اسسٹنٹ کمشنر اٹک جنت حسین اور ”کل کے لونڈے“

لال لال لہرانے کی ابھی کو ئی امید نہیں جگائی گئی۔ مگر اس لالی نے اپنے رنگ دکھانے شروع کر دیے ہیں۔ طلبہ یو نین بننے سے پہلے طلباء نجانے کیا باور کروانا چاہ رہے ہیں۔ بات اتنی بڑی اور اہم نہیں تھی جتنا اس کو اچھا ل دیا گیا ہے۔ اور افسوس ناک صورت…

Read more

کالے کوٹ والوں کے لائسنس تاحیات معطل کیے جائیں

لاہو ر باغوں کا شہر جس کو کالے کو ٹ والوں نے آ ج کالا کر دیا۔ جس مذاق کو اتنا سنجیدہ لیا گیا۔ وہ اس قابل نہیں تھا۔ اس سے زیادہ تو ایک گھنٹے کے ٹاک شوز والے حکو مت کی دھجیاں اْڑا دیتے ہیں۔ مگر حکو مت کوئی بھی ہو۔ وہ ان ایک…

Read more

الفا، براو، چارلی کی ”شہناز“ اور ہم

الفا، براؤ چارلی صر ف ایک ڈرا مہ نہیں تھا۔ جس نے اس دور کے نو جوانوں کی نیندیں اڑا دیں تھیں۔ یہ ایک ٹرینڈ تھا۔ یہ ایک نفسیات تھی۔ یہ ایک فطرت کی نقش گری تھی۔ یہ آرٹ تھا کہ بات کیسے کی جاتی ہے۔ یہ تہذیب تھی۔ یہ اس نسل کو رنگ دینے…

Read more

لڑکیوں کو بھی شرماتے ہوئے مرد اچھے لگتے ہیں

آپ ہرمن ہیسے اور گیبریلا مسترال کی زندگی میں الجھے ہوئے ہوں۔ ان کی زندگی سے ان کے تحریروں کی کھوج لگانے میں مگن ہوں۔ اور آمنہ مفتی، محمد حنیف کا کالم ”َمرد کا پردہ“ بی بی سی اردو سے شئیر کر دے۔ آپ کالم کا لنک اوپن کرنے کی کوشش کریں اور وہ آپ کی زنانہ بے حجابی سے شرما کر کھلے ہی نہیں اور جب کئی گھنٹوں کے بعد کھلے تو آپ اسے پڑھ کے ابھی داد کے الفاظ بھی تلاش نا کر سکیں ہو ں کہ عفت نوید کی تحریر ”دل بے حجاب عورتوں پرہی آتاہے“ آپ کی نگا ہو ں سے ٹکڑاجائے۔ اور آپ کو لگے آپ کا پردہ آپ کو لے ڈوبا۔

Read more

مسز خان کے نام عہد جدید کی ایک بیٹی کا خط

السلام علیکم مسز خان آپ کا چرچا تو پہلے بھی بہت تھا۔ اب بہت زیادہ ہو گیا ہے۔ آپ کے دہن مبارک سے جھڑنے والے پھول سننے کا مجھ ناچیز کو بھی اعزاز حاصل ہوا ہے۔ اور اس اعزاز نے کئی سوال ناتجربہ کار ذہن کے دریچوں پہ آبلے جیسے اٹھا دیے ہیں۔ اللہ ہم…

Read more

انسان شادی کے بعد ”الو“ کیسے بن جاتا ہے؟

انسان شادی کے بعد ”الو“ کیسے بن جاتا ہے؟ یہ سوال جتنا سادہ ہے۔ اتنا ہی گہرا بھی۔ ”درویشوں کا ڈیرا“ کے بعد خواتین کی طرف سے تو بہت اچھے سوالات آئے۔ مگر کسی مرد کی طرف سے اس کا کافی فقدان رہا۔

آج اچانک ایک صاحب کا سوال آیا کہ ”رابعہ جی مرد شادی کے بعد الو کیسے بن جاتا ہے؟ “

Read more

اندھا ٹیکس رقص۔ کسان، صنعت کار، تاجر، اور وردی

ہمارے پاس پورٹ، ہمارے آئین میں لکھا ہے کہ ہم ”اسلامی جمہوریہ پاکستا ن“ ہیں۔ اب ان تین لفظوں پہ غور کیے بنا ہم کسی بھی سیاسی لیڈر کے پڑھے لکھے مشیرو ں کے لفظوں کی غلامی پہ لبیک کہتے ہو ئے ملک میں آگ لگا نے پہ اتر آتے ہیں۔ خدارا یہ ملک ہم سب کا ہے۔

ہم ٹیکس رقص پارٹی کر رہے ہیں۔ ایک خاص دانش مندی ہمیں سکھائی جارہی ہے۔ ہم کو پڑھے لکھے، دانشور، ایک مجبور وقت دانش کے پیچھے کسی اندھے کی طرح رقص کرنے پہ مجبور کر رہیں۔ چلیں آئیں دنیا میں سفر کرتے ہیں۔ مگر دانش وروں کی طرح نہیں عاشقوں کی طرح

Read more

ایک دوسرے کے کپڑے اتارنے کی جنگ

روایت ہے جب آدم نے شجر ممنوعہ سے دانہ کھا لیا تو اس کا ستر کھل گیا، اسے جنت سے نکال دیا گیا۔ اور پھر جب وہ زمین پہ آیا تو یہا ں مصنوعی جنت بنانے کے خواب تعبیر کر نے کی کوشش میں رہا۔ جنت نظیر محل بھی بنائے۔ باغات کی بھی کوشش کی۔…

Read more

اصلی فواد چوہدری؟ نقلی فواد چوہدری؟

زمانہ جہالت کی بات ہے اس لئے رابعہ نے اس واقعہ کو لکھنے کا ارادہ ترک کر دیا تھا۔ زمانہ جہالت اس لئے کہ صحافت میں خبر کی تازگی اہمیت رکھتی ہے۔ دو ماہ قبل کا واقعہ زمانہ جہالت کی تاریخ میں شامل ہو جاتا ہے۔لیکن زمانہ جہالت سے نکلے تو پتاچلا ابھی مستقبل کا دور دور تک نشان نہیں۔ سو واقعہ کا بیان رمز سے خالی نہیں۔ لہذا رابعہ الرَبّا ء نے فیصلہ کیا کہ اس سے قبل کہ منسٹری پھر سے بدلے، سب کچھ لکھ دیا جائے۔ کیونکہ بزدلی باذات خود گناہ ہے۔یہ بات ہے نواپریل دو ہزار انیس کی۔ رابعہ ابھی والد صاحب کے جانے کے بعد اس حقیقت کے ساتھ جنگ میں تھی لہذا فون کا گلا دبا دیا کرتی تھی۔ کیونکہ خوشی کے سب ساتھی ہو تے ہیں۔ غم میں ساتھ، صرف ساتھی ہو تے ہیں۔

Read more

پیار کاآخری لمحہ۔ اور پھر بس

ان کی آنکھو ں کا رنگ بد ل رہا تھا۔ پہلے گرے، پھر آسمانی اور پھر دھیرے سے فیروزی رنگ چمکنے لگا۔ جسم ساتھ چھوڑ رہا تھا۔ میں نے اس کے کاندھو ں پہ دونوں ہاتھ رکھے اور پو چھا ”آپ کیا محسوس کر رہے ہیں؟ “انہو ں نے گردن اْٹھاکر میری طرف دیکھا اور دھیرے سے کہنے لگے ”آپ نے جو کر نا ہے جلدی کر لیں۔ میری امی انتظار کر رہی ہیں“۔ یہ جملہ توپ کے گولے کی طرح میرے دل پہ جا کر لگا۔

Read more