کم از کم آپ تو ایسا نہ کہیں

کیا ایک استاد یا چلیں چند اساتذہ کے برا ہوجانے سے درس وتدریس کا نظام کلی طور پر باطل کہلائے گا اور تمام اساتذہ جلاد اور ظالم کہلانے کے مستحق ہو جائیں گے؟
کیا کسی ایک فوج کے سپاہی کے غدار اور وطن فروش ہوجانے سے ان سرفروشوں کی قربانیوں کو اکارت سمجھ لیا جائے گا جنھوں نے خون کے آخری قطرے تک کو مادر وطن پہ نثار کردیا؟

کیا کسی ایک جج کے غلط فیصلے سے ماضی کے درست اور مبنی بر انصاف فیصلوں پر پانی پھیر دیا جائے گا، یا کسی ایک بدعنوان اور عاقبت نا اندیش قاضی کی طمع نفسانی کو بنیاد بنا کر تمام عدالتی نظام کو کرپٹ اور گندہ قرار دے دیا جائے گا اور اس کے ہر رکن پہ سفاکیت کے فتوے لگا دیے جائیں گے؟

Read more

سوچ بدلیں گے تو سماج بدلے گا

کسی بھی معاشرے کی عظمت اور سر بلندی کا اندازہ افراد معاشرہ خاص طور پر نوجوانوں کی سوچ کی بلندی، منزل کی سچی تڑپ اور بلند کرداری میں پوشیدہ ہوتا ہے۔ اگر نوجوان خواب دیکھتے ہیں اور محنت پر یقین رکھتے ہیں اور ایمانداری کا چراغ ہاتھ میں تھام کر مستقل مزاجی کے ساتھ آگے…

Read more

آئینہ

بھائی صاحب اگر یہ فیلڈ تمہیں پسند نہیں ہے تو اسے چھوڑ کیوں نہیں دیتے، جس میدان کے کھلاڑی نہیں ہو اس میدان میں کیوں زبردستی گھسے ہوئے ہو۔ وہ کام جو تمہارا ہے ہی نہیں اسے کیوں کیے جاتے ہو اور اگر کیے جاتے ہو تو شکوہ کناں کیوں رہتے ہو یہ منافقت اور…

Read more

نظام پولیس، نے ہاتھ باگ پر ہے نہ پا ہے رکاب میں

اگر آپ کا زندگی میں پولیس اور خاص طور پر پنجاب پولیس سے واسطہ پڑا ہے تو قرین قیاس یہی ہے کہ آپ کہیں گے کہ پولیس بد تمیز بھی ہے اور رشوت خور بھی، پولیس نا اہل بھی ہے اور سست بھی، پولیس ظالم بھی ہے اور بد طینت بھی، پولیس دست دراز بھی ہے اور جلاد بھی۔ یہ بالکل حقیقت ہے اور اگر ان تمام الزامات کو دس سے ضرب دے دی جائے تو جو جواب آئے گا وہ بھی درست ہوگا مگر سوال یہ کہ آخر پولیس ایسی کیوں ہے؟ کیا یہ بیماریاں اس کے تخم میں پہلے سے موجود تھیں یا اس کے جسد میں یہ ناسور بعد میں پھوٹا، اور اگر یہ بعد میں پھوٹا تو اس مریض کو درماندگی کی اس سطح تک لانے میں کن جاہل طبیبوں کی بیداد گری کا ہاتھ ہے۔ اس سوال کا جواب تلاش کرنے کے لیے ذرا ماضی کو کھنگالنا پڑے گا۔

Read more

اپنا تو منشور ہے جالب سارے جہاں سے پیار کرو

ہمیشہ منفرد نمایاں انداز کا لباس زیبِ تن کرنا طبیعت کا خاصہ رہا، اس کوشش کبھی میں کامیاب ہوجاتے ہیں اور کبھی مولانا حالی کی نیچرل شاعری کے مصداق مرچ مصالحہ زیادہ ڈال دیتے ہیں جس سے ایک نیا ذائقہ جنم لیتا ہے۔

زندگی میں تجربات ازحد ضروری ہیں دراصل زندگی تجربات کے اتصال اور انضمام کا نام ہے بالکل اسی طرح جس طرح علم کیمیا میں آمیزے دوسرے آمیزوں میں ملاؤ تو نئے آمیزے جنم لیتے ہیں اور فارمولوں کی ترتیب جدید نئے فارمولوں کو جنم دیتی ہے بالکل اسی طرح زندگی تحصیل تجربات کا دوسرا نام ہے اور یہ ایک مسلسل عمل کا نام ہے انہی تجربات سے زندگی کا خمیر اٹھتا ہے اور زندگی ارتقاء و انقلاب کی طرف گامزن رہتی ہے ایک بڑا تجربہ دراصل چھوٹے چھوٹے بہت سے تجربات کا مجموعہ ہوتا ہے۔

Read more

پولیس اصلاحات ۔ مبادا دیر ہو جائے

محکمہ پولیس کی نوکری کرنا دراصل پیچ و خم سے بھرپور پگڈنڈی پر سفر کرنے کے مترادف ہے جس پر جابجا خار بکھرے پڑے ہیں جس پر شوقین راہرو گلاب چننے آتے ہیں مگر کانٹوں سے دامن بھر لیتے ہی اور کچھ زخم تو ایسے کاری لگتے ہیں کہ جسم کے ساتھ روح بھی گھائل…

Read more