آؤ ایک ماہ کے لیے اچھے مسلمان بن جائیں

رمضان کا برکتوں اور رحمتوں بڑا ماہ شروع ہوتے ہی، ہم عابد اور زاہد بن جاتے ہیں۔ جوں ہی ہلال چاند آسماں میں نمودار ہوتا ہے، ہم اپنی عبادتوں میں اضافہ کر دیتے ہیں، اور نیکیاں کمانے کے لیے اچھے اچھے کام کرنا شروع کردیتے ہیں۔ صرف رمضان کی ماہ میں ہمیں یاد آتا ہے کہ، مفلس اور ناداروں کی مدد کریں، غریبوں کو روزہ افطار کرانے کے لیے ان کو کھانے پینے کی اشیاء بِیھجیں۔ سال کے گیارہ مہینے ہم اپنے من مانی میں گذار دیتے ہیں، اور ایک ماہ کی عبادت کے بدلے میں ہم خداوند سے یہ توقع رکھتے ہیں کہ وہ ہمیں بخش دے۔

Read more

زبان کا بار بار پھسلنا ٹھیک نہیں

ملکوں کی جغرافیائی حدود کا تعین کرنا، ان کی اسٹڈی کرنا، اور ان کے بدلتے موسمی حالات کا اندازہ لگانا کسی جغرافیائی اور موسمیاتی ماہر کا کام ہے، جس کا اندازا ایک عام انسان نہیں لگا سکتا۔ جیسا کہ ہر کسی کہ بس کی بات نہیں کہ وہ ہوائی جہاز پر چڑھ کر ساری دنیا…

Read more

کچھ حیات انسان کے بھی تو دام بڑھاؤ

نئے پاکستان کے دعویداروں کی بالاآخر حکومت آ چکی ہے، اور ان کا دیا ہوئا سو دن کا ٹارگٹ بھی کب کا ختم ہوچکا ہے، پر تاحال ایسی کوئی تبدیلی، ایسا کوئی نیا پاکستان نظر سے نہیں گزرا، جو کہ پاکستان تحریک انصاف کے منشور کا حصا ہو۔ جوں ہی حکومت آئی ہے، تو بجائے اس کے حکومت مہنگائی کی کمر توڑتی، اسے زخمی کرتی، خود مہنگائی کا جن بے قابو ہو کر، مفلس و نادار طبقی کی کمر توڑنے پہ تلا ہوئا ہے۔ ہر آئے دن کسی نہ کسی چیز کے نرخ بڑھا دیے جاتے ہیں، جس سے عوام بیچارے بدحال ہیں۔

Read more

جبری تبدیلیٔ مذہب

رینا اور روینا کی خبر جوں ہی وزیراعظم سے لے کر بھارتی وزیر خارجہ ششما سوراج کے کانوں تک پہنچی، تو ملک میں ہر جگہ ہر سوں، یہ بات پھیل گئی کہ سندھ میں ہندو لڑکیوں کے اغوا بعد جبری مذہبی تبدیلیاں ہو رہی ہیں۔ وزیر اطلاعات فواد چودھری سے لے کر مملکتی وزیر برائے داخلا شھریار آفریدی تک، وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ سے لے کر آء جی سندھ کلیم امام تک ہر کسی نہ اس بات کا نوٹیس لیا۔ اور سوشل میڈیا پہ جو اس جبری مذہبی تبدیلی کہ خلاف ٹرینڈ چلے وہ الگ تھے۔پر ان صاحباں کو شاید یہ علم نہ تھا کہ رینا اور روینا وہ پہلی ہندو لڑکیاں نہیں، جن کا جبری طور پہ مذہب بدلا گیا ہے، اور انہیں بلیک میل کر کے شادیاں کروائی گئی، تاہم رضامندی والا بیان رکارڈ کر کے تصویریں بھی شایع کی گئی۔ بات یہاں ختم نہیں ہوئی بلکہ انہوں سے یہ بات بھی زبانی کھلوائی گئی کہ، وہ بیس سال تک کی ہیں، اور اسلامی تعلیمات سے متاثر ہو کہ مسلمان ہوئی ہیں۔ وہ ڈری ڈری اور سہمی سہمی سی دو بہنوں کو اپنے جان کا خوف تو ہوگا ہی، ساتھ ہی اپنے خاندان کے لیے فکرمند بھی ہوں گی۔

Read more

ہولی کے تہوار کے پیچھے کیا کہانی ہے؟

ہر مذہب کے اپنے عقائد کے مطابق کچھ ایسے تہوار ہوتے ہیں، جو بڑی ہی اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔ وھ نہ صرف بڑے جوش و خروش کے ساتھ منائے جاتے ہیں بلکہ ان کے پیچھے ایسے حقائق چھپے ہوتے ہیں، جو کہ نہ صرف ایک مذہب کے پیروکاروں کو، بلکہ عالم انسانیت کو بھی ایک مثبت پیغام دیتے ہیں۔ یہ بات تو واضح ہے کہ، چاہے جو بھی مذہب ہو، وہ بدی کے اوپر نیکی کی فتح کا درس دیتا ہے۔ ہندوؤں کی جانب سے بہار کی موسم کی آمد پر، مارچ میں چاند کی چودھویں کو منائے جانے والا سب سے بڑا ہولی کا تہوار ہے۔

Read more

آٹھ مارچ اور تیزاب حملوں کی شکار خواتین

آج 8 مارچ کو خواتین کا عالمی دن منایا جا رہا ہے، اور جگہ جگہ بڑی تقریریں کی جا رہی ہیں کہ خواتین کو مساوی حقوق دیے جائیں۔ زیادہ تر تقریر کرنے والوں میں وہ مرد حضرات بھی شامل ہیں، جو اپنی اپنے کو بڑا کہلوانے کے لیے خواتین کے گُن تو گاتے ہیں، لیکن…

Read more

شیخ ایاز: شاعری اس کی محبوبہ تھی

2 مارچ کو شیخ ایاز کا جنم دن ہے۔ شاہ عبدالطیف بھٹائی کے بعد شیخ ایاز سب سے بڑا شاعر مانا جاتا ہے۔ ﺍﮔﺮ شیخ ایاز ﮐﻮ ﺟﺪﯾﺪ ﺳﻨﺪﮬﯽ ﺍﺩﺏ ﮐﮯ ﺑﺎﻧﯿﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺷﻤﺎﺭ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﺑﮯﺟﺎ ﻧﮧ ﮨﻮ ﮔﺎ۔ شیخ ایاز نے اپنی قلم اور ذہنی شعور کی وجہ سے بڑا نام کمایا۔…

Read more

سعودی عرب حقوق نسواں کا حامی ہوتا جا رہا ہے

سعودی عرب ایک ایسا ملک ہے، جو خواتین کے حقوق کی خلاف ورزی کے نام سے زیادہ جانا جاتا ہے۔ ایک وقت تھا جب عرب خواتین کو شادی، جائداد، ملازمت سمیت بہت سے حقوق سے محروم رکھا جاتا تھا۔

2016 ع کی ورلڈ اکنامک فورم کی طرف سے گلوبل جینڈر گیپ سروی کی رپورٹ مطابق، سعودی میں جنسی عدم مساوات خطرناک حد تک دیکھنے میں آئی۔ 144 ممالک کی سروی میں سے سعودی 142 نمبر پر آیا۔ پر پچھلے کچھ سالوں میں حالات تبدیل ہوتے نظر آ رہے ہیں۔ خاص کر کے پچھلا سال خواتین کے لیے بڑا ہی خوشنصیب ثابت ہوئا ہے۔ سال 2013 کو ﺳﻌﻮﺩﯼ ﻋﺮﺏ ﮐﯽ ﭘﮩﻠﯽ ﺧﺎﺗﻮﻥ ﺣﯿﻔﮧ ﻓﻠﻢ ﺳﺎﺯ بنی، جس نے اپنی ایک مختصر فلم ”واجدہ“ کو ﺍﺑﻮﻇﮩﺒﯽ ﻣﯿﮟ ﮨﻮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺍﯾﮏ ﻣﻘﺎﺑﻠﮧ ﻣﯿﮟ ﺑﮭﯿﺠﺎ، جس کو دنیا بھر نے سراہا۔

Read more

پاکستان کو پولیس اسٹیٹ نہ بننے دیا جائے

چھ فروری کو سوشل میڈیا، ٹوئٹر اور فیس بک پہ ایک ویڈیو وائرل ہوگئے، جس میں ایک داڑھی والا بندا ایک نوجوان کو سیدھی گولیاں مار رہا تھا، ساتھ ہی کھڑے پولیس اہلکار تماشا دیکھنے میں مصروف تھے۔ خون سے لت پت وہ نوجوان اپنی زندگی کی بھیک مانگتے ہوئے فریاد کر رہا تھا کہ،…

Read more

مرد ہر عمر میں عورت کا محتاج ہے، پھر یہ ظلم و جبر کیوں؟

مرد کو ساری زندگی عورت کی ہی ضرورت پڑتی ہے، چاہے وہ کس روپ میں بھی ہو۔ عورت کا ہر روپ اس کی لئے بے مثال اور بے لوث ہے۔ کسی نے سچ ہی کہا ہے کہ، مرد شاندار عمارت تو بنا سکتا ہے، لیکن اسے گھر ایک عورت ہی آکر بناتی ہے۔

جب ایک بچہ جنم لیتا ہے تو اس کو صرف اور صرف ماں کی ضرورت پڑتی ہے، (جو ایک عورت ہی ہے ) ۔ باپ بھلے کام کاج کے سلسلے میں کہیں دور چلا جائے تو بھی پرواہ نہیں، پر ماں سے چھوٹا بچہ ایک لمحہ بھی دور نہیں رہہ پاتا۔ اس نونہال بچے کو ساری دنیا میں صرف ایک ماں سے ہی زیادہ پیار ہوتا ہے، اور اگر وہ دو منٹ بھی کہیں گم ہوجائے، بچہ سسک سسک کے رونے لگتا ہے اور کسی اور قریبی رشتیدار کے پاس چپ نہیں ہوتا، جب تک اسے ماں کی گود نہ مل جائے۔

Read more
––>