کعبے پر پڑی جب پہلی نظر سفرنامہ حج۔ 3

ہم سب مسجد نمرہ کے باہر سڑک پر مزدلفہ جانے کے لئے تیار کھڑے تھے۔ مغرب ہو گئی تھی لیکن ابھی تک روانگی نہیں ہو رہی تھی۔ پتہ چلا کہ سعودی حکام نے راستہ بند کیا ہوا ہے جو روانگی کا وقت ہونے پر ہی کھلے گا۔ کچھ ہی دیر بعد آہستہ آہستہ قافلہ آگے سرکنا شروع ہو گیا۔ ہم سب بھی ہجوم کے ساتھ ساتھ چلنا شروع ہو گئے۔ اگست کا وسط تھا اسی کے لحاظ سے موسم میں بھی کافی حدت تھی۔ چلتے چلتے پتہ نہیں کب ڈاکٹر صاحب اور ان کی فیملی ہم سے بچھڑ گئے۔

Read more

میں ڈائجسٹ ریڈر تھا

ساٹھ کی دہائی میں ہر مہینے ڈاک کے ذریعے خواتین کے دو ماہنامے ”حور“ اور ”زیب النساء“ ہمارے گھر میں آتے تھے۔ دور دیہات میں رہنے کے باوجود یہ رسالے بہنوں کے پڑھنے کے لئے والد صاحب نے لگوائے ہوئے تھے۔ اس دور میں ایک چھوٹے سے گاؤں کے رہنے والے ابا جان کی روشن خیالی آپ جان سکتے ہیں۔ بہنیں تب رسالے میری پہنچ سے بچا کر رکھتی تھیں مبادا میں انھیں پھاڑ نہ دوں۔ والد صاحب جب بھی شہر سے واپس آتے، ان کے تھیلے میں سے ایک دو کتابیں ضرور نکلتی تھیں جو وہ اپنی الماری میں سنبھال کے رکھتے تھے۔

Read more

کعبے پر پڑی جب پہلی نظر۔ سفرنامہ حج سے اقتباس۔ قسط نمبر۔ 2۔

حج اجتماعیت۔ قربانی اور صبر و استقامت کا سبق دیتا ہے۔ ایک اللہ۔ ایک نبی اور ایک مذہب کو ماننے والے مختلف ممالک۔ مختلف رنگ اور نسل کے افراد کا ایک صف میں کھڑے ہو کر نماز ادا کرنا اجتماعیت کا ہی درس ہے جو اسلام دیتا ہے۔ ۔ عرفات میں وقوف حج کا ایک اہم فرض ہے جس کے ادا کیے بغیر حج نہیں ہوتا۔ نویں ذوالحج کو فجر کی نماز کے بعد حجاج اکرام منی سے عرفات کے لئے روانہ ہوتے ہیں۔ منی سے عرفات کا فاصلہ تقریباً پانچ کلو میٹر ہے۔

صبح سویرے مکتب کی بسیں خیموں کے باہر سڑک پر آ جاتی ہیں جو سب حاجیوں کو لے کر عرفات میں اپنے مکتب

Read more

سفرنامہ حج: کعبے پر پڑی جب پہلی نظر

منی۔ عرفات اور مزدلفہ میں ہر سال پانچ دن کے لئے ایک حسین شہر بستا ہے۔ ہر سال پچیس سے چالیس لاکھ تک لوگ فریضہ حج ادا کرنے کے لئے یہاں جمع ہوتے ہیں۔ سفید رنگ کے خیموں کے شہر میں اسی رنگ کے پاکیزہ لباس میں ہر نسل ہر رنگ ہرملک کے باشندے اکٹھے…

Read more

پاکستان فلم انڈسٹری کی منفرد لب و لہجے کی گلوکارہ ۔ مالا

آج کل ہمارے زیادہ تر نئے گلوکار ماضی کے مقبول گلوکاروں کے گائے ہوئے مقبول گانے جھنکار کے ساتھ گا کر مشہور ہو رہے ہیں۔ پاکستانی موسیقی کی تاریخ پر اگر ایک نظر ڈالیں تو ہمیں نظر آتا ہے کہ ماضی میں ہمارے فنکاروں نے کیسے بے سروسامانی اور پرانے موسیقی کے آلات کے ساتھ…

Read more

بیس ہزار کا قرض ابھی نہیں اترا

یہ دو ہزار آٹھ کی بات ہے میں سپین کے شہر بارسلونا میں اپنے برادر نسبتی کے پاس چھٹیاں گزارنے آیا ہوا تھا۔ ہمارا چائے کی میز پر اگلے دن شہر سے کہیں باہر جانے کا پروگرام بن رہا تھا۔ بچے بار بار کہہ رہے تھے کہ ہم لوگ  ًاندورہً چلتے ہیں۔  ًاندورہ ً سپین…

Read more

زکوۃ کمیٹیوں کے مشاہدات: ہمیں شرم نہیں آتی

آج کل ایک خبر بہت سارے چینل پر چل رہی ہے کہ ً احساس ً پروگرام کے تحت لاک ڈاؤن کے تحت غریب لوگوں کو ملنے والی امداد سے کچھ رقم کاٹ کر ادائیگیاں کی جا رہی ہیں۔ کچھ لوگوں کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔ دو تین ماہ قبل ایک رپورٹ منظر عام پر…

Read more

سادہ سے معصوم مریدوں کی عقیدت اور پیر صاحب

ان دنوں سوشل میڈیہ پر ایک ویڈیو بہت وائرل ہو رہی ہے جس میں ایک نوجوان پیر صاحب پلنگ پر بیٹھے ہوئے اپنے فون پر مگن ہیں اور مریدین سامنے فرش پر دری پر بیٹھے ہیں۔ مریدین ان کو نذرانے دے رہے ہیں اور وہ نوٹوں کو بڑی نخوت سے ہاتھ لگا نیچے پھینک رہے…

Read more

عزیز میاں قوال کے ساتھ ایک یادگار شام

فروری کی ایک خنک شام سب دوست میرے گھر پر جمع تھے اور گاؤں کے دربار کا عرس کا معاملہ زیر بحث تھا جو ہم مارچ کے دوسرے ہفتے میں مناتے تھے۔ صوبیدار لیاقت ہماری کمیٹی کا سب سے سرگرم رکن تھے جو بار بار مجھ سے پوچھ رہے تھے کہ اس دفعہ کس قوال…

Read more

کرونا وائرس: علامات اور احتیاطیں

کرونا وائرس ایک متعدی وبائی مرض ہے جو کہ ایک وائرس کرونا سے پھیلتی ہے۔ اس بیماری سے نظام تنفس سب سے زیادہ متاثر ہوتا ہے۔ ابتداء میں خشک کھانسی اور تیز بخار کی علامات ظاہر ہوتی ہیں۔ جو کچھ ہی دنوں میں شدت اختیار کر لیتی ہیں جس سے سانس لینے میں دشواری ہوتی ہے۔ کمزور قوت مدافعت رکھنے والے اور سانس کی بیماریوں میں مبتلا اشخاص جلدلقمہ اجل بن جاتے ہبں۔ یہ ایک متعدی مرض ہے جو ایک انسان سے دوسرے انسان کو لگتی ہے۔ چونکہ اس کا علاج ابھی تک دریافت نہیں ہوا اس لئے احتیاط اور صرف احتیاط سے ہی اس سے بچا جا سکتا ہے۔

Read more