باوا جی کا لنگر اور نذیر نمبردار کی مرغی

میرے ابا جی ”صوفی صغیر حسین صاحب“ بتاتے ہیں کہ ”بیٹا جس دن ہمارے پیرومرشد ہمارے گھر پہلی بار تشریف لائے اس دن تیری عمر پانچ دن تھی۔ ہم بہت غریب لوگ تھے۔ ہماری کچی جھونپڑی ہوتی تھی ریت کے ایک سرکاری ٹیلے پر بنا چاردیواری کے ہمارا کچا گھر تھا۔ چاروں طرف ریگستان تھا۔…

Read more

سپاہی تو ماتھے کا جھومر ہوتے ہیں

ذرا تصور کریں آپ کا نوجوان بیٹا جسے آپ خود گھر سے تیار کرکے اس کے اچھے مستقبل کے لیے ڈیوٹی پر بھیجتے ہیں اور شام کو زندہ سلامت واپس آنے کی بجائے سبزاور سفید جھنڈے میں لپٹی ہوئی آپ کو اس کی کٹی پھٹی مسخ شدہ جلی ہوئی ایسی لاش ملتی ہے جسے پہچاننا…

Read more

امرود کا کیڑا اور اقبال کا کوٹ

میں اپنے دوست پُھلی سے ملنے گیا۔ پھلی مجھے کہنے لگا ”باباجی“ ”بازارمیں امرود بہت اچھے ہیں آج کیا خیال ہے امرود ہوجائیں“ میں نے موبائل سکرین پہ ٹائم دیکھا۔ بچوں کو چھٹی ہونے میں آدھا گھنٹہ باقی تھا۔ میں نے پنجابی میں کہا۔ منگوا لو جناب۔ اس نے اپنے نوکر کو بھیج کر امرود…

Read more

بابا بولا کی طاقت کا سرچشمہ اور فرعونوں کی سونے سے محبت

اللہ بخشے بابا بولا ایک حکیم تھا۔ اس کا نام برکت علی تھا۔ اپنی ہی کسی تیار کردہ معجون کے استعمال سے وہ سماعت سے محروم ہو گیا تھا اس لیے اب بابا بولا کے نام سے مشہور تھا۔ اس کے پاس بوسیدہ سے پھٹے پرانے کپڑے کی ایک گتھلی ہوتی۔ جس میں جڑی بوٹیاں،…

Read more

شیرنی کا دودھ اور ڈرپوک کی موت

میرا دوست تملی ہمیشہ میرے ساتھ ناراض رہتا ہے۔ مجھے کہتا ہے باباجی أپ کا کچھ نہیں ہوسکتا۔ پچھلے چار سال سے أپ کے ہاتھ میں یہی گھسا پٹا پرانے دور کا موبائل دیکھ کر میں سوچتا ہوں أج کے جدید دور میں أپ زندہ کیسے ہو۔ جہاں جاتے ہو جہاں بیٹھتے ہو سب سے…

Read more

تسمے اور جرابیں

چھیرا پنجاب پولیس میں سپاہی تھا لیکن کم تنخواہ اوراخراجات زیادہ ہونے کی وجہ سے پارٹ ٹائم آٹورکشہ چلایا کرتا تھا۔ جب سے اس کی شادی ہوئی ضروریات زندگی روز بروز کسی پیٹو کے پیٹ کی طرح بڑھتے ہی جارہے تھے۔ ان ضروریات کو پورا کرنے کے لیے آٹھ گھنٹے سرکاری ڈیوٹی کے ساتھ دس…

Read more

سپاہی کا وصیت نامہ

جب تک نہ جلیں دیپ شہیدوں کے لہو سے کہتے ہیں کہ جنت میں چراغاں نہیں ہوتا۔ پیار ی زوجہ محترمہ ”پاگھی“ میں آ ج آپ سے اپنے دل کی بات کہنے جا رہا ہوں مگر وعدہ کرو آپ میری وصیت پڑھ  کے نہ تو پریشان ہوں گی اور نہ ہی دکھی، میرے وطن عزیز…

Read more

انوکھی ایف آئی آر

سردیوں کی دلفریب دوپہر تھی۔ رشید اے ایس آئی اس دن تھانہ میں ڈیوٹی آفیسر تھا۔ رشید اپنے تھانہ کے صحن میں دفتر لگائے دو پارٹیوں کے بیانات قلمبند کرنے میں مصروف تھا۔ یہ ایک محلے میں سیوریج کے پانی کی نکاسی کا جھگڑا تھا۔ دونوں پارٹیوں کے مشتعل افراد اٹھ اٹھ کر ہاتھوں کے…

Read more

بے غیرت صغری یا قاسم؟

قاسم جوانی کی دہلیز پہ قدم رکھ رہا تھا۔ اب قاسم کے ابا اکثر قاسم کو ڈانٹ کرکہتے کہ وہ اب شلوار بنیان پہن کر گلی میں مت نکلا کرے گھر میں بھی قمیض پہن کر رہا کرے۔  قاسم کی داڑھی اور مونچھ کے بال بھورے سے کالے ہونا شروع ہوگئے تھے۔  قاسم کی روٹین…

Read more

دھرنا ڈیوٹی، پولیس اہل کار اور بیگار میں بندھے ٹرک ڈراٸیور

میں روٹین ڈیوٹی کے لیے تیاری کر رہا تھا جب ڈیوٹی محرر کی کال أئی۔ وہ کہہ رہا تھا بابا جی ڈیوٹی پہ مت أنا صبح أپ دھرنا ڈیوٹی کے لیے جا رہے ہیں۔ میں نے یونیفارم اتارا اور اپنی ادھوری کتاب "اقبال کامل" جو کافی دن سے تھوڑی تھوڑی پڑھ رہاتھا اور پوری نہیں…

Read more