تم لڑکی ہو تو خواب مت دیکھو

تم کس قدر نادان ہو؛ اپنی آنکھوں میں خواب رکھتی ہو۔ مانا کہ خواب دیکھنا آگے بڑھنے اور ترقی کرنے کے لئے بہت ضروری ہے لیکن تمہیں شاید علم نہیں کہ خوابوں کو تعبیر دینے کے لئے جس راہ سے گزرنا پڑتا ہے وہاں تمہارے لئے نو انٹری کا بورڈ لگا ہے۔ تمہیں یاد رکھنا…

Read more

دو نمبر لڑکی

وہ خوبصورت تو نہیں تھی لیکن اسے خوش شکل کہہ سکتے ہیں۔ سلیو لیس کپڑوں میں اپنے انداز سے ماڈرن دکھائی دیتی تھی۔ اس کی عمر بیس اکیس برس ہوگی۔ میں اور عامر اس وقت جناح سپر مارکیٹ کے ایک کافی سٹال پر تھے۔ وہ لڑکی چلتے چلتے ہمارے قریب سے گزری۔ اسی دوران اس نے ایک اچٹتی ہوئی نگاہ ہم پر ڈالی اور آگے بڑھتی چلی گئی۔ ”شرط لگا لو یہ لڑکی دو نمبر ہے۔ “ عامر نے کافی کا سپ لیتے ہوئے کہا۔ ”جانے دو یار کیوں کسی شریف لڑکی پر تہمت لگا رہے ہو۔ “ میں نے سر جھٹکتے ہوئے کہا۔

عامر کو شاید یہ بات بری لگی کہ میں نے اس کے گیان پر شک کیا ہے۔ وہ پوری سنجیدگی سے مجھے یقین دلانے لگا کہ وہ لڑکیوں کے بارے میں مجھ سے زیادہ جانتا ہے اور محض ایک نظر دیکھ کر بتا سکتا ہے کہ لڑکی کا کریکٹر کیسا ہے جب کہ میں مصر تھا کہ ظاہر سے کسی کے باطن کا اندازہ لگانا ناممکن ہے۔ ”اچھا آؤ ذرا اس کا تعاقب کرتے ہیں ابھی دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا۔ “ عامر نے تنگ آ کر کہا۔ میرے جواب کا انتظار کیے بغیر وہ اس سمت چل پڑا جدھر وہ لڑکی گئی تھی۔

Read more

اب سُن لبرل لڑکی

توبہ توبہ تمہاری باتیں سن کر ہمارا دل چاہتا ہے کہ کانوں میں انگلیاں ٹھونس لیں۔ تم بہت بے شرم ہو چکی ہو۔ تم جو نعرے لگاتی ہو انہیں سن کر ہمارا خون کھول اٹھتا ہے۔ تمہاری اتنی جرات کہ تم ہمارے معاشرے میں ہمی کو لتاڑنا شروع کر دو اور بے چاری نیک بیبیوں…

Read more

پلیز مجھے خودکشی کا آسان طریقہ بتا دو

مطلوبہ کتاب خریدنے کے بعد اردو بازار کے رش سے گزرتے ہوئے اچانک میرا کندھا کسی کے کندھے سے ٹکرا گیا۔ میں جو کسی خیال میں مگن اس تنگ بازار سے گزر رہا تھا چونکا تو پہلا احساس یہ تھا کہ وہ کوئی لڑکی ہے۔ ”سوری“ میں نے نظریں جھکائے ہوئے شرمندگی سے کہا اور آگے بڑھنے لگا تو وہ میرا راستہ روک کر کھڑی ہو گئی۔ ”رکو۔ رکو۔ کہاں جا رہے ہو؟ “ لڑکی نے کہا۔ تب میں نے نگاہیں اٹھا کر اسے دیکھا تو ایک بار پھر چونک اٹھا۔

”رمشا! کیا واقعی تم ہو؟ “ میں نے حیرت اور خوشی کے ملے جلے تاثرات کے ساتھ کہا۔ ”مجھے بھی یقین نہیں آ رہا ہم پندرہ برس بعد کس ماحول میں ملے ہیں۔ “ اس نے ارد گرد نگاہ ڈالتے ہوئے کہا پھر میری طرف ہاتھ بڑھا دیا۔ میں نے اس سے ہاتھ ملایا تو میری نظر اس کے ساتھ کھڑی تیرہ چودہ سال کی ایک لڑکی پر پڑی جو حیرت سے ہم دونوں کو دیکھ رہی تھی۔ ”یہ میری بیٹی ہے۔ “ رمشا نے کہا۔ اس کی بیٹی نے سوالیہ انداز میں ماں کی طرف دیکھا۔

Read more

وہ کہتی تھی کہ میں آوارہ اور بد چلن ہوں

وائٹ کلر کی ٹویوٹا کرولا یونیورسٹی کی پارکنگ میں رکی تو کئی پیاسی نگاہیں اس پر مرکوز ہو گئیں پھر معمول کی طرح کار کا دروازہ کھلا اور مایا باہر نکلی۔ ہمیشہ کی طرح دوپٹے سے بے نیاز اور ارد گرد کے ماحول سے بے پرواہ، وہ ڈیپارٹمنٹ آف اردو کی طرف بڑھتی چلی گئی۔ میرے نزدیک کھڑے حبیب اللہ نے زیرِ لب چند ایسے الفاظ کہے جنہیں نہ سننا ہی بہتر تھا۔ اس کے بعد وہ لپک کر اس کے پیچھے چل پڑا کیونکہ لیکچر کا وقت ہوا چاہتا تھا۔یہ نوے کی دہائی تھی اور ان دنوں یونیورسٹی میں جو صالحین کا گروپ تھا حبیب اللہ ان کا لیڈر تھا۔ ظاہر ہے ہر طالب علم مختلف بیک گراؤنڈ رکھتا تھا۔ کلاس میں ایسے لڑکے بھی تھے جو لڑکیوں سے دوستی کرنے میں پیش پیش تھے اور وہ بھی جو لڑکیوں کو دیکھ کر توبہ توبہ کا ورد کرتے ہوئے دوسروں کو بھی اس مخلوق سے دور رہنے کے مشورے دیا کرتے تھے۔ اسی طرح لڑکیوں میں حجاب کرنے والی لڑکیاں بھی تھیں اوراس کے برعکس لباس زیب تن کرنے والی بھی تھیں۔

Read more

کیا خواجہ سرا کے سینے میں دل نہیں ہوتا؟

جی پی او چوک میں اسے دیکھ کر میں چونک اٹھا۔ بہت لاغر اور کمزور نظر آ رہا تھا۔ وہ امید بھری نظروں کے ساتھ ایک نوجوان جوڑے کی طرف بڑھ رہا تھا۔ لڑکی کی نگاہ اس پر پڑی تو وہ ہاتھ منہ پر رکھ کر اپنی ہنسی کو روکنے کی ناکام کوشش کرتے ہوئے…

Read more

رتی گلی کی لڑکی

دو تین گہری سانسیں لے کر میں نے پھیپھڑوں کو تازہ ہوا سے بھرا۔ پیڑوں اور پودوں سے آتی ہوئی مہک سانسوں کو معطر کر رہی تھی۔ مارننگ واک کرتے کرتے میں کافی دور نکل آیا تھا۔ اس جگہ سے دور تک درخت اور پہاڑ دکھائی دیتے تھے۔ سورج کی روشنی میں نکھرے ہوئے مناظر…

Read more

جا نندن جا! جی لے اپنی زندگی

بھارت کا جنگی جنون کسی سے ڈھکا چھپا نہیں۔ خطے میں کشیدگی کی یہ سب سے بڑی وجہ ہے۔ موجودہ کشیدگی جو پلوامہ واقعہ سے شروع ہوئی تھی روز بروز بڑھتی چلی گئی۔ بھارت نے پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کر کے اسے عروج پر پہنچا دیا۔ مودی سرکار نے پاکستان پر بے…

Read more

عمران خان: خدارا ایک یو ٹرن اور لے لیں

پاکستان کے وزیرِاعظم عمران خان نے امن کی علامت کے طور پر بھارتی پائلٹ کو رہا کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس اعلان کے ساتھ ہی بھارت میں فتح کے شادیانے بجائے جا رہے ہیں۔ بھارتی میڈیا پر ایک طوفان مچا ہے کہ پاکستان بھارت کے دباؤ کو برداشت نہیں کر سکا، عمران خان کے…

Read more

بس بھئی بس زیادہ بات نہیں چیف صاحب

شامی صاحب دیوداس کی طرح گلاس تھامے آبِ سادہ کو یوں گھونٹ گھونٹ پی رہے تھے جیسے غم غلط کر رہے ہوں۔ ”حضرت کیا ہوا؟ آپ کے بکھرے بال اور مضطرب انداز بے سبب نہیں ہو سکتا۔ “ میں نے پر خیال لہجے میں پوچھا۔

آج مہدی حسن بہت یاد آ رہے ہیں، کیا خوبصورت نغمہ گایا تھا انہوں نے ’ہمارے دل سے مت کیھلو، کھلونا ٹوٹ جائے گا‘ ہم نے کیا کیا خواب دیکھے تھے اور کیا کیا سوچا تھا۔ آنکھوں نے کتنے سپنے سجائے تھے اور دل نے کتنے ارماں جگائے تھے۔ مگر سب کچھ ختم ہو گیا۔ اب تو خاک پر ہمارے خوابوں کی کرچیاں پڑی ہیں اور ہم پلکوں سے ریزہ ریزہ چنتے ہیں۔

Read more