ساڈا حق ایتھے رکھ

حقوق و فرائض کی جنگ میں ہم ہمیشہ حقوق یاد رکھتے ہیں اور فرائض بھول جاتے ہیں۔ ہمیں یہ ہمیشہ یاد رہتا ہے کہ ہمارے حقوق کیا ہیں۔ لیکن حقوق کا مطالبہ کرتے ہوئے یہ ہمیشہ بھول جاتے ہیں کہ ہمارے اُوپر کچھ فرائض بھی ہیں۔ حقوق و فرائض کی جنگ بہت پرانی ہے۔ ہر انسان کو اپنے حقوق ازبر ہیں۔ جسے دیکھو یہی کہتا ہے ہمیں ہمارا حق نہیں ملا یا ہم اپنا حق ہی مانگ رہے ہیں۔ یہاں تک کہ اولاد بھی حقوق کے حصول کے لئے ماں باپ کے خلاف اٹھ کھڑی ہوتی ہے۔

Read more

معاف کیجیئے روزہ ہے

معاف کیجیئے روزہ ہے یہ لفظ بہت زیادہ سننے میًں آتا ہے بہت اچھا لگتا ہے۔ اور کشش بھی رکھتا ہے۔ لوگ اس کا ادب بھی کرتے ہیں۔ تبھی تو ٹریفک میں پھنسے افراد گالیاں دے کر یہ کہہ دیتے ہیں کہ روزہ ہے نئی تو بتاتا۔ کسی سے اگر لڑائی ہوجائے تو اس کو دو چار گھونسے، تین چار لاتیں مار کر یہ کہہ کر چھوڑ دیتے ہیں کہ روزہ کی وجہ سے چھوڑدیا ہے ورنہ بتاتا۔ یہ روزہ کا احترام ہی ہوتا ہے کہ ہم دوسروں کی اچھی طرح غیبت کر چکنے کے بعد یہ کہہ دیتے ہیں کہ ہم تو عام دنوں میں کسی کی بات نہیں کرتے یہ تو پھر رمضان ہے۔

Read more

چاند ایک ہی بار چڑھ گیا

لوجی چاند دیکھنے کا رواج بھی ختم ہوا۔ ماضی کا قصہ ہوگیا۔ اب جدید دور ہے۔ اور اتنے جدید دور میں اتنا تو حق بنتا ہے کہ چاند دیکھنے جیسی فضول رسم کو خیر باد کہہ دیا جائے۔ کہ حقیقت میں اس مصروف دور میں کسی کے پاس اتنا وقت ہی نہیں کہ چاند دیکھنے جیسی روایئت کو برقرار رکھاجا سکے۔ کہتے ہیں جب چاند چڑھتا ہے تو کل عالم دیکھتا ہے۔ لیکن ہمارے ہاں اکثر یہ کل عالم کی بجائے چند علما کو ہی نظر آجاتا تھا اور ایک صوبہ میں عید ہو جاتی۔

Read more

اڑن کھٹولے میں اڑنے کا شوق

ہواؤں میں اڑنا ہر کسی کا شوق رہا ہے۔ لیکن یہ بہت مہنگا شوق ہے اسے ہر کوئی پورا نہیں کرسکتا۔ اسے ہوائی جہاز میں بیٹھ کر بھی پورا کیا جا سکتا ہے یا ہوائی جہاز چلا کر اس کے لئے سواری کا ذاتی ہونا ضروری نہیں۔ پیرا گلائیڈرز بھی اس شوق کو پورا کرتے ہیں لیکن اتنی بلندی سے محض اڑنے کا شوق پورا کرنے کے لئے چھلانگ لگانا منچلوں کا سودا ہو سکتا ہے ہم جیسے کمزور دل والوں کے بس کی بات نہیں۔ بچپن میں جب عمرو عیار کی کہانی پڑھتے تو خواہش کرتے کاش ہم بھی عمرو کے ساتھ اڑ سکیں۔

Read more

مردوں کو بھی حقوق دیے جائیں

میں لکھنا چاہ رہی تھی کچھ حقوقِ نسواں کے بارے میں۔ اور میں کچھ پریشان ہوگئی کہ خواتین کے حقوق پر بہت کچھ لکھا جا چکا ہے اور بہت کچھ لکھا جا سکتا ہے کہ خواتین پوری دنیا میں مظلوم ترین مخلوق سمجھی جاتی ہے اور اگر بات ہو پاکستانی خواتین کی تو یہ مظلومیت اپنی انتہا کو پہنچ جاتی ہے اس میں کوئی شک نہیں کہ سب سے زیادہ ظلم پسماندہ علاقوں کی خواتین پر ہوتا ہے اس کے لئے ایک الگ سے کالم لکھوں گی کہ ابھی میرا ان پسماندہ علاقوں کی خواتین پر لکھنے کا ارادہ نہیں ہے کہ میں شہر میں رہنے والی خواتین سے ”نکو نک“ بھر چکی ہوں۔

Read more

غریب مریض بھی شفا مانگتا ہے

بائیس کروڑ کی آبادی میں گنتی کے چند سرکاری ہسپتال۔ مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد اور سرکاری ہسپتالوں کا فقدان۔ پچھلے دنوں مجھے سرکاری ہسپتال میں جانے کا اتفاق ہوا۔ مریضوں کا رش تھا۔ پرچی لینے والوں کی ایک لمبی قطار۔ پرچی لینے میں کم از کم دو گھنٹے لگ جاتے ہیں کہ قطار بہت…

Read more

عہدِ قدیم کی خوشحالیاں

میں قدِیم زمانوں کی ایک بوڑھی روح جسے لگتا ہے کہ لوگ اس کے ساتھ نہیں چل سکتے۔ لیکن در حقیقت میں خود لوگوں کے ساتھ نہیں چل سکتی۔ کہ مجھے میری روایات سے پیار نہیں عشق ہے۔ آپ مجھے جدید زمانے میں بھٹکی ایک لاش کہہ سکتے ہیں۔ میں جو پُر سکون وادیوں کی مکین تھی خلوص مجھ میں بستا تھا میرے گردو نواح میں ستم ظرفی نہ تھی، سادگی تھی، عیاری نہ تھی، بلند و بالا عمارتوں کی جگہ مٹی کے کچے گھروندے تھے جس کے کچے فرش پر روز لیپ ہوتا اور مٹی کی سوندھی خوشبو مکینوں کے رگ و پے میں سرائیت کرجاتی اور لوگ بدلے میں وہی خوشبو بانٹتے پھرتے۔

Read more

خان صاحب کی خوشخبری

ہم کتنے مہینوں سے ”خوشخبری“ کے انتظار میں ہیں۔ گئے دنوں کی بات ہے جب خاں صاحب نے قوم کو جلد خوشخبری سنانے کا وعدہ کیا تھا۔ وہ دن اور آج کا دن خاں صاحب خوشخبری پہ خوشخبری سنائے چلے جارہے ہیں خوشخبریاں ہیں کہ رکنے کا نام نہیں لے رہیں۔ لیکن وہ ”خوشخبری“ جس کا عوام کو انتطار ہے وہ ابھی تک نہیں ملی۔ خان صاحب کی جانب سے سب سے پہلی خوشخبری عوام کو ملی وہ سعودیہ کی جانب سے پاکستان کو رقم کی فراہمی تھی۔ جسے قوم سے خطاب کر کے بتایا گیا۔

Read more

رمضان ٹرانسمیشن اور شیطانی ڈبہ

رمضان کی آمد آمد ہے۔ رحمتوں، برکتوں کا وہ مہینا، جس میں عبادات عروج پر ہوتی ہیں تو رب کی عنایات بھی۔ رب کی رحمت جو ہمیشہ اپنے بندوں پر رہتی ہی ہے، مگر اس ماہِ مبارک کی برکت سے رب کی رحمت سے ہر خاص و عام مستفید ہوتا ہے۔ اس میں نیک و گنہ گار کی تخصیص نہیں۔ اس کی رحمت سب کے لئے یکساں۔ ایک مسلمان پورے گیارہ مہینے اس ماہ کے انتظار میں رہتا ہے۔ کہ کب یہ ماہِ مبارک آئے اور کب اس پر رب کی بے شمار رحمتوں کی عنایات ہوں۔

Read more

شادی کے بناؤ سنگھار کی روایت اور بیوٹی سیلون

خواتین بناؤ سنگھار کے حوالے سے ہمیشہ سے جنونی رہی ہیں۔ اگر کسی دعوت یا شادی میں جانا ہو تو اس وقت ان کی تیاری عروج پر ہوتی ہے۔ خواتین تیار ہونے میں گھنٹوں لگاتی ہیں لیکن پھر بھی تیاری ختم ہونے میں نہیں آتی۔ کبھی بیس خراب، تو کبھی آئی لائنر، کبھی کاجل پھیل…

Read more