یوم خواتین کی ”سہاگ رات“

آپ سے کہا تھا کہ بلڈ پریشر، ہارٹ اورڈپریشن کی دوائیاں لے کر رکھ لیں۔ آٹھ مارچ آنے والا ہے۔ لیجیے آیا اور گزر گیا۔ اس بار پچھلے سال کی نسبت کافی میچورٹی دکھائی دی۔ پھر بھی پتھر برسائے گئے۔ اور کوئی حکومتی دیوانہ یہ کہتا نظر نہ آیا ”کوئی پتھر سے نہ مارے میرے دیوانے کو“ خیر وہ وعدہ ہی کیا جو وفا ہو جائے۔

Read more

آپ کو خود آزاد ہونے کے لئے پہلے عورت کو آزاد کرنا ہو گا

عورت مارچ، عورت کا ایک دن، اس کو منانے سے روکنے والے ظالم یہ تک بھول گئے ہیں کہ عورتوں نے اس خاص دن کے لئے کپڑے بنوا لئے ہو ئے ہیں۔ لہذا اب کو ئی بھی طاقت اس دن کو منانے سے انہیں نہیں روک سکتی۔ اور جو رستے کی دیوا ر بننے کی…

Read more

ایک کتاب میلے کا کانوں سنا حال

لاہو ر بہا ر کی آمد کا اعلان میلو ں کے آغاز سے کر تا ہے اور اتنے میلے لگتے ہیں کہ لاہو ی میلہ لوٹ لوٹ کے نہیں تھکتے۔ بلکہ دوسرے شہرو ں سے مہمانو ں کو بلاتے ہیں اور اپنی سیاحت کا شوق بھی پورا کر تے ہیں۔ یک نہ شد دو شد…

Read more

مرد کبھی بوڑھا نہیں ہو تا

مرد کبھی بوڑھا نہیں ہو تا ”ہائے۔ اچھا سچی مگر کیسے؟ “ تم ڈاکٹر ہو یار میرا مسئلہ حل کرو۔ میرے آس پاس تو سب عورتیں جوان ہیں اور ان کے شیریں لبو ں پہ شوہر کے بڑھاپے کی داستاں لطیفوں میں رنگین تتلیو ں کی طرح اڑتی پھرتی ہے؟ ڈاکٹر لبنی مرزا اور میں…

Read more

اسسٹنٹ کمشنر اٹک جنت حسین اور ”کل کے لونڈے“

لال لال لہرانے کی ابھی کو ئی امید نہیں جگائی گئی۔ مگر اس لالی نے اپنے رنگ دکھانے شروع کر دیے ہیں۔ طلبہ یو نین بننے سے پہلے طلباء نجانے کیا باور کروانا چاہ رہے ہیں۔ بات اتنی بڑی اور اہم نہیں تھی جتنا اس کو اچھا ل دیا گیا ہے۔ اور افسوس ناک صورت…

Read more

کالے کوٹ والوں کے لائسنس تاحیات معطل کیے جائیں

لاہو ر باغوں کا شہر جس کو کالے کو ٹ والوں نے آ ج کالا کر دیا۔ جس مذاق کو اتنا سنجیدہ لیا گیا۔ وہ اس قابل نہیں تھا۔ اس سے زیادہ تو ایک گھنٹے کے ٹاک شوز والے حکو مت کی دھجیاں اْڑا دیتے ہیں۔ مگر حکو مت کوئی بھی ہو۔ وہ ان ایک…

Read more

الفا، براو، چارلی کی ”شہناز“ اور ہم

الفا، براؤ چارلی صر ف ایک ڈرا مہ نہیں تھا۔ جس نے اس دور کے نو جوانوں کی نیندیں اڑا دیں تھیں۔ یہ ایک ٹرینڈ تھا۔ یہ ایک نفسیات تھی۔ یہ ایک فطرت کی نقش گری تھی۔ یہ آرٹ تھا کہ بات کیسے کی جاتی ہے۔ یہ تہذیب تھی۔ یہ اس نسل کو رنگ دینے…

Read more

لڑکیوں کو بھی شرماتے ہوئے مرد اچھے لگتے ہیں

آپ ہرمن ہیسے اور گیبریلا مسترال کی زندگی میں الجھے ہوئے ہوں۔ ان کی زندگی سے ان کے تحریروں کی کھوج لگانے میں مگن ہوں۔ اور آمنہ مفتی، محمد حنیف کا کالم ”َمرد کا پردہ“ بی بی سی اردو سے شئیر کر دے۔ آپ کالم کا لنک اوپن کرنے کی کوشش کریں اور وہ آپ کی زنانہ بے حجابی سے شرما کر کھلے ہی نہیں اور جب کئی گھنٹوں کے بعد کھلے تو آپ اسے پڑھ کے ابھی داد کے الفاظ بھی تلاش نا کر سکیں ہو ں کہ عفت نوید کی تحریر ”دل بے حجاب عورتوں پرہی آتاہے“ آپ کی نگا ہو ں سے ٹکڑاجائے۔ اور آپ کو لگے آپ کا پردہ آپ کو لے ڈوبا۔

Read more

مسز خان کے نام عہد جدید کی ایک بیٹی کا خط

السلام علیکم مسز خان آپ کا چرچا تو پہلے بھی بہت تھا۔ اب بہت زیادہ ہو گیا ہے۔ آپ کے دہن مبارک سے جھڑنے والے پھول سننے کا مجھ ناچیز کو بھی اعزاز حاصل ہوا ہے۔ اور اس اعزاز نے کئی سوال ناتجربہ کار ذہن کے دریچوں پہ آبلے جیسے اٹھا دیے ہیں۔ اللہ ہم…

Read more

انسان شادی کے بعد ”الو“ کیسے بن جاتا ہے؟

انسان شادی کے بعد ”الو“ کیسے بن جاتا ہے؟ یہ سوال جتنا سادہ ہے۔ اتنا ہی گہرا بھی۔ ”درویشوں کا ڈیرا“ کے بعد خواتین کی طرف سے تو بہت اچھے سوالات آئے۔ مگر کسی مرد کی طرف سے اس کا کافی فقدان رہا۔

آج اچانک ایک صاحب کا سوال آیا کہ ”رابعہ جی مرد شادی کے بعد الو کیسے بن جاتا ہے؟ “

Read more