رفیع پیر تھیٹر کا سترہواں صوفی میوزک فیسٹیول

رفیع پیر تھیٹر کے زیرِانتظام ہر سال لاہور میں صوفی میوزک فیسٹیول منعقد کیا جاتا ہے۔ جس میں ملک کے نامور صوفی اور فوک گلوکار اپنے فن کا مظاہرہ کرتے ہیں۔ اس دفعہ یہ سترہواں صوفی میوزک فیسٹیول 18، 19 اور 21 اپریل کو پیکجز مال میں منعقد کیا گیا۔ جس میں جن صوفی اور فوک گلوکاروں نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا ان میں حدیقہ کیانی، شفقت امانت علی، سائیں ظہور، صنم ماروی، پپو سائیں ڈھولیا، کرشن لال بھیل، شیر میانداد قوال، ابو محمد، فرید ایاز قوال، سچل آرکیسٹرا، خمیاران بینڈ، اختر چنال زہری، تحسین سکینہ، اور عابدہ پروین جی شامل تھے۔ ان سب فن کاروں نے کمال فن کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنے سب سننے والوں کے دلوں کو خوب جلا بخشی۔

Read more

کوئٹہ کے ہزارہ ایسے ہی لاشیں اٹھاتے رہیں گے؟

آج صبح ساڑھے سات بجے کے قریب کوئٹہ کے علاقہ ہزار گنجی کی سبزی منڈی میں ایک دھماکہ ہوتا ہے جس میں 20 افراد شہید ہو جاتے ہیں اور کئی زخمی ہو جاتے ہیں۔ ڈی آئی جی کوئٹہ عبد الرزاق چیمہ کے مطابق دھماکے میں ریموٹ کنٹرول بم کا استعمال کیا گیا اور اس میں…

Read more

ہمارے جیسے سماج میں محبت کا دن ضرور منانا چاہیے!

پچھلے کچھ سالوں سے جب بھی فروری کا مہینہ آتا ہے تو ہمارے ہاں ایک بحث شروع ہو جاتی ہے کہ 14 فروری کو پوری دنیا میں منایا جانے والا محبت کا تہوار ویلنٹائن ڈے ہمیں منانا چاہیے کہ نہیں۔ کوئی کہتا ہے کہ پوری دنیا میں اگر ایک تہوار کے منانے سے محبت کا…

Read more

جنید حفیظ انصاف کا منتظر ہے

حال ہی میں چیف جسٹس آف پاکستان جناب آصف سعید کھوسہ نے آسیہ بی بی کی سزائے موت معطلی کے فیصلے کے خلاف دائر کردہ نظرِثانی کی اپیل مسترد کر دی۔ اپیل کی سماعت کے دوران چیف جسٹس صاحب نے اپیل دائر کرنے والے قاری اسلام کے وکیل مصطفے ملک سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا…

Read more

سانحات کی ماری ہوئی قوم

ساہیوال میں ایک ایسادلخراش سانحہ رونما ہوا ہے کہ جس کے درد سے ابھی تک روح بے چین ہے۔ ایسا پتا نہیں کیوں ہے، حالانکہ اس طرح کے واقعات تو ہمارے سماج میں ہوتے ہی رہتے ہیں۔ ہم کچھ عرصہ کے لیے ماتم کرتے ہیں۔ پھر ایک اور واقعہ ہوتا یے اور ہم اس کے…

Read more

منگو اور تبدیلی کا خواب

سعادت حسن منٹو صاحب نے ”نیا قانون“ کے نام سے ایک کہانی لکھی تھی۔ جس میں تقسیمِ ہند سے پہلے برِصغیر میں نافذ ہونے والے 1935 گورنمنٹ آف انڈیا ایکٹ کو موضوع بنایا گیا تھا۔ یہ قانون منظور تو اگست 1935 میں ہو گیا تھا مگر اس کا اطلاق یکم اپریل 1937 کو کیا گیا۔ منٹو صاحب کی یہ کہانی منگو نامی ایک تانگے والے کے گرِد گھومتی ہے۔ جو کہ ہوتا تو ان پڑھ ہے مگر اس کو حالاتِ حاضرہ سے کافی دلچسپی ہوتی ہے۔ اس لیے وہ اپنے ساتھ سفر کرنے والے لوگوں کی آپس میں کی گئی باتیں سنتا رہتا یے۔ اور پھر جا کر اپنے دوستوں کو بتاتا رہتا ہے۔ ایک دن دورانِ سفر وہ گورنمنٹ آف انڈیا ایکٹ 1935 کے نفاذ کے بارے میں سنتا ہے۔ زیادہ باتیں تو اس کے پلّے نہیں پڑتیں بس اتنی سمجھ آتی ہے کہ کوئی نیا قانون یکم اپریل 1937 کو نافذ یونے والا ہے جس کے بعد سب کچھ بدل جائے گا۔

Read more

2018 کا بولی وُڈ – کیا بولی وُڈ میں خانز کا عروج ختم ہونے کو ہے؟

سال 2018 میں بولی وُڈ میں 137 فلمیں ریلیز کی گئی۔ ہر سال کی طرح ان فلموں میں کچھ پر بہت پیسہ لگایا گیا اور کچھ نامل بجٹ کے ساتھ بنائی گئیں، کچھ میں بڑے اسٹارز نے اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے اور کچھ کا حصہ درمیانے درجے کے اسٹارز تھے۔ میگا اسٹارز کی فلموں میں سلمان خان کی ریس تھری، عامر خان اور امیتابھ بچن کی ٹھگس آف ہندوستان، شاہ رخ خان کی زیرو اور اکشے کمار کی پیڈ مین شامل تھیں۔ بڑے اسٹارز کی فلموں میں رنبیر کپور کی سنجو، رنویر سنگھ کی پدماوت، اجے دیوگن کی ریڈ اور رشی کپور کی مُلک شامل تھیں۔ چھوٹے بجٹ کے ساتھ درمیانے درجے کے اسٹارز کی فلموں میں آیاشومان کھرانہ کی بدھائی ہو اور اندھا دھن، نوازالدین صدیقی کی منٹو اور راجکمار راؤ کی فنے خان شامل ہیں۔ ان تمام فلموں میں کچھ فلمیں بہت زیادہ توقعات کے باوجود فلاپ ہوئیں اور کچھ توقعات کے برعکس ہٹ ہو گئیں۔

Read more

زینب واقعہ کے بعد بچوں میں جنسی زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات

تین دن پہلے ایبٹ آباد کے پاس حویلیاں کے ایک گاؤں میں ایک تین سالہ بچی فریال کو اغواء کیا گیا اور جنسی زیادتی کرنے کے بعد اسے سخت سردی میں پھینک دیا گیا جس سے اس کی موت واقع ہو گئی۔ اسی طرح آج نوشہرہ میں ایک نو سال کی بچی کی لاش ملی…

Read more

اوریا مقبول جان اور پاکستان میں بڑھتی ہوئی آبادی

چیف جسٹس جناب ثاقب نثار نے ڈیم آگاہی مہم کے بعد حال ہی میں ملک میں بڑھتی ہوئی آبادی کو کنٹرول کرنے کے لئے بھی آگاہی مہم شروع کی ہے۔ جس کا آغاز انھوں نے اس موضوع پر اسلام آباد میں ایک سمپوزیم منعقد کروا کر کیا۔ جس میں وزیرِاعظم عمران خان سمیت ہر مکتبہ…

Read more

فلم منٹوکی پاکستان میں نمائش پر پابندی کیوں لگائی گئی؟

حال ہی میں برصغیر کے مشہور ادیب اور افسانہ نگار سعادت حسن منٹو کی زندگی پر بھارت میں فلم بنائی گئی ہے۔ اس فلم میں منٹو کا کردار نوازالدین صدیقی نے ادا کیا ہے۔ انھوں نے کمال مہارت سے منٹو کا مشکل کردار نبھایا ہے اور ایک بار پھر ثابت کیا ہے کہ وہ اس وقت بھارتی فلم انڈسٹری کے چند بہترین اداکاروں میں سے ایک ہیں۔ اس فلم کی ہدایت کارہ نندتا داس ہیں۔ جنھوں نے بہت ہی عمدہ طریقے سے منٹو کی زندگی کا وہ حصہ دکھایا ہے جب برصغیر کی تقسیم ہوئی۔

اس وقت کے حالات سے منٹو نے بہت اثر لیا۔ اور ان حالات کے درد اور کرب کو اپنے افسانوں میں بیان کیا۔ فلم میں یہ دکھایا گیا ہے کہ کس طرح سے منٹو کو سچ بولنے اور سچ لکھنے کی وجہ سے آزمائشوں کا سامنا کرنا پڑا اور اپنے دور کا اتنا عمدہ لکھاری ہونے کے باوجود کس طرح وہ کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوئے۔

Read more