عبدالرشید کی یاد میں

عبدالرشید کے چل بسنے کی خبر فون پر کشور ناہید نے دی تھی تو مجھے اپنا کئی سال پہلے کا لکھا ہوا اپنا وہ مضمون یاد آیا تھا جو میں نے ”لذیذ لمحے اور عبدالرشید“ کا عنوان جما کر لکھا تھا۔ طالب علمی کے زمانے کا لکھا ہوا مضمون۔ اور کل رات جب ہم شکیل…

Read more

مجاہد مرزا: پریشاں سا پریشاں

مجاہد مرزا سے میری گنی چنی ملاقاتیں ہیں، پہلی بار ہم لاہور میں ملے تھے، یہ 2015 کا سال تھا، اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام پاک چین کانفرنس میں شرکت کے لیے لاہور گیا ہوا تھا۔ شام ایک کلب میں آمنا سامنا ہوا اور یہ بھلا آدمی دِل میں سما گیا۔ یوں نہیں ہے کہ مجاہد مرزا کو میں سرے سے جانتا ہی نہیں تھا، جانتا تھا اور جس بے باکی اور معصومیت کو بہم کرکے وہ مختلف موضوعات پر لکھتے رہے ہیں، اخبارات میں اور سوشل میڈیا پر، وہ میری نظر میں تھا۔

Read more