ٹرانس جینڈر، جنسیات اور سائنس

"میں‌ اس بات پر یقین رکھتی ہوں‌ کہ اگر پہیہ ایجاد ہو چکا ہو تو اس کو دوبارہ ایجاد کرنے کی کوشش محض وقت کا زیاں‌ ہے۔ مندرجہ ذیل مضمون ڈاکٹر خالد سہیل نے لکھا تھا اور اس میں‌ معمولی ردوبدل کے ساتھ اس کو ٹرانس جینڈر سیریز کا حصہ بنانے کے لئے شامل کر…

Read more

عمر متین اور ہم جنس پسندوں کی پوشیدہ کہانیاں

 فون کی گھنٹی بجی، "میرے ایک مریض‌ کو دیکھ لو اور دوا لکھ دو، اس کو ڈپریشن، ہائی بلڈ پریشر، کولیسٹرول اور موٹاپے کی پرابلم ہے۔" میری ایک دوست کا فون تھا جو سائکولوجسٹ ہے اور اس کے پاس دوا لکھنے کا لائسنس نہیں‌ ہے۔ وہ صرف کاؤنسلنگ کرسکتی ہے۔ لیکن میں‌ تو اینڈوکرنالوجسٹ ہوں‌،…

Read more

عورتوں میں جنسی خواہش کم ہونے کی وجوہات

نارمل انسان یہ سوچیں‌ گے کہ ان کی بیوی کو کیا پرابلم ہے؟ جنسی تعلقات میں‌ دلچسپی نہ ہونا ایک عام کنڈیشن ہے جو کہ کسی بھی انسان کو ہو سکتی ہے۔ یہ بیماری بھی ہو سکتی ہے اور نارمل بھی۔ اس کنڈیشن کو “لیک آف لیبیڈو” کہتے ہیں۔ کوئی 5 فیصد افراد دنیا میں‌ اے سیکچؤل ہیں یعنی کہ ان کو جنسی تعلقات میں‌ کوئی دلچسپی نہیں۔ قریب 5 فیصد ہم جنس پسند ہیں۔ بلاوجہ ہر کسی کی شادی کرانا بند کرنا ہوگا۔ لیک آف لیبیڈو کی وجوہات خاص طور پر خواتین میں‌ کافی ساری ہیں اور اس پر زیادہ تحقیق نہیں کی گئی۔

Read more

مسز خان ٹھیک ہی تو کہہ رہی ہیں

میں ‌ مسز خان کو نہیں ‌ جانتی ہوں۔ یہ خبر میں ‌ نے ہم سب آن لائن میگزین پر پڑھی ہے۔
”کراچی کی معروف سماجی کارکن مسز خان نے ان خواتین کو آڑے ہاتھوں لیا ہے جو گھریلو امور کی انجام دہی کو ایک طعنہ سمجھتی ہیں۔

نجی ٹی وی 92 نیوز کے مارننگ شو میں گفتگو کرتے ہوئے مسز خان نے کہا کہ ہمارے زمانے میں عورت کو شروع سے سمجھایا جاتا تھا کہ اپنی زبان زیادہ مت چلاؤ کیونکہ اگر عورت منہ زور ہو جاتی ہے تو معاملات بگڑتے ہیں۔ آج کی عورت ساس اور شوہر پر حکمرانی کرنے کی کوشش کرتی ہے۔

Read more

میں نے ابھی تک کڑھی نہیں پکائی

دو تین دن پہلے میں ‌ نے فیس بک کے ذریعئیے اپنے دوست اور رشتہ داروں ‌ سے مدد طلب کرتے ہوئے کہا کہ
اوکلاہوما میں شدید گرمی پڑ رہی ہے، ٹیکساس کا اور بھی برا حال ہو گا۔ دودھ خراب ہونے والا تھا تو میں نے اس کو ابالا، ٹھنڈا کیا اور اس میں دہی ڈال کر گیراج میں رکھ دیا۔ اگلے دن اچھا دہی بن گیا۔ اب مسئلہ یہ ہے کہ اتنے سارے دہی کا کیا کیا جائے؟

وہ پیلی پیلی سی کڑھی، پکوڑوں کے ساتھ جو آپ لوگ بناتے تھے، اس کی ترکیب یہاں لکھ دیں۔ پیلی کیسے ہوتی ہے؟ کیا ہلدی ڈالتے ہیں؟ چھوٹی خالہ، بڑی خالہ، امی یا جس کو بھی آتی ہو وہ بتا دیں۔
اب اتنی ساری کڑھی کون کھائے گا؟ اس کا حل میں نے پہلے سے سوچ لیا ہے۔ فریزر میں رکھ دیں گے!

Read more

کیا آپ Celiac بیماری کے بارے میں جانتے ہیں؟

تیرہ اگست 2019 کو ہماری بلی الائزا نے ضرورت سے زیادہ ہل جل کر اپنے کچھ ٹانکے کھول لیے اور آج اس کو اور ٹانکے لگے اور وہ بلیوں ‌ کے ہسپتال میں ‌ داخل ہے۔ آج ہماری ایک بوڑھی مریضہ آئیں ‌ تو میں ‌ نے ان سے پوچھا کہ آپ کیسی ہیں؟ کہنے…

Read more

ٹرپل طلاق کا فیصلہ ایک لمحہ فکریہ ہے

زندگی کی مثال اس شخص کی کہانی سے سیکھی جا سکتی ہے جو دھوپ میں‌ بازار کے بیچ کھڑا ہوا برف بیچ رہا ہوتا ہے اور کہتا ہے کہ میرا سرمایہ گھلا جا رہا ہے۔ آج کل انڈیا، پاکستان اور امریکی خبروں‌ میں‌ ٹرپل طلاق کے خلاف انڈیا کی سپریم کورٹ کے فیصلے سے متعلق…

Read more

گھر میں بلی کیوں پالی جائے؟

آج سات اگست ”اوور دا ہمپ“ بدھ کا دن ہے۔ صبح الائزا نے مجھے جگایا۔ وہ جگانے کے لیے اپنا پنجہ چہرے پر آہستہ سے مارتی ہے۔ کبھی بھی رات میں ‌ نہیں بلکہ صرف روشنی ہوجانے کے بعد جس سے پتا چلتا ہے کہ جانوروں ‌ کو بھی معلوم ہوتا ہے کہ جاگنے اور…

Read more

ڈاکٹر، بدلتے ہوئے قوانین اور اخلاقیات

آج 31 جولائی ہے۔ آج کا دن میرے لیے اداسی کا دن ہے کیونکہ 1980 میں ‌ آج ہی کے دن میرے والد مرزا شجاعت بیگ صرف 33 سال کی عمر میں ‌ ایک ویسپا کے ایکسیڈنٹ کے بعد کئی ناکام سرجریوں ‌ کے بعد وفات پاگئے تھے۔ اکثر لوگ ایک دوسرے سے پوچھتے ہیں کہ ماضی کا وہ کون سا لمحہ ہے جہاں ‌ آپ واپس جانا چاہیں گے۔ تو وہ لمحہ میرے لیے وہ تھا جب ابو نے ہسپتال میں ‌ مجھ سے کہا کہ گڑیا یہاں بیٹھ جاؤ میرے پاس لیکن میں ‌ باہر جا کر کھیلنا چاہتی تھی۔

پچھلے نو سال سے میں ‌ یہاں نارمن کے اسی ہسپتال کے کلینک میں ‌ کام رہی ہوں۔ ایک ہی جانا پہچانا پانچ منٹ کا راستہ ہے۔ ہماری بلڈنگ کے پاس ایک واٹر ٹاور ہے جس پر سرخ رنگ میں ‌ بڑا بڑا نارمن لکھا ہوا ہے۔ ڈاکٹرز کے لیے پارکنگ مخصوص ہے جن پر سائن لگے ہوئے ہیں ‌ کہ یہاں ‌ صرف فزیشن پارک کریں اور باقی سب کو ٹو کرلیا جائے گا۔ میرے خیال میں ‌ یہ صرف ایک خالی دھمکی ہے کیونکہ ہماری گاڑیوں ‌ میں ‌ کچھ ایسا نشان نہیں ہے جس سے کسی کو پتا چلے کہ کون سی گاڑی کس کی ہے۔

Read more