سمندر کے کنارے آباد ایک بستی

سمندر کے کنارے ایک بستی آباد تھی۔ بارشوں کا موسم تھا۔ سمندر اور بستی کی آبادی پر بوندیں ٹپ ٹپ گر رہی تھیں۔ آبادی کا ہر فرد اداس اور کمزور تھا۔ کھانے پینے کا سٹاک ختم ہوچکا تھا۔ کاروبار ٹھپ تھے۔ سب کے سب بھاری قرضوں کا بوجھ اٹھائے پھر رہے تھے۔ یوں کہئے کہ…

Read more

بلوچ قائداعظمؒ کو سونے چاندی میں تولتے تھے

”جب پاکستان قائم ہوچکا تو قائداعظمؒ نے مجھے کراچی بلایا، میں 22 دنوں تک ان کا مہمان رہا۔ اس قیام کے دوران میں قائداعظمؒ نے فرمایا کہ میں اس ملک کا چلانے والا نہیں ہوں۔ وہ کہتے تھے دیکھو خان! میرے عزیز نوجوان! میں اب بوڑھا ہوچکا ہوں، تم آؤ اور میری مدد کرو، اس…

Read more

اِسی لیے امریکہ ایک سپرپاور ہے

جب 9 سیٹوں والے جہاز نے جدید شہر کی فضاؤں کو چیرتے ہوئے آگے بڑھنا شروع کیا تو جہاز کے اندر موجود ٹیلی فون کی گھنٹیاں بجنے لگیں۔  گورنر راڈ بلیگووچ نے اپنے اسسٹنٹ کو ٹیلی فون سننے سے منع کردیا اور جھنجھلائی ہوئی آواز میں بولا کہ میں کسی سے کوئی بات نہیں کروں…

Read more

کرم کے موتی!

آئیے! ایک کہانی پڑھتے ہیں۔ ”ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ امریکہ میں کنٹکی ریاست کی مشرقی پہاڑیوں میں ایک مسلمان امریکی بوڑھا اپنے خاندان کے ساتھ اپنے فارم ہاؤس میں رہتا تھا۔ اُس فارم ہاؤس میں اُس بوڑھے کا ایک پوتا بھی تھا۔ داداجی صبح سویرے اٹھتے اور باورچی خانے کی میز پر بیٹھ…

Read more

بوڑھے ہوتے باپ اور جوان ہوتے بیٹے کے تعلقات

مشرقی کلچر میں گھر سکون، محبت اور احترام کی علامت کہلاتا ہے۔ انہی خوبیوں کی بناء پر گھر کو زمین پر جنت سے تشبیہ دی جاتی ہے۔ مشرقی کلچر کا وہ گھر کئی وجوہات کی بناء پر اب بہت سے مسائل سے دوچار ہے۔ اِن میں سے بعض ایسے ہیں جو تقریباً ہرگھر کا مسئلہ…

Read more

کیا بلاول بھٹو اور مریم نواز کو مِٹھے بابا کا مشورہ مل گیا؟

سیدھے سادے وقتوں میں بڑوں کی ایک معصوم شرارت ہوتی تھی کہ جب انہوں نے کسی دوسرے بڑے کو تنگ کرنا ہوتا یا نیچا دکھانا ہوتا تو وہ یہ کام بچوں سے کرواتے۔ مثلاً بچہ جاکر محفل میں بیٹھے مطلوبہ شخص کی پگڑی کھینچ لیتا یا بازار میں جاتے مطلوبہ شخص کے پیچھے بچے آکر اچانک اتنی زور سے چیختے کہ وہ شخص گھبرا کر پیچھے دیکھتا۔ ایسی حرکتوں کا مقصد ہوتا کہ اپنے مدمقابل شخص کو تمسخر کا نشانہ بنایا جائے۔ اگر مدمقابل شخص بچوں کی تمام شرارتیں خاموشی سے سہتا رہتا تو تمسخر کا نشانہ بنتا جو بچوں کو بھیجنے والوں کا اصل مقصد ہوتا اور اگر مدمقابل شخص بچوں پر دھاڑتا یا انہیں مارتا تو واویلا کیا جاتا کہ یہ کیسا شخص ہے کہ معصوم بچوں کو بھی نہیں بخشتا۔

Read more

15 مئی 1988 کا 15 مئی 2019 ء سے ایک سوال

یہ ٹھیک 31 برس پہلے 15 مئی 1988 ء کا دن تھا جب سوویت یونین کے جدید آرمرڈ پرسونل کیریئرز BTR۔ 80 s نے دریائے آمو پر ہیراتن پُل کراس کرکے واپس ماسکو کی راہ لی۔ افغانستان سے سوویت یونین کی فوجوں کے انخلاء کا یہ پہلا دن تھا اور یہ عمل 9 ماہ بعد 15 فروری 1989 ء کو مکمل ہوا۔ سوویت یونین کی فوجوں کی واپسی کی کمانڈ ”کرنل جنرل بورِس گروموو“ کررہے تھے۔ پاکستان میں سوویت یونین کی فوجوں کی واپسی کی خبر شادیانے بجاکر سنائی گئی کیونکہ 80 ء کی دہائی کے دنوں میں پاکستان کے گلی کوچوں میں ایک ہی نعرہ گونجتا تھا کہ ”کمیونزم کا قبرستان، افغانستان افغانستان“۔

Read more

آندھی باندھنے والے پیر بزرگ اور پاکستان کی طرف بڑھتا طوفان

یہ اُس وقت کے دیہات کی بات ہے جب دیہی زندگی آج کل کے شوریدہ زمانے میں ایک افسانوی کہانی محسوس ہوتی ہے۔ اُس وقت دیہی معاشرہ سکون، محبت، معمولی لڑائی جھگڑوں، صلح صفائی اور احترام وغیرہ کے لٹریری کردار کی طرح تھا۔ ٹھیک اُس وقت کے دیہاتوں میں ایک بات مشہور تھی کہ جب…

Read more

کیا پاکستان پچاس کی سیاست میں واپس چلا جائے گا؟

کچھ لوگ نوجوانی یا طالب علمی کے دوران پاکستان کی سیاست میں آئے اور عروج کے آخری روم تک گئے۔ یہ شاید اتفاق ہے کہ اِن سب کے سفر سیاست، عروج، زوال اور مقامی یا انٹرنیشنل ایجنسیوں سے تعلقات کی داستانیں آپس میں ملتی جلتی ہیں۔ ایسے سیاست دانوں کی مثالوں میں شیخ مجیب الرحمان،…

Read more

ڈاکٹر جمیل جالبی کے ہونے سے ماحول خوشگوار تھا

یہ اُس وقت کی بات ہے جب میں پنجاب یونیورسٹی لاہور میں ایم اے صحافت کا طالب علم تھا۔ ہم مطالعاتی دورے پر کراچی گئے۔ اُن دنوں غیرکراچی والوں کو کراچی جاتے ہوئے بہت سی دعاؤں اور فکرمندیوں کے ساتھ روانہ کیا جاتا تھا۔ اکثر گھر والے کراچی جانے والے عزیزو اقارب کو قرآن پاک…

Read more