گنے کی فصل اور یونیورسٹی آف ایجوکیشن لیہ – پنبہ کجا کجا نہم

سب وعدے دعوے تبدیلی حکومت کے دھرے کے دھرے یوں رہ گئے ہیں کہ کاشتکاروں کو گنا کی فروخت میں دھکے کھانے کو مل رہے ہیں، کہانی یہاں تک پہنچ گئی ہے کہ نومبر کے بعد دسمبر گزرا اور اب تو جنوری آچکا ہے بلکہ گزرتا جا رہا ہے لیکن ابھی تک گنا کی خریداری…

Read more

سب بدلا لیکن تھل کب بدلے گا؟

کہانی جہاں سے چلی تھی، قیام پاکستان کو 72 سال گزرنے کے باوجود بھی معاملہ گھوم پھرکر وہیں کھڑا ہے۔ وقت بدلا، حکمران بدلے، چہرے بدلے اور فوجی اور جمہوری حکمران بھی آئے اور چلے گئے ہیں لیکن تھل (خوشاب، میانوالی، بھکر، لیہ، مظفرگڑھ، جھنگ، چینوٹ) کی قسمت نہ بدل سکی۔ وہی پرانا سیلبس چل…

Read more

جنرل نیازی گیڈر بھبھکی پر ملک ہار گیا؟

پاکستان کے دولخت ہونے کی کہانی کے پیچھے چھپے کرداروں کی تلاش جاری ہے، لیکن تاحال راقم الحروف کے خیال میں کوئی بھی حتمی نتیجہ سامنے نہیں آیا ہے۔ تحقیق جاری ہے، عینی شاہدین سے لے کر دور بیٹھے تجزیہ نگار اور مبصر اپنے اپنے انداز میں مشرقی پاکستان کے بنگلہ دیش بننے کی کہانی…

Read more

کہاں گیا مرا شہر لاہور؟

لاہور میں پنجاب اسمبلی کی عالی شان عمارت کے سامنے باغیچے میں جہاں پتھر کی ایک بارہ دری میں ملکہ وکٹوریہ کا بت ہوا کرتا تھا، وہاں بے شمار درخت ساتھ ساتھ کھڑے ہوا کرتے تھے۔ ان درختوں کی وجہ سے پلازہ سیمنا کی طرف مال روڈ کی طرف آئیں تو پنجاب اسمبلی کی عمارت…

Read more

لاہور کو صوبہ بنایا جائے

پنجاب کا صوبائی دارالحکومت لاہور جو برے طریقے سے ترقی کے نام پر آبادی، آلودگی خاص طورپر سموگ جیسی خطرناک وبا میں یوں پھنس کر رہ گیا ہے کہ نہ آگے جانے کی پوزیشن میں ہے اور نہ ہی پیھچے جانے کی سکت رکھتا ہے۔ ترقی کے نام پر لاہور کے ساتھ کھیلا جانیوالا کھیل…

Read more

دستی سے نیازی تک رونے کی کہانی؟

وزیراعلی پنجاب شہبازشریف کے دور میں عوامی راج پارٹی کے سربراہ و رکن قومی اسمبلی جمشید دستی کے ساتھ جو کچھ پولیس نے ”اوپر کے حکم“ پرکیا تھا۔ وہ پنجاب کی تاریخ کا بدترین واقعہ یوں لکھا اور کہا جاسکتا ہے کہ ایک منتخب ایم این اے کو جس طرح تضحیک آمیز سلوک کسیاتھ اٹھایا…

Read more

میانوالی کے دکھ: ظفر خان نیازی (مرحوم) بنام افضل عاجز

قارئین، آپ سے وعدہ تو پچھلے کالم میں یہ کیا تھاکہ تھل جیپ ریلی سمیت لیہ کے موضع سمرا نشب میں اوقاف کی سو ایکڑ سونا اگلتی زمین پر قبضہ کی کہانی کو آگے لے کر چلوں گا لیکن ابھی اور انتظار کرلیتے ہیں کہ شاید اس سلسلے میں وزیراعلی عثمان بزدار اور ڈپٹی کشمنر…

Read more

تھل جیپ ریلی کے پیچھے کی کہانی؟

تھل جیپ ریلی کے پیچھے دھندے کی کیا کہانی ہے؟ اس بارے میں عرض کرتا ہوں لیکن پہلے میری درخواست پر لیہ کے معروف صحافی ملک مقبول الہی نے جو ایک خبر فائل کی ہے، اس کو پڑھ لیں تاکہ سند رہے۔ ملک مقبول کی خبر کے مطابق ضلع لیہ کے شہر کوٹ سلطان میں…

Read more

بابا گرونانک کے وارثوں کا جرگہ بلایا جائے؟

گرونانک نومبر 1449 میں ضلع شیخوپورہ کے گاؤں تلونڈی میں پیدا ہوے جواب ”ننکانہ صاحب“ کہلاتا ہے۔ ان کے والد مہتہ کالو پسر رام داس اور ماں ترپتا کھشتری ذات کے متوسط درجہ کے ہندو اور برادری میں محترم تھے۔ نانک کا نام ان کی بہن بی بی نانکی کی مناسبت سے رکھا گیا۔ نانکی…

Read more

صحافیوں نے قسم اٹھا لی؟

صحافی درباری نہیں ہوتا اور نہ ہی اس کے پروٹوکول میں آتا ہے کہ وہ خوشامد اور چمچہ گیری کرکے اپنے آپ کو ذلیل کرانے کے ساتھ اپنے پیشہ کی لعنت ملامت کرائے، اس طے شدہ فارمولے کے باوجود جس کو صحافت میں یہ شوق ہے کہ وہ سیاستدانوں، بیوروکرٹیس یا پھر مافیا کی خاطر…

Read more