تم پرچم لہرانا ساتھی، میں بربط پر گاؤں گا

سال گزشتہ کے وسط میں جب جنرل باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کاتحریری اعلان کیا گیا تو کسی قابل تذکرہ سیاسی رہنماء، پارٹی یا مفاد عامہ سے متعلق گروہ کی جانب سے اعتراض یا احتجاج کا حرف سننے میں نہیں آیا تھا۔ حتیٰ کہ مولانا فضل الرحمن جو کہ اُن دنوں ہمہ وقت عالم…

Read more

لانگ لیو، سیونٹی سیکنڈ پی ایم اے لانگ کورس!

فوجی میسوں کے اندر تقریبات، بالخصوص عشائیے، متانت ووقاراور نظم وترتیب کا دلکش مگر تکلف بھرا امتزاج ہوتی ہیں۔ ڈنر نائٹس (Dinner Nights) قدیم آداب و روایات کے تحت برپا کی جاتی ہیں۔ پاکستان ملٹری اکیڈمی میں آمد کے پہلے ہی روز ’زیرو کٹ‘ حجامت کے علاوہ نووارد کیڈٹس کو جن آفات سے فوری واسطہ…

Read more

جنسی تشدد اور آزادیٔ صحافت، دو الگ الگ معاملات ہیں!

پاکستان کے باصلاحیت فلم ساز جامی آزاد نے ملک کے سب سے طاقت ور میڈیا ہاؤس کے مالک پر سنگین الزام عائد کرتے ہوئے بظاہر اپنا کیریئر داؤ پر لگادیا ہے۔ جامی 1998 ء میں امریکہ سے فلم سازی میں اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے بعد وطن واپس لوٹے۔ مستقبل پر نظریں جمائے نوخیزتخلیق کارکوایک…

Read more

قرونِ وسطٰی میں جینے والا قبائلی معاشرہ!

ڈی جی آئی ایس پی آر نے تفصیلی فیصلہ جاری ہونے کے بعد ایک پریس کانفرنس میں ادارے کے خلاف جاری منظم مہم، اس کے پیچھے کارفرما بیرونی و اندرونی قوتوں، اور ان قوتوں کے مقامی آلہ کاروں سے مکمل آگاہی رکھنے کا دعوٰی کیا ہے۔ اسی شام حکومتی زعماء نے اداروں کے مابین تصادم…

Read more

 ماہرِ معیشت عاطف میاں کو ایک ’غیر معاشی‘ مشورہ!

عاطف میاں نامی ایک ماہرِ معاشیات کا مضمون نیویارک ٹائمز میں چھپا ہے۔ فاضل مضمون نگار موجودہ حکومت کی طرف سے منتخب کردہ ان ماہرین میں شامل تھے کہ جنہوں نے ہمیں در پیش معاشی مشکلات سے نکلنے کے لئے اپنی ماہرانہ آراء سے فیض یاب کرنا تھا۔ تاہم ہم نے موصوف کے انتخاب کو…

Read more

’ انصاف کے سیکٹر‘ کوبھی غیر سیاسی ہونا چاہیے!

انگریزی اخبار نے سرخی جمائی۔ ”سپریم کورٹ کی تاریخی جنگ کے لیے تیاری“۔ ملک میں ہیجانی کیفیت طاری تھی تودوروز تک معرکے کی ولولہ انگیزرپورٹیں اور آتشیں مضامین اخبارات کی زینت بنتے رہے۔ مخصوص ٹی وی چینلز کی تو جیسے چاندی ہو گئی ہو۔ ایک طرف سپریم کورٹ تو دوسری طرف اسلام آباد ہائی کورٹ…

Read more

ایک ہی سوراخ سے ڈسے جانے کا لطف

مولانا فضل الرحمن کا دھرنا جاری ہے، مجھے اس سے کوئی غرض نہیں کہ وہ دھرنے کے مقاصد حاصل کرپائیں گے یا کہ نہیں۔ میں اس بحث میں بھی الجھنے کوتیار نہیں کہ دھرنے کے احداف کی قانونی، اخلاقی اور سیاسی حیثیت کیا ہے۔ مجھے یہ جاننے میں کوئی دلچسپی نہیں کہ موجودہ دھرنا 2014…

Read more

ایک اور ’لشکر‘ کا سامنا تھا منیر مجھ کو!

7 مارچ 1977 ء کی شام پھیلتے اندھیرے میں ہمارے گھر کے پاس والے پولنگ سٹیشن پر انتخابی نتیجے کا اعلان ہوا تو خرم دستگیر کے والد خان غلام دستگیر خان، پی این اے کی ٹکٹ پر فاتح قرار پائے۔ نتیجہ سنتے ہی ایک منڈھی مونچھوں اور لمبی داڑھی والا شخص بازو فضا میں لہرا…

Read more

دھرنے کا منظر: دھرنے کے بعد کیا ہو گا

اس امر میں کوئی شک نہیں کہ جہاں عمران خان کے رومانس میں مبتلا، اب بھی ان سے امیدیں وابستہ کئے پاکستانی بے شمار ہیں، تو وہیں ان سے بے پناہ نفرت کرنے والوں کی بھی کمی نہیں۔ ہر دوگروہوں کے رویے بظاہر عمران خان کی شخصیت، مگر درحقیقت کچھ دیگر عوامل کی بنا پر…

Read more

اکتوبر 2005ء… نورخان ایئر بیس سے

چودہ سال قبل ماہ رمضان کے ابتدائی دنوں میں آٹھ بجکر پچاس منٹ پر زمین تھرتھرائی تو سحری کے بعد کی گہری نیند میں ڈوبے لاکھوں پاکستانیوں کی طرح ہم بھی ہڑ بڑا کر اٹھ بیٹھے۔ میں نے پہلو میں پڑی دو سالہ بیٹی کو بازوؤں میں لپیٹا اور سوتے جاگتے میں مکان سے باہر…

Read more