منظر اُوچوی منظروں کے دائرے سے باہر نکل گئے

وہ 28 دسمبر 2019 ء کی ایک کہرزدہ اور بے نورصبح تھی۔ شدید سردی نے جیسے اردگرد کے ماحول کو منجمداور سوگوار کر دیا تھا۔ دفتر جاتے ہوئے راستے میں کسی مسجد کے لاؤڈ سپیکرز سے کسی کی وفات کا اعلان ہو رہا تھا جو ٹھیک طرح سے سمجھ نہ آنے کے باوجود اداس کر…

Read more

”تاریخ اوچ متبرکہ“ ایک مطالعاتی جائزہ

دینی و علمی حلقوں میں جناب علامہ مفتی محمد سراج احمد قادری رضوی کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں، گزشتہ چالیس برسوں سے انہوں نے اوچ شریف جیسے چھوٹے سے علاقے میں دین کی شمع روشن کر رکھی ہے، اپنی دینی خدمات، معلمی جیسے مقدس پیشے سے عرصہ دراز تک وابستگی، جامعہ مدرسہ عزیزالعلوم…

Read more

کچھ “بزرجمہر” کے بارے میں۔۔۔

یادش بخیر: آج ہمارے ایک ”بزرجمہر“ دوست نے اپنی تمام تر قابلیت اور علمیت کو بالائے طاق رکھ کر ہماری ”بے بضاعتی“ پر صاد کرتے ہوئے واٹس ایپ پہ مسیج بھیجا کہ ہم نے مظہر کلیم (ایم اے ) اور جاسوسی کے پرانے ناولوں میں ”بزرجمہر“ کا لفظ پڑھا تھا۔ یہ ”بزرجمہر“ کون ہیں اور…

Read more

دسمبر کی شبنمیں رات اور سرود رفتہ میں ہمکتے سدابہار گیت کی مہک

یادش بخیر: یہ 31 دسمبر 1999 ء کی یخ بستہ رات کا ذکر ہے۔ یہ زمین زاد اپنے گاؤں کے کچے کمرے میں رضائی اوڑھے ریڈیو پر بی بی سی لندن کی اردو سروس سماعت کر رہا تھا۔ آواز تھی اساطیری براڈ کاسٹر جناب رضا علی عابدی کی اور ”سیربین“ پروگرام میں تذکرہ تھا اس…

Read more

ڈھاکا ”فال“ نہیں ہوا بلکہ اپنے پیروں پر کھڑا ہو گیا ہے

یادش بخیر؛زمین زاد کا تعلق اس بے چہرہ نسل سے ہے جو ”ضیابیطس“ میں لتھڑے عہد ناسپاس میں پیدا ہوئی۔ وہ نسل جس نے پاکستان کو بنتے اور ٹوٹتے تو نہیں دیکھا البتہ بگڑتے اور سسکتے ضرور دیکھا ہے۔ ہماری پیدائش کے وقت صدیق سالک کے ڈھاکا کو ”ڈوبے“ 13 سال بیت چکے تھے۔ ہم…

Read more

مظفر گڑھ گزیٹیئر: ڈاکٹر احتشام انور کی قابل قدر کاوش

برصغیر میں نوآبادیاتی طاقت ہونے کے باوجود انگریزوں نے پنجاب کے اضلاع کے تفصیلی گزیٹیئر مرتب کر کے ان کی اشاعت میں کامیابی حاصل کی جو اب بھی اضلاع کی تاریخ و ثقافت سے متعلق مستند حوالوں کے طور پر استعمال ہوتے ہیں۔ یہ گزیٹیئر سب سے اہم اور مستند دستاویز کے طور پر متعلقہ…

Read more

دسمبر، لالٹین، نوسٹیلجیا

یادش بخیر: میرے گاؤں کے گھر کی کہنہ سال لالٹین کی حیثیت دراصل میرے لئے روشنی کے نروان کی سی ہے، یہ جب جلتی ہے تو دراصل اس کی زرد ملگجی روشنی میں میرے بچپن، جوانی اور اب کہولت کی گھڑیاں مجھ سے ہمکلام ہوتی ہیں۔ دسمبر کی یخ بستہ راتوں میں کچے کمرے میں…

Read more

یہ 6 دسمبر 1992ء کا ذکر ہے

وہ 6 دسمبر 1992 ء کی ملگجی اور اداس دوپہر تھی۔ اتوار کا دن۔ جب اوچ شریف کے متروک ریلوے لائن کے ساتھ واقع ماسٹر احسان انجم صاحب کے سکول میں دوسری جماعت کا آٹھ سالہ طالب علم نعیم احمد ناز جو اہل و عیال اور ہم جماعت دوستوں میں نومی کی عرفیت سے جانا…

Read more

آج پاکستان کے پہلے دستور کے خالق، چوتھے وزیر اعظم چوہدری محمد علی کی 39ویں برسی ہے

پاکستان کے پہلے سیکرٹری جنرل، 1956 ء کے پہلے دستور پاکستان کے خالق، سابق وفاقی وزیر خزانہ، چوتھے وزیراعظم چوہدری محمد علی کی 39 ویں برسی یکم دسمبر کو منائی جا رہی ہے، چوہدری محمد علی 15 جولائی 1905 ء کو ننگل انبیا، تحصیل نکودر ضلع جالندھر میں پیدا ہوئے۔ 1928 ء میں انڈین آڈٹ…

Read more

ریاست بہاول پور کا پہلا صاحب دیوان شاعر: ”ارمغان اوچ“کا مطالعاتی جائزہ

ارمغان اوچ انیسویں صدی میں خانوادۂ سادات گیلانی کے بزرگ اوردرگاہ قادریہ عالیہ کے سجادہ نشین مخدوم سید شمس الدین (خامس) گیلانی کے اردو، فارسی اور سرائیکی کلام کا انتخاب ہے، جسے بہاول پور کے بلند فکر ادیب و مصنف، نواب آف بہاول پور سر صادق محمد خان عباسی خامس کے اے ڈی سی بریگیڈیئر…

Read more