جتھے عاشق سجدہ کردے ہو

اس واقعے سے جڑے لے دے کے بس کل ساڑھے تین کردار ہیں۔ وہ کون ہیں، ہم بتائے دیتے ہیں۔ جنرل پرویز مشرف کہ چراغ سحری ہیں۔ عدالت سے معتوب، بیماری سے نڈھال۔ دوسرے جنرل مظفر عثمانی جو کمانڈر پانچ کور تھے۔ تیسرے ہمارے مرشد کرنل محمد اختر رضوانی سکنہ جہلم۔ درویش رضائے الہی سے…

Read more

کورونا اور دوا پاکستان میں، دارو دہلی میں

کمبخت کورونا کی وبا کیا آئی۔ ہندوستان پاکستان دونوں ممالک میں پرانے کشکول گدائی جگمگا اٹھے۔ مانو، بلی کے بھاگوں چھینکا ٹوٹا۔ اب یہ آج کل کے بچے کیا جانیں کہ چھینکا کیا ہوتا ہے؟ ان مظلومین کو تو ڈبے کے دودھ کی بوتل بھی فرج سے نکال کردی جاتی رہی ہے۔ چھینکا فرج سے…

Read more

لمبی، گوری اور انگریزی بولنے والی 70 فیصد سے ملاقات

وضاحت لازم: یہ تحریر قبل از کورونا ایک ناآسودہ بیک اینڈ ریسورس پرسن میڈیا منسلک خاتون کے غصیلے، دل گرفتہ مشاہدات سے کشید کردہ بیان پر مبنی ہے۔ کسی ہستی کی اتفاقی خفیف مماثلت اپنی ہوس کی بھونڈی تکمیل اور خود کو غیر ضروری اہمیت دینے کی ناکام کوشش تصور ہوگی۔ سو پیار کو پیار…

Read more

عارضی دل کا عارضہ نہ ہوا

وضاحت لازم :زیر مطالعہ کہانی انسٹاگرام پر #HumansofNY کے ہیش ٹیگ تلے شائع ہوئی اور اسے ہمارے سمیت دنیابھر میں 5,33,327 پسند فرمایا۔ اس لیے اسے ہم نے حقائق اور جذبات کے بنیادی اہتمام کو وفاداری سے نبھاتے ہوئے اپنے رنگ میں لکھا۔ سیف الدین سیف نے کہا تھا سیف انداز بیاں رنگ بدل دیتا…

Read more

قرنطینہ کہانی: جو چلا گیا مجھے چھوڑ کے

وضاحت: ہم نے یہ کہانی انسٹاگرام پر # quarantinestories @humansofny کے ہیش ٹیگ کے سائے تلے انگریزی میں پڑھی۔ ایک کیفیت میں لکھا یوں بقول جگرمرادآبادی عشق کی داستان ہے پیارے اپنی اپنی زبان ہے پیارے میرا نام کیا ہے اس کی چنتا مت کریں۔ اس کا نام وائن تھا۔ مجھے لگتا ہے آپ کا…

Read more

وزیر اعلیٰ بلوچستان اور سندھ کے “منشٹر صاحب”

ان دنوں سندھ کی شہری سیاست میں ایک بھونچال تھا۔ سب ہی کچھ اتھل پتھل ہوگیا تھا۔ جون 1992، میں آپریشن کلین اپ شروع ہونے سے پہلے ہی بھائی لندن چلے گئے تھے۔ ان ہی ایام بے لطف میں چیف منسٹر ہاؤس سے فون آیا تو بلا کم و کاست چیف سیکرٹری صاحب نے ہمیں…

Read more