ارطغرل سے عقیدت اور عثمانی سلطنت کا دوسرا چہرہ

برصغیر میں ترک ڈرامے ارطغرل کی مقبولیت دیکھ کر یاد آیا کہ عثمانی سلطنت سے ہماری محبت کوئی نئی بات تھوڑی ہے۔ اس سلطنت (جسے خلافت بھی کہا جاتا ہے ) کو بچائے رکھنے کی کوشش میں اپنے کئی بزرگوں نے خوب جان کھپائی ہے۔ جس وقت ہم پر انگریزوں کا قبضہ تھا اور عوام…

Read more

یوم مادر: امی کی کچھ باتیں

وہ آج سے 14 برس پہلے کی ایک گرم دوپہر تھی جب میں تعلیم کی غرض سے گاؤں چھوڑ کر دہلی کے لئے روانہ ہوا۔ بابا مجھے چھوڑنے کے لئے ساتھ آ رہے تھے۔ دو بھائیوں میں سے ایک بیرون ملک تھے اور دوسرے دہلی میں ہی ملازم تھے اس لئے مجھے رخصت کرنے کا ذمہ امی اور دو بہنوں پر تھا۔ صبح سے ہی دونوں بہنیں اور امی میرے سفر کی تیاریوں میں لگ گئے۔ بابا میرے لئے ضرورت کی چیزیں خرید لائے تھے جنہیں امی میرے لئے تیار کیے گئے بڑے سے بیگ میں رکھ رہی تھیں۔

Read more

جواد نقوی کا اعتدال اور شیعی جذبات کا ابال

آپ میں سے بہتوں کی طرح میں نے بھی یہ شعر کئی بار سنا تھا:
زاہد تنگ نظر نے مجھے کافر جانا
اور کافر یہ سمجھتا ہے مسلمان ہوں میں

مذہبی حلقوں میں یہ شعر علامہ جواد نقوی پر ایک دم فٹ بیٹھتا ہے۔ ان کی شیعی وضع قطع کے سبب دیگر مکاتب فکر میں ان کی شناخت شیعہ عالم کے طور پر ہی ہے لیکن شیعوں کا ایک حصہ ہے کہ انہیں اپنا ماننا تو دور غیروں کی صفوں کا ایجنٹ سمجھتا ہے۔ تو آخر جواد نقوی نے کیا کیا ہے؟

Read more

مذہبی معاملات میں جذباتی باتیں کیوں ہوتی ہیں؟

مان لیجیے کہ میں اور آپ کسی بات پر بحث کر رہے ہیں۔ آپ کا موقف ہے کہ ہرن زمین پر چلتا ہے اور میرا کہنا ہے کہ وہ ہوا میں پرواز کرتا ہے۔ اب اس بحث کو کرنے کی تین صورتیں ہیں۔ پہلی یہ کہ ہم دونوں کے دلائل کی بنیاد منطقی ہو۔ دوسری…

Read more

عرفان خان: بندہ خدا بننا چاہتا ہے

اپنے کسی پچھلے مضمون میں اس طالب علم نے سوال اٹھایا تھا کہ ہم لوگ اللہ کو آزمانے پر کیوں تلے ہوئے ہیں؟ اس وقت یہ بات اس پس منظر میں عرض کی گئی تھی کہ بہت سے دیندار کورونا وائرس کے خطرے کے باوجود مساجد میں نماز ادا کرنے کی ضد فرما رہے تھے۔…

Read more

کورونا انسانوں کو سلام کرتا ہے

اس کرہ ارض پر انسان کی تاریخ دائمی جد و جہد کی رہی ہے۔ یہ عالم رنگ و بو جس نے نہ جانے کتنے جانداروں کو صفحہ ہستی سے فنا ہو جاتے دیکھا، اس بات پر حیران ہے کہ پانچ۔ سات فٹ کا یہ انسان نامی دوپایہ اپنے وجود کو درپیش کتنے ہی خطرات سے ٹکراتا ہوا آج تک فنا سے محفوظ ہے۔ کیسی حیرت ہے کہ بقائے وجود کی جو جنگ ڈائنوسار جیسے عظیم الجثہ جاندار تک نہ جیت پائے اس میں حضرت انسان ہمیشہ کامیاب ٹھہرا۔ کبھی غور فرمایا کیسے؟

Read more

کورونا عذاب، آزمائش یا خدائی تنبیہ کیوں نہیں ہے؟

بھائی لوگ اصرار کر رہے تھے کہ کورونا کو اللہ کا عذاب مان لو۔ میں نے عرض کیا کہ یہ طبی بحران ہے۔ فرمانے لگے چلو اللہ کی طرف سے اپنے بندوں کو تنبیہ ہی مان لو۔ میں نے پھر وہی عرض کیا کہ یہ ایک طبی بحران ہے۔ پھر اصرار ہوا کہ چلو یہ…

Read more

ہم اللہ کو کیوں آزمانا چاہتے ہیں؟

روایات میں آیا ہے کہ ایک بار شیطان نے حضرت عیسی سے کہا کہ 'تمہیں تو اپنے اللہ پر اتنا بھروسہ ہے تو پھر تم وہ سامنے جو اونچا سا پہاڑ ہے اس پر سے چھلانگ کیوں نہیں لگا دیتے؟ اللہ تمہیں بچا لے گا۔' حضرت عیسی نے شیطان کو جواب دیا کہ 'دور ہو…

Read more

کورونا وائرس: مشہور مسلمان علما کے ارشادات

2018 کا آخری دن تھا اور دنیا 2019 کا سورج نکلنے کی مشتاق تھی۔ مولانا طارق جمیل کنیڈا کے تبلیغی سفر سے پلٹے ہی تھے کہ سینے میں تکلیف محسوس ہوئی۔ احباب فوری طور پر لاہور کے جوہر ٹاؤن میں واقع ایک نجی اسپتال میں لے کر بھاگے۔ ڈاکٹروں نے تشخیص کی کہ دل کو…

Read more

کیا کورونا وائرس اللہ کا عذاب ہے؟

دارالعلوم دیوبند سے شائع ہونے والے رسالے ماہنامہ دارالعلوم کے ستمبر 2016 کے شمارے میں مولانا محمد شفیق الرحمان علوی صاحب کا مضمون ’گناہ۔ پریشانیوں کا سبب‘ عنوان سے شائع ہوا ہے۔ مضمون کا ایک پیراگراف ملاحظہ ہو:

”ہر آدمی جانتا ہے کہ ہراچھے یا بُرے عمل کا رد عمل ضرور ہوتاہے، دنیا میں پیش آنے والے حالات پر سب سے زیادہ اثر انداز ہونے والی چیز انسان کے اچھے یا بُرے اعمال ہیں جن کا براہِ راست تعلق اللہ تعالیٰ کی خوشنودی اور ناراضی سے ہے۔ کسی واقعہ اور حادثہ کے طبعی اسباب جنہیں ہم دیکھتے، سُنتے اور محسوس کرتے ہیں، وہ کسی اچھے یا برے واقعہ کے لیے محض ظاہری سبب کے درجہ میں ہیں۔ سادہ لوح لوگ حوادث وآفات کو صرف طبعی اورظاہری اسباب سے جوڑتے اورپھراِسی اعتبار سے اُن حوادث سے بچاؤ کی تدابیر کرتے ہیں۔

Read more