سال وفاقی ن لیگی حکومت کے چھتری تلے ترقیاتی کاموں کو بھرپور انداز میں مکمل کراتی نظر آئی۔ نو ارب کے ترقیاتی بجٹ کے بڑھاکر سترہ ارب تک کردیا گیا۔ متعدد ایسے منصوبے…

Read more

گلگت بلتستان: ٹیکس ایمنسٹی اور گندم سبسڈی کا خاتمہ

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے گلگت بلتستان کا دورہ کیا جس میں سیاسی رہنماﺅں نے ان سے ملاقات کرکے سرتاج عزیز کمیٹی کی سفارشات پر عملدرآمد کرانے کا مطالبہ کیا ۔ صدر مملکت نے سیاسی اور سماجی شخصیات کے اس مطالبے پر کہا کہ میں نے سرتاج عزیز کی سفارشات نہیں پڑھے ہیں، ان…

Read more

گلگت میں چڑیلیت کی تشکیل

دنیا کا ہر نظریہ ایک مخصوص پس منظر میں ا بھرتا ہے اور زبان کے ذریعے اظہار پاتا ہے۔ یہ زبان ہی ہے جس کے ذریعے سے دنیا تو موجوئی تجربات اور اجتماعی فکر کے استعارات کی تشکیل کی جاتی ہے۔ ایک کمزور معاشرے میں یہ رجحان ہوتا ہے کہ غلط عقیدے کی وجہ سے کمزور استعارے کی تشکیل کرتے ہیں۔ گلگت کا معاشرتی ساخت اتنا کمزور ہے کہ اس کے پاس ہمت نہیں کہ اپنے اندر کی تلخ حقیقتوں کو عیاں کریں۔ اس لئے اور حقیقت کو عیاں کرانے کی بجائے اس پر پر دہ ڈالے رکھا ہے۔ اس کے نتیجے میں گلگت میں چڑیلوں کے تصور کی تشکیل کی گئی تاکہ کمزور معاشرتی اقدار اور پدرشاہی روایات کو چھپایا جاسکے اور معاشرے کے مردوں سے منکر خواتین کو قابو کیا جاسکے۔

گلگت میں اس موضوع کو ”چڑیلیت“ تک محدود کردیا گیا ہے کیونکہ چڑیلوں کے پاس نہ ہی جادوئی قوت ہوتی تھی اور نہ ہی جادو ٹونے کا استعمال کرتی تھیں۔ چڑیل کے تصورکی ایک خصوصیت یہ ہے کہ چڑیل کو بنانے میں مرد کا کوئی حیاتیاتی یا جسمانی کردار نہیں ہوتا ہے تاہم مردوں کے چڑیلیت کے تصورکی تشکیل میں اہم کردار ہوتا ہے۔ ایک بوڑھی چڑیل اپنی روحانی (منفی ) خصوصیات کو اپنی بیٹی یا پوتی میں منتقل کرتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ معاشرے میں برائیاں عورت سے جبکہ اچھے اقدار کو مردوں سے منسوبکیے جاتے ہیں۔

Read more

عورت شجر ممنوعہ

ایک ایسے وقت میں جب دنیا کی بڑی بڑی طاقتیں اور ٹکراکے بازی لینے والے مفکرین ففتھ جنریشن جیسی جنگ کی پیشنگوئی کرچکے ہیں، اور باقاعدہ عالمی سطح پر تہذیبوں پر قابو پاتے ہوئے زیر اثر لانے کے عملی اقدامات میں مصروف ہوچکے ہیں، ایسے وقت میں گلگت بلتستان کے ثقافت کے حوالے سے ایک…

Read more