مسلم ریاست جدید کیسے بنے؟

محمود مرزا صاحب مرحوم کی کتاب ”مسلم ریاست جدید کیسے بنے؟ “ اپنے موضوع کے لحاظ سے غیر معمولی توجہ کی مستحق کتاب ہے۔ کتاب مختلف مضامین کا مجموعہ ہے، جس میں مرزا صاحب نے جو نتائجِ فکر پیش کیے ہیں وہ محمود مرزا صاحب کی وسیع المطالعگی، اہل علم سے ہونے والے تبادلہ خیالات…

Read more

پاکستان میں صحافت کی متبادل تاریخ

گزشتہ ہفتے صحافت کے حوالے سے دو شاہکار سامنے آئے۔ ایک وفاقی اردو یونیورسٹی میں شعبہ ابلاغیات کے سابق سربراہ ڈاکٹر توصیف احمد خان کی کتاب ”پاکستان میں صحافت کی متبادل تاریخ“ اور دوسرا پاکستان ٹیلی ویژن کی معروف نیوز کاسٹر مہ پارہ صفدر کے یوٹیوب چینل پر پاکستان ٹیلی ویژن کے سابقہ جنرل منیجر…

Read more

اے نئے سال بتا تجھ میں نیا پن کیا ہے؟

نئے عیسوی سال 2020 ء کا آغاز ہوگیا ہے۔ نئے سال کے آغاز پر ہر طرف جشن منائے جارہے ہیں۔ ٹی وی کے چینل ان تقریبات کی جھلکیاں دکھا رہے ہیں۔ مگر ہمارے سیاسی منظر نامے میں گزشتہ سال کا آخری مہینہ اور خاص کر آخری عشرہ ہنگامہ خیز رہا ہے۔ حکومت اور اداروں کی…

Read more

ہیں کیوں تلخ بندہ مزدور کے حالات؟

ایک خبر کے مطابق فرانس کی ایک عدالت نے ٹیلی کام کمپنی کے تین سابقہ اعلیٰ عہدیداران کو قید اور جرمانے کی سزا سنائی ہے۔ ان پر جرم یہ ثابت ہوا کہ انہوں نے اپنی ملازمتوں کے دوران ادارے میں کام کرنے والے افراد کو ہراساں کیا اور اس حد تک کیا کہ 2008۔ 9…

Read more

اضطرابی سیاست اور بگڑتی معیشت

وطن عزیز کی سیاست اور معیشت کو عجیب سی صورتحال کا سامنا ہے۔ ہماری سیاسی تاریخ اضطراب اور ڈرامے سے عبارت رہی ہے۔ تازہ بے چینی یہ ہے کہ تحریک انصاف حکومت کی معاشی، خارجی اور داخلی معاملات پر ناکامی کے خلاف مولانا فضل الرحمٰن آزادی مارچ اور دھرنے کے لیے یکسو ہیں، پیپلز پارٹی…

Read more

مجھے ہے حکمِ اذاں۔۔۔۔ اور قائد کا خواب

آزادیِ کو تہتر برس کا عرصہ گزر چکا ہے۔ خطہ زمین آزاد ہوا لیکن کیا اس پربسنے والے انسان بھی آزاد ہیں؟ جمہوریت، معاشی و سماجی انصاف، فرد اور اس کی رائے کی آزادی جنھیں ریاست کے بانی نے ریاست کے لازمی اجزاء قرار دیا تھا آج تک مکمل شکل میں نافذ نہیں ہوسکے ہیں۔…

Read more

قانون پر فوری عمل درآمد کی چند مثالیں

قانون کی موٹی موٹی کتابیں جرائم کی سزاؤں کی شقوں سے بھری پڑی ہیں۔ زندگی کا کوئی شعبہ ایسا نہیں جس کے بارے میں قانون موجود نہ ہو لیکن اس پر عمل در آمد کم ہی دیکھنے کو ملتا ہے۔ برسوں پہلے انڈیا کی ایک آرٹ فلم ”کملا“ دیکھنے کا اتفاق ہوا تھا۔ فلم کا…

Read more

حکومت کی انتظامی اور اقتصادی پالیسیوں کے ابہام

حکمت تدبر، فراست اور زمینی حقائق سے آگہی سے محروم جو ٹولہ حکومت کی تہمت لیے اپنے لیے تو جو کررہا ہے سو کررہا ہے اس کی مشقِ سیاست میں وطنِ عزیز کی عوام کے مسائل میں کمی ابھی تک دیکھنے میں نہیں آئی ہے۔ ابہام اور تذبذب کی جو کیفیت حکومت کے انتظامی اور…

Read more

فرخ سہیل گوئندی کی کتاب لوگ در لوگ

فرخ سہیل گوئندی کے بارے میں یہ لکھنا آسان ہوگا کہ وہ کیا نہیں ہیں۔ فرخ سہیل گوئندی ایک کٹر سیاسی نظریاتی کارکن، دانشور، مصنف، کالم نگار، شاعر، سیاح، پبلشر اور ایک نظریاتی شخصیت ہیں۔ فرخ سہیل گوئندی کے کان میں سوشلزم کی اذان بھٹو صاحب نے دی اور وہ اس ازان پر لبیک کہتے…

Read more

فلک نے اُن کو عطا کی ہے خواجگی کہ جنھیں!

آدھی رات کا وقت تھا اسلام آباد کے ایک سرکاری اسپتال میں ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹر صاحب آنکھوں میں نیند کے باوجود اپنے فرائض کی ادائیگی کے لیے موجود تھے۔ اچانک ان کے اسٹاف نے انھیں آکر بتایا کہ ایک مریض ایمرجنسی وارڈ میں لایا گیا ہے۔ ڈاکٹر صاحب اپنے کمرے سے سے وارڈ میں پہنچے تو ہیضے کے باعث بارہ تیرہ سال کا ایک بچہ نیم بے ہوشی کی حالت میں تھا۔ بچے کا باپ بھی حُلیے سے ایک غریب محنت کش لگ رہا تھا۔ ڈاکٹر صاحب نے فوری طور پر علاج شروع کیا اور کچھ دیر بعد بچے کی حالت سنبھلنے لگی۔

Read more