ہاتھ دھو کر گھر بیٹھنے کے دن

کہتے ہیں کہ خوشیوں، غموں اور آفات کو جھیلنا پارٹ آف لائف ہے جبکہ ہر حال میں خوش رہنے کی کوشش“ آرٹ آف لائف“ ہے۔ وقت تو ہوتا ہی گزرنے کے لئے ہے اسے ہنس کے گزاردیں یا رو کر: مانا کہ اس وقت دنیا کو شدید رنج و خوف سے سابقہ ہے مگر یہاں…

Read more

اعتکافِ خوف اور تجدید ِالَست

یہ چند دنوں میں کیا ہواکہ روئے زمین کے سارے منظر ہی بدل گئے۔ موحد، ملحد، لبرل، سیکولر، مومن، کافر، پنڈت، پاپ، پیر، عامل، طبیب اور سائنسدان اللہ کے حضور سبھی بے بس اور لاچار ہیں۔ زندگی کی معنویت بدل چکی ہے۔ انسان مقید اور پرندے آزاد ہیں اور انسان، انسان سے خائف ہے۔ ایسا خوف کہ عالم خوف کا دیکھا نہ جائے۔ گویا وبا کے خوف سے تحکیمِ اعتکاف صادر ہے۔ یہ خوف اور بھوک بھی عذاب کی قسمیں ہیں۔ اس سے پہلے بھی انسانیت ایسی بے شمار آفات اور وبائیں جھیل چکی ہے۔

Read more

کرونا کا رونا

کرونا کی عالمی وبا پوری دنیا کو لپیٹ میں لے چکی ہے۔ اس کا نام covid 19 رکھا گیا ہے۔ نئی مرض ہونے کے باعث تا حال ناقابلِ علاج ہے۔ یہ واحد بیماری ہے جس کے علاج کے لئے بیرونِ ملک جانے کا کوئی نہیں سوچتا اور نہ ہی اس بیماری کی تیمار داری و…

Read more

” دو ٹکے کی“ مرضیوں ”کا تصادم

ہمارے سماج میں روز بروز اختلافات کا زہر تیزی سے پھیلتا جارہا ہے۔ ہر گروہ، ہر طبقہ اوراب تو ہر فرد اپنی اپنی مرضی سے زندگیوں میں رنگ بھرنے پہ تُلا ہے۔ ہر گھر تک شناخت کا بحران پنجے گاڑ چکا ہے جس سے سماجی، سیاسی، مسلکی اور خاندانی ادارے تقسیم در تقسیم ہوتے جارہے…

Read more

مگس کو باغ میں جانے نہ دیجو

مگس کو باغ میں جانے نہ دیجو کہ ناحق خون پروانے کا ہوگا اس شعر میں کسی دور اندیش شاعر کونہ جانے کتنے دور کی سوجھی کہ مگس (شہد کی مکھی) کے کسی بھی باغ میں داخلے پر پابندی کا مطالبہ کردیا۔ وجہ یہ ٹھہری کہ مگس باغ سے پھولوں کا رس لے کر شہد…

Read more

تاریخِ پاپوشاں

پاپوش فارسی لفظ بمعنی پاؤں کا لباس ہے۔ چنانچہ پاؤں کو ڈھانپنے والے لوازمات کو پاپوش کہتے ہیں۔ عرف عام میں جوتے کے نام سے منسوب ہے۔ جوتا چونکہ بے توقیر سا لفظ ہے لہٰذا جوتوں کو پیار اور احترام سے پاپوش کہا جاتا ہے۔ پاپوشوں کے بغیر کوئی فرد، گروہ اور ادارہ اپنے پاؤں…

Read more

“ایک ڈرامہ، ایک سوال”میرے پاس تم ہو

مشہورِ زمانہ، مردانہ و زنانہ ڈرامہ ”میرے پاس تم ہواپنے انجام کو پہنچا۔ کہانی اور کرداروں کے حوالے سے حمایت اور مخالفت کے خوب مباحث چلے۔ خلیل الرحمان پہ قسمت مہر بان ہے سو خلیل میاں جیسے چاہیں فاختہ اڑائیں۔ انہوں نے اپنے ہیرو کو بھی ”فاختہ“ بنا کے اُڑا دیا۔ موضوع واقعی ہی اچھوتا…

Read more

کچھ ادبی سَرد ناکیاں

یقیناً اس زمستاں کی سرد ناک سردی نے روائیتی شعراء کوسردی کی بابت اپنے شعری نَظریات سے یوٹرن لینے پہ ضرور مجبور کیا ہوگا۔ ماضی میں آتشیں حسد و عشق میں جلے بھُنے شعراء سرد اور برفاب موسم کو باعثِ راحت مانتے تھے۔ کبھی سرد ہوا یار کو یاد کرنے کا موجب بنتی تو کبھی…

Read more

برازیل کا 32 منزلہ قبرستان

دنیا کی آبادی خوفناک حد تک بڑھتی جا رہی ہے۔ یہاں نہ صرف زندہ لوگوں کے لئے رہائش کم پڑتی نظر آرہی ہے بلکہ مرنے کے بعد مناسب ابدی آرام گاہ کا حصول بھی مشکل ہوتا جارہا ہے۔ موت ایک اٹَل حقیقت ہے اور تمام بنی نوع انسانیت نے موت کا ذائقہ چکھنا ہے۔ لہٰذا…

Read more

توہین اور اس کی اقسام

وطنِ عزیز کے سماجی، مذہبی اور سیاسی تمدن میں ”توہین“ کی اصطلاح توہین کی حد تک بدنام ہے۔ ہر شخص اور ہر ادارے کی بات بات پہ توہین ہوجانا معمول کی بات ہے۔ عزتِ نفس اوجِ ثریا پہ براجمان ہے اور ہر قدم پہ توہین کا احتمال ہے۔ چلئے کچھ ”کی“ جانے والی تواہین کی…

Read more